روسی یوٹیوبر نے 2.6 کروڑ روپے کی مرسڈیز کو آگ لگا دی

0 1 508

ایک روسی یوٹیوبر، میخائل لِتوِن، نے 2.6 کروڑ روپے (1,61,200 ڈالرز) کی مرسڈیز AMG GT 63S جلا ڈالی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق انہوں نے یہ قدم گاڑی سے تنگ آ جانے کے بعد اٹھایا۔ اگر خبروں پر یقین کیا جائے تو لتوِن کی کار خریدنے سے اب تک کئی مرتبہ خراب ہوئی تھی۔

یوٹیوبر نے پانچ مرتبہ گاڑی مرسڈیز ڈیلرشپ پر بھیجی، لیکن مسئلہ پھر بھی موجود رہا۔ خبروں کے مطابق ڈیلرشپ نے ان مسائل کو حل کرنے کے لیے کوئی قدم نہیں اٹھایا۔ ڈیلرشپ یا تو مسئلہ حل کرنے سے معذرت کر لیتی تھی یا اسے ٹھیک کیے بغیر ہفتوں تک گاڑی اپنے پاس رکھتی۔

وڈيو دیکھیں

بالآخر انہوں نے مرسڈیز بینز کو ایک پیغام بھیجنے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے ایک کھلے میدان میں اس گاڑی پر ایندھن چھڑک کر اسے آگ لگا دی۔ وڈیو میں انہیں گاڑی  کو آگ لگانے کی کوششیں کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔

وڈیو نے پچھلے چار دن میں 11 ملین ویوز حاصل کیے ہیں۔ وڈیو کی ڈسکرپشن میں لتوِن نے اپنے غصے کا اظہار کیا ہے، جس کا ترجمہ کچھ یوں ہے: «میں عرصے سے سوچ رہا تھا کہ مرسڈیز کے ساتھ جھگڑے کے بعد میں شارک کا کیا کروں۔ میرے خیال میں آگ ٹھیک ہے، مکمل خاتمہ؛ میں خوش نہیں ہوں۔»

ہمیں نہیں معلوم کہ یہ واقعی حقیقی غصہ تھا یا پبلسٹی کے لیے کیا گیا کوئی stunt۔ کسی بھی صورت میں یہ بہت ہی مہنگی وڈیو ہے۔

روس میں مرسڈیز کے ساتھ ایسا پہلی بار نہیں ہوا:

یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ روس میں ایسا ناخوشگوار واقعہ پیش آیا ہے۔ پچھلے سال دسمبر میں ایک اور روسی ولاگر نے اپنی مرسڈیز AMG G63 کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے 1,000 فٹ کی بلندی سے نیچے پھینک دیا تھا۔ انہوں نے بھی یہ قدم گاڑی کے ناقابلِ بھروسہ ہونے اور سیل سروس کے مسائل کی وجہ سے اٹھایا۔

اِگور موروز کے مطابق یہ کار 2018 میں خریدنے کے بعد سے بار بار مسئلے پیدا کر رہی تھی۔ اس لیے غصے میں آ کر انہوں نے اسے ہیلی کاپٹر سے نیچے پھینکنے کا فیصلہ کیا۔

آٹوموبائل انڈسٹری کے حوالے سے مزید نیوز، ویوز اور اپڈیٹس کے لیے پاک ویلز بلاگ پر آتے رہیے۔

 

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.