جون’18 میں موٹر سائیکلوں کی فروخت میں 26 فیصد سال بہ سال اضافہ

new-bikes

رواں سال گاڑیوں کی قیمتوں میں مسلسل اضافے اور ڈالر کے مقابلے میں روپے کی گھٹتی ہوئی قدر کی وجہ سے گاڑیوں کی فروخت میں پھر کمی آئی ہے۔ لیکن اس کے مقابلے میں ملک میں موٹر سائیکلوں کی فروخت میں سال بہ سال کی بنیاد پر 26 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ گزشتہ سال جون میں موٹر سائیکل بنانے والے اداروں نے 102,207 یونٹس فروخت کیے تھے، لیکن رواں سال کے اسی مہینے میں موٹر سائیکل بنانے والے 128,976 موٹر سائیکلیں فروخت کی گئیں۔ روپے کی قدر میں کمی کے باوجود موٹر سائیکلوں کی فروخت میں اضافہ حیران کن ہے لیکن پھر بھی فروخت بڑھتی جا رہی ہے۔ دوسری جانب گاڑیوں کی فروخت کو زوال کا سامنا ہے۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ اٹلس ہونڈا پاکستان میں موٹر سائیکل شعبے میں پیش پیش ہے اور ادارے نے سال بہ سال میں 28 فیصد اضافے کے ساتھ جون 2018ء میں 91,507 یونٹس فروخت کیے۔ مزید یہ بھی کہ 2018ء کے آغاز پر جنوری میں ہونڈا پاکستان نے 1 لاکھ سے زیادہ موٹر سائیکلیں فروخت کی تھیں، جس نے اسے پاکستان کی تاریخ میں اتنی موٹر سائیکلیں بیچنے والا پہلا ادارہ بنایا۔ مزید برآں، یونائیٹڈ آٹوز اور سوزوکی نے جون 2018ء میں بالترتیب 33,424 اور 2067 یونٹس فروخت کیے، سال بہ سال کی بنیاد پر ان کی فروخت میں بالترتیب 19 اور 17 فیصد اضافہ ہوا۔

مزید پڑھیں: کسٹمز انٹیلی جینس نے لاہور میں 8 اسمگل شدہ ہیوی موٹر سائیکلیں ضبط کرلیں

ہم نے ایک مقامی موٹر سائیکل ڈیلر سے بھی رابطہ کیا تاکہ جان سکیں کہ قیمتیں بڑھنے اور روپے کی قدر میں کمی کے باوجود موٹر سائیکلوں کی فروخت میں اضافہ کیوں ہو رہا ہے۔ انہوں نے ہمیں بتایا کہ جی ہاں! موٹر سائیکلوں کی قیمتوں میں رواں سال متعدد بار اضافہ ہوا، لیکن یہ اضافہ معمولی ہے، اور کیونکہ ملک کی بڑی آبادی درمیانے طبقے سے تعلق رکھتی ہے، اس لیے روپے کی قدر میں کمی کا موٹر سائیکلوں کی فروخت پر کوئی بڑا اثر نہیں پڑا۔ اور موٹر سائیکلوں کی اس بڑھتی ہوئی فروخت کے ساتھ یہ واضح ثبوت ہے کہ فروخت کی جانے والی موٹر سائیکلیں ان کے بجٹ کے مطابق ہیں۔ انہوں نے مزید کہا۔

ملک میں موٹر سائیکلوں کی مارکیٹ بھی تیزی سے متنوع ہوتی جا رہی ہے، کیونکہ موٹر سائیکلیں بنانے والے ادارے مقامی مارکیٹ میں نئی موٹر سائیکلیں متعارف کروا رہے ہیں۔ ہونڈا، سوزوکی اور یونائیٹڈ پہلے ہی 150cc موٹر سائیکلیں پیش کر چکے ہیں تاکہ زیادہ مارکیٹ حاصل کر سکیں اور صارفین کے لیے انتخاب کے مزید مواقع پیش کرنے کا ارادہ بھی رکھتے ہیں۔ سوزوکی پاکستان میں GSX-R600 بھی متعارف کرچکا ہے۔

مزید برآں، بینیلی پاکستان جلد ہی ملک میں اپنی TNT 150cc جاری کرے گا۔

اس بارے میں اپنی رائے نیچے تبصروں میں دیجیے۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top