مالی سال 2015-16: پاکستان میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والی گاڑیاں

toyota-corolla-suzuki-wagon-r

مالی سال 2015-16 کے دوران پاکستان میں تیار شدہ گاڑیوں کی فروخت سے متعلق اعداد و شمار کافی حوصلہ افزا کہے جاسکتے ہیں۔ جولائی 2015 سے جون 2016 کے دوران مجموعی طور پر 1,50,063 گاڑیاں (سیڈان اور ہیچ بیک) فروخت ہوئیں جو گزشتہ مالی سال 2014-15 کے مقابلے میں 17.6 فیصد زیادہ تعداد ہے۔ اس سے قبل جولائی 2014 سے جون 2015 کے درمیان 1,27,552 سیڈان اور ہیچ بیک فروخت ہوئی تھیں۔ یاد رہے کہ اس میں سوزوکی بولان جیسی گاڑیاں شامل نہیں اور اگر انہیں بھی شامل کرلیا جائے تو گزشتہ مالی سال کی تعداد ایک لاکھ پچاس ہزار سے تجاوز کر کے 1,80,079 تک جاپہنچے گی۔

مزید پڑھیں: پاکستان میں گاڑیوں کی فروخت: مالی سال 2015-16 کا جائزہ

اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ان اعداد و شمار میں سب سے زیادہ حصہ کس گاڑی کا ہے؟ یا دوسرے لفظوں میں وہ کونسی گاڑی ہے کہ جسے سب سے زیادہ پسند اور خریدا گیا۔ سب سے زیادہ فروخت ہونے والی گاڑی کی بات چل رہی ہے تو اس گاڑی سے متعلق بھی بات کرلی جائے کہ جس نے گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں سب سے زیادہ بہتری کا مظاہرہ کرتے ہوئے پہلے سے زیادہ صارفین کی توجہ حاصل کی۔

سب سے زیادہ فروخت ہونے والی گاڑی

شاید بہت سے قارئین اس سوال کا جواب پہلے ہی سے جانتے ہوں گے۔ کیوں کہ ایک عرصے سے ٹویوٹا کرولا کے علاوہ کوئی بھی گاڑی پاکستانیوں کے دل و دماغ پر راج نہیں کرسکی۔ کرولا نے اس بار بھی سال میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والی گاڑی کا اعزاز حاصل کیا ہے۔ ٹویوٹا انڈس موٹرز نے مالی سال 2015-16 کے دوران مجموعی طور پر (1300cc سے 1800cc تک) 57,452 ٹویوٹا کرولا فروکت کیں جو گزشتہ مالی سال 2014-15 کے مقابلے میں 11.77 فیصد زیادہ ہیں۔ اس سےپچھلے مالی سال میں صرف 51,398 کرولا فروخت ہوئی تھیں۔ ذیل میں گزشتہ دو مالی سالوں کے دوران کرولا (Toyota Corolla) کی ماہانہ فروخت کا موازنہ ملاحظہ فرمائیں:

مہینہ مالی سال 2014-15 مالی سال 2015-16
جولائی 673 3868
اگست 3515 4972
ستمبر 4358 4672
اکتوبر 4099 4912
نومبر 4202 4960
دسمبر 3882 4297
جنوری 5864 5544
فروری 4449 4844
مارچ 5196 5275
اپریل 5412 4859
مئی 5030 5207
جون 4718 4042
مجموعہ 51398 57452

پہلے سے زیادہ توجہ حاصل کرنے والی گاڑی

اگر گاڑیوں کی فہرست اس اعتبار سے مرتب کی جائے کہ مالی سال 2014-15 کے برعکس مالی سال 2014-15 میں کونسی گاڑی زیادہ فروخت ہوئی تو اس میں سرفہرست آنے والی گاڑی کا نام سن کر آپ حیران رہ جائے گئیں۔ کیوں کہ اس فہرست میں سب سے اوپر سوزوکی ویگن آر کا نام ہے جس نے کسی بھی دوسری گاڑی کے مقابلے میں فروخت کے اعتبار سے زیادہ بہتری حاصل کی ہے۔

پاک سوزوکی نے مالی سال 2014-15 کے دوران صرف 5,246 ویگن آر فروخت کی تھیں جبکہ مالی سال 2015-16 میں یہ تعداد 80.75 فیصد اضافے کے بعد 9,482 تک جاپہنچی ہے۔ اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ابتدا میں شدید مشکلات کا شکار رہنے والی سوزوکی ویگن آر اب صارفین کی توجہ حاصل کرنے میں کامیاب ہورہی ہے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ نومبر 2015 میں سوزوکی نے صرف 703 ویگن آر فروخت کیں اور پھر جنوری میں پہلی بار اسے 1000 ماہانہ فروخت ہونے والی گاڑی کا اعزاز حاصل ہوا۔ ذیل میں گزشتہ دو مالی سالوں کے دوران سوزوکی ویگن آر (Suzuki WagonR) کی ماہانہ فروخت کا موازنہ ملاحظہ فرمائیں:

مہینہ مالی سال 2014-15 مالی سال 2015-16
جولائی 364 529
اگست 345 655
ستمبر 258 613
اکتوبر 321 772
نومبر 222 793
دسمبر 195 703
جنوری 475 1100
فروری 513 855
مارچ 644 837
اپریل 690 925
مئی 680 708
جون 539 992
مجموعہ 5246 9482

اگر ٹویوٹا کرولا اور سوزوکی ویگن آر کو گزشتہ مالی سال کی فاتح گاڑیاں قرار دیا جائے تو غلط نہ ہوگا۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ رواں مالی سال سے نافذ ہونے والی نئی آٹو پالیسی سے گاڑیوں کے شعبے بالخصوص مقامی اداروں کا کیا فوائد حاصل ہوتے ہیں۔ ہمیں امید ہے کہ پاکستان میں نئے کار ساز اداروں کی آمد سے رواں مالی سال کے نتائج پہلے سے زیادہ بہتر ہوں گے۔

Top