2018ء میں ٹویوٹا IMC نے دوسرے آٹومیکرز کو پیچھے چھوڑ دیا


نئی کاریں لانچ کرنے سے لے کر موجودہ گاڑیوں کو اپگریڈ کرنے اور قیمتیں بڑھانے تک، ٹویوٹا IMC سال کے آغاز سے ہی خبروں میں رہا۔ مقامی آٹو انڈسٹری میں زبردستہنگامہ تھا کیونکہ ادارے نےکئی ملینز کی سرمایہ کاری کے اعلان کے ساتھ گاڑیاں بھی لانچ کیں۔ IMC نے سال کا آغاز ٹویوٹا کے نئے 1GD-FTV (Hi) 2.8-لیٹر ڈیزل انجن  کے ساتھ ریوو اور فورچیونر کے ڈیزل ویریئنٹس پیش کرکے کیا۔

2018 toyota fortuner diesel pw

toyota revo go wild pw

 

4×4 گاڑیوں کے اجراء کے بعد ادارے نے اگست میں کرولا XLi کا آٹومیٹک ویریئنٹ پیش کیا۔ نئی XLi 4-اسپیڈ آٹو ٹرانسمیشن سے لیس ہے۔ اور یہ گاڑیاں جاری کرنے کے بعد بھی کمپنی رکی نہیں بلکہ 3.3 ارب پاکستانی روپے کی سرمایہ کاری کا اعلان کیا۔

سرمایہ کاری اور ڈبل شفٹ کی بنیاد پر پلانٹ کی پیداواری گنجائش کو 76,000 تک بڑھانے کی منظوری ٹویوٹا IMC کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے اجلاس میں دی گئی۔ اب تک کمپنی کی پیداواری گنجائش تقریباً 65,000 تک پہنچ چکی ہے، البتہ جیسا کہ اوپر بتایا گیا ہے کہ اس میں اضافہ ہوگا۔

ستمبر میں کار میکر نے بنیادی سطح کی SUV ٹویوٹا رش پیش کی تاکہ زیادہ مارکیٹ گرفت میں لے سکے۔ گاڑی تین مختلف ویریئنٹس میں پیش کی گئی؛ ٹویوٹا رش S A/T، رش G A/T اور رش G M/T۔ ان گاڑیوں کی قیمتیں کچھ یوں ہیں:

Rush Price

ٹویوٹا رش 2018ء ایک 1500cc کی کومپیکٹ SUV ہے، جسے 1.5 لیٹر پیٹرول انجن کی طاقت حاصل ہے۔ یہ گاڑی 4-اسپیڈ آٹومیٹک اور 5-اسپیڈ مینوئل ٹرانسمیشن میں دستیاب ہے اور اس کا انجن زیادہ سے زیادہ 104 PS کی طاقت اور 136 Nm ٹارک پیدا کرتا ہے۔

Toyota Rush launched

اب، ذرائع کے مطابق، ادارہ پاکستان میں اگلے سال ویوس لانچ کرے گا۔ مزید برآں، اس نے ڈائیہاٹسو پیروڈوا بیزا بھی ٹیسٹ ڈرائیو ماڈل کے طور پر درآمد کی ہے تاکہ پاکستان کی سڑکوں پر اس کی کارکردگی جانچ سکے، سادہ الفاظ میں اس کا مطلب ہے کہ ویوس کے ساتھ بیزا بھی پاکستان میں لانچ کی جائے گی۔

Toyota_Vios_(12)

Daihatsu-Bezza-PW3

Daihatsu Bezza

یہی نہیں بلکہ کار میکر نے نئی گاڑیاں بھی متعارف کروائیں، ٹویوٹا انڈس موٹر کمپنی کا خالص منافع مالی سال 2018ء میں 21.31 فیصد بڑھا۔ ادارے نے 30 جون 2018ء کو ختم ہونے والی موجودہ مالی سال کی دوسری سہ ماہی میں 21.31 فیصد کے کے ساتھ 15.77 ارب روپے کا خالص منافع کمایا، گزشتہ سال کے اسی عرصے میں ادارے نے 13 ارب پاکستانی روپے کا خالص منافع کمایا تھا۔ فی حصص آمدنی (EPS) بھی 165.41 روپے سے بڑھ کر 200.06 روپے تک پہنچا۔

بلاشبہ سال 2018ء ٹویوٹا کا سال رہا، کیونکہ ادارے نے ہر شعبے میں نئی گاڑیاں متعارف کروائیں۔

ہماری طرف سے اتنا ہی، اپنے خیالات نیچے تبصروں میں پیش کیجیے


Top