ستمبر 2018ء میں موٹر سائیکلوں کی فروخت میں اضافے کا رحجان


پاکستان آٹوموٹو مینوفیکچررز ایسوسی ایشن (PAMA) کے مطابق ملک میں موٹر سائیکل اور تین پہیوں والی گاڑیوں کی فروخت میں سال بہ سال میں 12 فیصد اضافہ دیکھنے کو ملا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ماہ بہ ماہ میں اٹلس ہونڈا کی فروخت میں 20 فیصد اضافہ ہوا، جس نے ستمبر 2018ء میں 96,008 یونٹس فروخت کیے جبکہ ادارے نے اگست 2018ء میں 80,012 یونٹس فروخت کیے تھے۔ گزشتہ تین ماہ میں یہ موٹر سائیکلوں کے 266,029 یونٹس فروخت کیے، جو صاف ظاہر کرتا ہے کہ ادارہ مستحکم انداز سے آگے بڑھ رہا ہے۔ مزید برآں، یہ بات قابل ذکر ہے کہ ہونڈا نے اپنی موٹر سائیکلوں کی قیمت میں 4,000 روپے تک کا اضافہ بھی کیا ہے۔

ہونڈا کے علاوہ یونائیٹڈ آٹوز کی فروخت بھی ماہ بہ ماہ میں 22 فیصد اضافے کے ساتھ 40,654 تک جا پہنچی ہے۔ ادارے نے اگست میں 33,350 یونٹس فروخت کیے تھے۔ یونائیٹڈ نے زیادہ سے زیادہ مارکیٹ حاصل کرنے کے لیے 800cc ہیچ بیک اور 1000cc پک اپ بھی جاری کی ہیں، دیکھتے ہیں کہ عوام ان نئی گاڑیوں پر کیا ردعمل دکھاتے ہیں۔

علاوہ ازیں، سوزوکی نے اگست میں کے 1,837 یونٹس کی فروخت کے مقابلے میں ستمبر 2018ء میں 1,922 موٹر سائیکلیں بیچیں، جو ماہ بہ ماہ میں 5 فیصد اضافہ ہے۔ یاماہا کی فروخت میں کمی دکھائي دی جبکہ روڈ پرنس کی فروخت میں اضافہ ہوا۔ یاماہا اور روڈ پرنس نے ستمبر میں بالترتیب 2,003 اور 17,066 موٹر سائیکلیں فروخت کیں۔

تین پہیوں والی گاڑیوں کے شعبے میں آئیں تو یونائیٹڈ آٹوز نے ستمبر میں 1,278 موٹر سائیکل یونٹس فروخت کیے جبکہ اگست میں یہ 825 تھے۔ مزید برآں، سازگار نے 1,630 یونٹس اور روڈ پرنس نے 364 یونٹس فروخت کیے۔ مزید برآں، روپے کی قدر میں کمی کی وجہ سے چینی رکشہ اور موٹر سائیکل بنانے والوں نے بھی اپنی مصنوعات کی قیمتوں میں بالترتیب 15,000 اور 1,000 روپے کے اضافے کیے۔

ہماری طرف سے اتنا ہی، اپنے خیالات نیچے تبصروں میں پیش کیجیے۔


Top