گندھارا نسان کو براؤن فیلڈ اسٹیٹس مل گیا

nissan-pakistan

گندھارا نسان کو حال ہی میں براؤن فیلڈ اسٹیٹس دے دیا گیا ہے۔ ادارے نے بتایا ہے کہ اسے یہ درجہ مل چکا ہے اور اب وہ اپنے پیداواری پلانٹ کو بحال کرے گا جہاں سے ڈاٹسن کاروں کی پیداوار شروع کی جائے گی۔

گزشتہ ماہ کے آخر میں پاک ویلز نے بتایا تھا کہ انجینیئرنگ ڈیولپمنٹ بورڈ (EDB) اور بورڈ آف انوسٹمنٹ (BOI) نے آٹوپالیسی 2016-21ء کے مطابق گندھارا نسان کو براؤن فیلڈ اسٹیٹس دینے پر رضامندی ظاہر کردی ہے۔ گندھارا نسان کے حکام نے گزشتہ سال BOI کے ساتھ ایک ملاقات  میں کہا تھا کہ وہ مقامی آٹوموبائل انڈسٹری میں 4.5 ارب روپے لگانے  کا ارادہ رکھتے ہیں۔ اور اگر حکومت انہیں براؤن فیلڈ اسٹیٹس نہیں دے گی تو وہ کسی دوسرے ملک کا رُخ کریں گے۔ تو نتیجہ یہ نکلا کہ حکام نے اس بیان کو سنجیدہ لیا اور ادارے کو یہ درجہ دے دیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ کے وسط میں دیوان دائیہان موٹرز کو بھی براؤن فیلڈ درجہ دیا گیا تھا۔ حکومت مقامی مارکیٹ کو متنوّع بنانے اور گاڑیاں بنانے والے غیر ملکی اداروں کی توجہ حاصل کرنے کے لیے آٹو پالیسی 2016-21ء کے تحت مختلف اداروں کو براؤن فیلڈ اور گرین فیلڈ درجے دے چکی ہے۔ مزید برآں، دو مقامی اداروں ماسٹر موٹرز اور فوٹون JW آٹو پارک، جو JW SEZ کی ملکیت ہے، کے درمیان گرین فیلڈ درجہ دیے جانے پر باہم سخت الفاظ کا تبادلہ ہوا ہے۔ فوٹون JW کو حکام کی جانب سے گرین فیلڈ اسٹیٹس دیا گیا تھا۔ ماسٹر موٹرز کے ایک عہدیدار نے ذرائع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے اسے ایک غیر منصفانہ قدم قرار دیا اور کہا کہ یہ اُن کے کاروبار کو بھی متاثر کرے گا۔ دوسری جانب ماسٹر موٹرز کی طرف سے دیے گئے بیان کا جواب دیتے ہوئے فوٹون JW کے عہدیدار نے کہا کہ یہ باتیں بعید از حقیقت ہیں، اور انہوں نے سخت جانچ کے بعد یہ درجہ حاصل کیا۔

براؤن فیلڈ اسٹیٹس کیا ہے؟

براؤن فیلڈ سرمایہ کاری سے مراد موجودہ اسمبلی اور/یا مینوفیکچرنگ تنصیب کی بحالی ہے، جو یکم جولائی 2013ء پر یا اس سے پہلے سے آپریشنل نہیں یا بند ہو چکی ہے اور اس تاریخ کے بعد سے پاکستان میں کوئی پیداوار نہیں کی اور یہ بحالی اصل مالکان کی طرف سے آزادانہ طور پر یا بین الاقوامی ادارے کے ساتھ جوائنٹ وینچر معاہدے کے تحت یا غیر ملکی ادارے کی جانب سے پلانٹ کی خریداری کے ذریعے آزادانہ طور پر کی جا رہی ہے۔

فوائد:

  • گاڑیوں اور LCVs کی تیاری کے لیے غیر مقامی پرزہ جات کی 10 فیصد کسٹمز ڈیوٹی کے نرخوں پر اور تین سال کے عرصے کے لیے مقامی پرزہ جات 25 فیصد ڈیوٹی پر درآمد۔
  • ٹرکوں، بسوں اور نقل و حمل کی اہم گاڑیوں کی تیاری کے لیے تمام پرزہ جات (مقامی اور غیر مقامی دونوں) کی تین سال کے لیے درآمد مروجہ کسٹمز ڈیوٹی پر۔

آگے بڑھتے ہوئے گندھارا نسان نے اپنے خالص منافع کا بھی اعلان کیا، جس کے مطابق ادارے کا خالص منافع گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 82.19 فیصد بڑھا ہے۔ مزید برآں، چند روز قبل ماسٹر موٹرز نے اپنے اسمبلی پلانٹ کی تقریب سنگ بنیاد منعقد کی جہاں سے وہ پاکستان میں چنگن کی گاڑیاں اسمبل اور فروخت کرے گا۔

ہماری طرف سے اتنا ہی، تبصرے میں اپنی رائے ضرور دیں۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top