گاڑی کے لیے درست ‘اسپارک پلگ’ کا انتخاب

ccrp_0703_18_z+plug_for_power+zex_spark_plug_w_e3_spark_plug

چاہے آپ موٹر سائیکل چلاتے ہوں یا گاڑی، ضروری ہے کہ آپ اس کے بارے میں اچھی معلومات رکھتے ہوں۔ خاص طور پر اس کے انجن سے متعلق آپ کو جتنی معلومات ہوں گی اتنے ہی بہتر انداز سے آپ اپنی موٹر سائیکل اور گاڑی کا خیال رکھ سکیں گے۔ آج میں جس چیز سے متعلق آپ کو آگاہ کر رہا ہوں وہ ‘اسپارک پلگ’ ہے جس کے لیے کہا جاسکتا ہے کہ ‘اس کے چھوٹے سائز پر مت جانا’۔

جب انجن ہوا/ ایندھن کھینچتا ہے تو اسے سیلنڈر کے اندر بروقت مشتعل کرنا پڑتا ہے تاکہ گاڑی بند نہ ہو، اور یہ اہم کام چھوٹا سا ‘اسپارک پلگ’ (spark plug) کرتا ہے۔

ہر گاڑی چلانے والے شخص کے لیے ضروری ہے کہ نیا اسپارک پلگ لینے سے پہلے کچھ باتوں کا اندازہ کرلے۔ ہم میں سے بہت سے لوگ اسپارک گیپ کا مطلب اور جلانے کی قابلیت سے تعلق سب ہی جانتے ہیں لیکن جو چیز ہم نہیں جانتے وہ گرمائش کی حد ہے۔ اسپارک پلگ کی حرارتی قابلیت متعین کرتی ہے کہ اسپارک پلگ گرمی کوانسولیٹر کے ذریعے نوک اور اس کے گرد کتنی تیزی سے پہنچاتا ہے۔ یہ بہت عام سی بات لگتی ہے لیکن اسپارک پلگ کے ساتھ غیر موافق گرمائش کی حد انجن اسٹارٹ کرنے کی تمام کوششوں پر پانی پھیر سکتا ہے۔

انجن چلانے کے لیے اسپارک پلگ کو ایک خاص درجہ حرارت برقرار رکھنا ہوتا ہے۔ اگر اس کا سرا ٹھنڈا ہوجائے تو کاربن کو خراب کرسکتا ہے جس سے اسپارک پلگ پر اضافی کاربن آجاتا ہے۔ اگر یہ سلسلہ برقرار رہے تو اسپارک کی کاکردگی کم ہوتی چلی جائے گی جو بالآخر ایک وقت میں بالکل ہی ختم ہوجاتی ہے۔

سب سے بہترین طریقہ تو یہ ہے کہ گاڑی بنانے والے ادارے کی طرف سے دی گئی گرمائش کی حد کو یاد رکھا جائے۔ تاہم انجن میں کسی قسم کی تبدیلیوں کی صورت میں درجہ حرارت اور اس کی گرمائش کی حد مختلف ہوسکتی ہیں۔ گرمائش کی حد کی اصطلاح عموماً گرم اور سرد دونوں صورتوں میں استعمال کی جاتی ہے۔ جیسے جیسے اسپارک پلگ سرد ہوتا جائے گا وہ گرمی پہنچاتا رہے گا اور دوسری صورت میں اس کے بالکل برعکس ہوتا ہے۔ گرمائش کی حد کے حساب سے دیئے گئے نمبروں کو جاننے کے لیے کہ آپ کو اسپارک پلگ بنانے والے ادارے کے فراہم کردہ حوالہ جات کا مطالعہ کرنا ہوگا۔

یہ جاننے کے لیے کہ آیا آپ کی گاڑی میں درست اسپارک پلگ استعمال کیا گیا ہے یا نہیں، ایک تجرباتی طریقہ موجودہے جس سے آپ اسپارک پلگ کو جانچ سکتے ہیں۔ گاڑی میں نیا اسپارک پلگ لگانے کے بعد تقریباً 20-25 کلومیٹر چلائیں۔ اس دوران مختلف طریقوں سے سے انجن پر دباؤ ڈالیں۔ اور پھر گاڑی بند کر کے اسپارک پلگ کو چیک کریں۔ آپ کو اس کے اوپری حصے میں موجود دھاگوں پر موجود جلنے کے نشان دیکھنے ہوں گے ۔ زیادہ بہتر انداز میں سمجھنے کے لیے ذیل میں تصویر مع عنوانات موجود ہے:

spark plug check image

اس تصویر میں آپ دیکھ سکتے ہیں کہ جلنے کے نشانات دوسرے دھاگے تک موجود ہیں۔ اگر اسپارک پلگ گرمائش کی حد سے میل کھاتا ہے تو یہ نشانات پہلے یا دوسرے دھاگے تک ہی رہیں گے۔ اگر یہ نشانات تیسرے یا چوتھے دھاگے تک چلیں جائے تو اس کا مطلب ہے کہ آپ کو ٹھنڈے اسپارک پلگ کی ضرورت ہے کیوں کہ انسولیٹر کو سسٹم سے زیادہ گرمی باہر خارج کرنے میں مشکل پیش آ رہی ہے۔اور اگر یہ نشان پہلے دھاگےکے اوپر ہی ختم ہوجائیں تو اس کا مطلب ہے کہ آپ کو ایک گرم اسپارک پلگ کی ضرورت ہے کیوں کہ انسولیٹر زیادہ گرمی باہر خارج کر رہاہے۔ اس طرح اپنے انجن کے لیے گرمائش کی حدود کا اندازہ لگا سکتے ہیں جو بہت حد تک درست ہوتا ہے۔

گرمائش کی حدود جانچنے کے لیے ٹیونرز اور بھی طریقے بتاتے ہیں (جن میں سے ایک grounding pin طریقہ ہے) لیکن وہ ان گاڑیوں کے لیے زیادہ موزوں ہیں جن پر بہت زیادہ دباؤ ڈالا جاتا ہو۔

M. Fahad Ghouri

I am an Electrical Engineer by profession but automotive field has been my passion from birth. I have been working on almost every aspect of vehicles along with many DIY projects.

Top