گاڑیوں میں سیاہ شیشوں کے استعمال پر پابندی


اسلام آباد – اپنی گاڑیوں میں سیاہ اور رنگین شیشوں کا استعمال کرنے والے افراد کو اب پولیس کی جانب سے قانونی کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا، ایک مقامی میڈیا ادارے نے بتایا۔

تفصیلات کے مطابق موٹر وہیکل آرڈیننس 1969ء میں چند استثناء ضرور ہیں جن کی وجہ سے لوگ گاڑیوں کی کھڑکیوں میں رنگین شیشے لگا سکتے تھے، لیکن ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے 6 دسمبر کو اعلان کیا کہ رنگین شیشوں کے حوالے سے تمام اجازت نامہ معطل کردیے گئے ہیں اور ڈائریکٹر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈپارٹمنٹ اور SSP اسلام آباد ٹریفک پولیس کو ہدایت کی ہے کہ قانون کی حلاف ورزی کرنے والے افراد کے خلاف کارروائی کریں۔

واضح رہے کہ اتھارٹی نے JDM کاروں کے حوالے سے اپنی پالیسی واضح نہیں کی، جو بنیادی طور پر رنگین شیشوں کے ساتھ ہی آتی ہیں۔

صرف اسلام آباد میں رنگین شیشوں کے خلاف کارروائی شروع نہیں کی جا رہی، بلکہ پچھلے سال اگست میں راولپنڈی سٹی ٹریفک پولیس نے شہر میں سیاہ شیشوں کی حامل گاڑیوں کے خلاف مہم شروع کی تھی۔ CTO یوسف علی شاہد نے اس وقت کہا تھا کہ گاڑیوں پر سیاہ اور رنگین شیشوں کی شہر کے اندر اجازت نہیں دی جائے گی اور خلاف ورزی کرنے والے شہریوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ گاڑیوں کو ضبط کرلیا جائے گا اور مالکان پر بھاری جرمانے کیے جائیںگے۔

مزید برآں، 10 نومبر 2018ء کو اسلام آباد ٹریفک پولیس نے ہیوی موٹر سائیکلوں کے رات 9 سے صبح 6 بجے تک رہائشی علاقوں میں داخلے پر پابندی لگا دی ہے۔ یہ قدم اسلام آباد کے شہریوں کی جانب سے بہت زیادہ شکایات کے بعد اٹھایا گیا ہے جن کا کہنا ہے کہ ہیوی موٹر سائیکلیں شور مچاتی ہیں اور شہر میں ٹریفک میں رکاوٹ پیدا کرتی ہے۔

ہماری طرف سے اتنا ہی، اپنی رائے نیچے تبصروں میں پیش کیجیے۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top