10 لاکھ روپے میں دستیاب 6 اسپورٹس بائیکس

feature

پاکستانیوں کے معیار زندگی میں بہتری کے اثرات موٹر سائیکل کے شعبے پر بھی نظر آرہے ہیں اور اب لوگوں میں موٹر بائیک سے متعلق شعور میں بھی اضافہ ہورہا ہے۔ اپنے آس پاس نظر دوڑائیں تو اندازہ ہوگا کہ اب مہنگی اور پرتعیش گاڑیوں کے علاوہ نت نئی موٹر سائیکلوں کی تعداد میں بھی تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ اسی صورتحال کو دیکھتے ہوئے مجھے خیال آیا کہ اس بابت ایک مضمون لکھنا چاہیے جس میں قارئین کو پاکستان میں دستیاب بہترین اسپورٹس بائیک سے متعلق معلومات فراہم کی جاسکیں۔ اس مضمون میں آپ 10 لاکھ روپے کے بجٹ میں دستیاب اسپورٹس بائیک سے متعلق پڑھ سکیں گے جو شوقین افراد کی دلی تشفی کا مکمل سامان لیے ہوئے ہیں۔

نئی اسپورٹس بائیک

ہونڈا CBR-150R
یہ ہونڈا جاپان کی پیش کردہ بہترین موٹربائیک میں سے ایک ہے۔ اس میں 4-اسٹروک اسپارک اگنیشن انجن کے ساتھ 6-اسپیڈ گیئر باکس دیا گیا ہے۔ پانی سے خود کو ٹھنڈا رکھنے والا یہ انجن تیز رفتاری میں بھی ایندھن بچانے کی قابلیت رکھتا ہے۔ گو کہ فی الوقت ایٹلس ہونڈا پاکستان میں اسے درآمد کر کے فروخت کر رہا ہے تاہم میں امید کرتا ہوں کہ جلد ہی مقامی سطح پر اس کی تیاری شروع کی جائے گی جس سے قیمت میں واضح کمی ہوگی۔ اس وقت نئی ہونڈا CBR-150Rکی قیمت 6,60,000 روپے ہے۔

بنیلی TNT25
سال 2016 میں پیش کی جانے والی اس موٹر بائیک کو پاکستان میں قدم رکھے زیادہ عرصہ نہیں گزرا۔ اسے براق آٹوموبائلز کی جانب سے فروخت کیا جارہا ہے۔ اس میں ہلکے وزن والا 4-اسٹروک 1-سلینڈر 249cc شامل ہے جو 4-والو ٹیکنالوجی اور ڈیول اُووَر یڈ کیم شافٹس کی مدد سے برق رفتار فراہم کرتا ہے۔ اس موٹر بائیک نے ابتدا ہی سے شوقین افراد کی توجہ حاصل کرلی اور ادارے کے مطابق ابتدائی 3 سے 4 ماہ میں ہی 100 سے زائد بائیکس فروخت کی جاچکی ہیں۔ پاکستان میں TNT25 کی قیمت 4,50,000 روپے ہے۔

سوزوکی انزوما
جدید انداز اور روایتی 2-سلینڈر انجن کی حامل سوزوکی انزوما ایک ایسی موٹر بائیک ہے کہ جو ہر طرح کے حالات میں بخوبی ساتھ نبھاتی ہے۔ اس میں ایندھن بچانے کی صلاحیت کے علاوہ خارج ہونے والے دھویں کی مقدار کم رکھنے کا بھی برقی نظام شامل ہے۔ برقی سہولیات کی مدد سے اس کی قابلیت بالخصوص تھروٹل کی کارکردگی بھی بہتر بنانے میں مدد ملی ہے۔پاکستان میں سوزوکی انزوما کی قیمت 7,25,000روپے ہے۔

استعمال شدہ موٹر بائیکس

گو کہ اکثر لوگ نئی بائیک خریدنے کو ترجیح دیتے ہیں تاہم استعمال شدہ موٹر سائیکلوں کی مارکیٹ میں بھی عمدہ بائیکس دستیاب ہیں جنہیں نظر انداز کرنا مشکل ہے۔ ذیل میں ایسی ہی چند بائیکس کی فہرست اور تفصیلات فراہم کی جارہی ہیں جنہیں مقامی مارکیٹ اور پاک ویلز کے استعمال شدہ موٹر سائیکلوں کے زمرے سے خریدا جاسکتا ہے۔

یاماہا YZF-R6 (2005)
سال 1988 میں متعارف کروائی جانے والی یہ موٹر سائیکل یاماہا 600 کلاس اسپورٹ بائیک ہے۔ اسے کئی مرتبہ نئے اور بہتر انداز سے متعارف کروایا جاچکا ہے۔ مقامی مارکیٹ میں یہ اچھی قیمت پر دستیاب ہے اور بعد از استعمال بھی اچھی قیمت پر فروخت کی جاسکتی ہے۔ پاکستان میں یاماہا YZF-R6 کی مناسب قیمت 10 سے 12 لاکھ روپے ہے۔

سوزوکی ہایابوسا (2005)
سال 1999 میں پیش کی جانے والی ہایابوسا کو سب سے بڑی تعداد میں تیار کی جانے والی بائیکس میں شمار کیا جاتا ہے۔ اس بہترین اسپورٹ بائیک کو متعدد کاموں کے لیے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ اس کی بنیادی وجہ برق رفتاری کے دوران بہترین گرفت اور آرامدے سفر جیسی قابل ذکر سہولیات کی فراہمی ہے۔ اس موٹر بائیک کا 2005 ماڈل 10 لاکھ روپے کے بجٹ میں خریدا جاسکتا ہے۔

کاوا ساکی ننجا ZX300
کاواسکی نے اس موٹر بائیک کو ننجا 250R کی جگہ سال 2012 میں پیش کیا تھا۔اس نے بہت جلد کاواسکی کی سب سے زیادہ فروخت ہونے والی برانڈ میں اپنا نام درج کروالیا۔ پاکستان میں یہ موٹر بائیک 7,50,000 سے 8,50,000 روپے میں باآسانی خریدی جاسکتی ہے۔

چینی اسپورٹس بائیکس

چینی اشیا سے منسوب روایتی سوچ کے برخلاف کئی شعبوں میں چینی مارکیٹ کو نیا بھر میں وسعت ملی ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ سستی اور غیر معیاری اشیا کی فراہمی میں چین کا قصور کم اور ہمارے یہاں منافع خوروں کا زیادہ ہے جو دوسرے اور تیسرے درجے کی چیزیں درآمد کر کے مہنگے داموں فروخت کرتے ہیں۔ جب مجھے پتہ چلا کہ چینی اسپورٹس بائیک چند لاکھ روپے میں دستیاب ہے تو مجھے بہت حیرانی ہوئی۔ تصدیق کے لیے میں نے سگما اسپورٹس جانے کا فیصلہ کیا اور وہاں موجود اسپورٹس بائیک کا جائزہ لیا۔ عام موٹر سائیکلوں کی طرح یہ چینی اسپورٹس بائیک بھی دو پہیوں ہی پر چلتی ہیں البتہ ان کا معیار زیادہ متاثر کن نہیں۔ ہر وہ شخص جس نے عالمی شہرت یافتہ اداروں کی تیار کردہ بائیک چلائی ہو باآسانی ان سستی موٹر سائیکلوں کی کارکردگی اور معیاری کا اندازہ لگاسکتا ہے۔ یہ چینی بائیکس کاربیوریٹر انجن کے ساتھ پیش کی جارہی ہیں اور محدود بجٹ میں شوق کی تسکین فراہم کرسکتی ہیں۔ علاوہ ازیں مارکیٹ میں دستیاب دیگر چینی موٹر بائیکس 2.5 سے 5 لاکھ روپے میں بھی دستیاب ہیں۔


Top