کیا پاکستان میں کرولا 2019ء GLi اور XLi نہیں ہوں گی؟


رواں سال کے آغاز سے ٹویوٹا XLi اور GLi کے حوالے سے افواہیں گردش کر رہی ہیں، مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد ان سیڈانز کے خاتمے یا جاری رہنے کے حوالے سے دلائل پیش کر رہے ہیں۔ کیا IMC واقعی اپنی سب سے زیادہ فروخت ہونے والی سیڈان کاروں کا خاتمہ کرے گا، کیا کوئی اگلے سال پاکستانیوں کے لیے کوئی 2019ء کرولا XLi اور GLi نہیں آئیں گی اور کیا کمپنی ان کی جگہ پر کوئی اور گاڑی پیش کرے گی؟ یہ وہ سوالات ہیں کہ جن کےجواب درکار ہیں۔

ٹویوٹا IMC پاکستان میں ٹویوٹا بیزا کی ٹیسٹنگ کر رہا ہے اور ممکنہ طور پر پاکستان میں اسے لانچ کر سکتا ہے، البتہ میری ناقص رائے میں ادارہ اسے پاکستان میں نہیں لا سکتا کیونکہ PakWheels.com کو معتبر ذرائع بتا چکے ہیں کہ کمپنی کرولا GLi کو 1300cc ویوس کے حق میں دستبردار کرے گا، جو بھارت اور چین سمیت دنیا کے مختلف حصوں میں پہلے ہی دستیاب ہے۔

ایک مقامی ٹویوٹا وینڈر نے ہمیں بتایا کہ IMC نے انہیں رواں سال نومبر کے اختتام تک ویوس کے پرزے بنانے کی ڈیڈلائن دی، اور بہت زیادہ امکان ہے کہ کمپنی 2019ء کی جوتھی سہ ماہی میں یہ گاڑی لے آئے۔ اس لیے عین ممکن ہے کہ ادارہ پاکستان میں دو نئی گاڑیاں پیش کرے: ایک 1000cc کی ٹویوٹا بیزا 2019ء اور دوسری 1300cc کی ٹویوٹا ویوس 2019ء۔ البتہ ٹویوٹا ویوس کی آمد اور GLi کے خاتمے کی خبر حقیقت کے قریب تر ہے۔

جہاں تک XLi کے خاتمے کا امکان ہے، اس میں مجھے ذرا شک ہے، کیونکہ ادارے نے چند ماہ پہلے ہی 4-گیئر آٹومیٹک کرولا XLi لانچ کی ہے، لیکن یہ ہو سکتا ہے کہ ویوس کے حق میں مینوئل XLi کو بتدریج ختم کردیا جائے تو ہو سکتا ہے کہ مینوئل کرولا XLi مارکیٹ میں نہ آئے۔

گزشتہ روز میں ایک صنعتی ماہر سے بات کر رہا تھا اور انہوں نے بھی اسی جانب اشارہ کیا کہ انہیں یقین ہے کہ پاکستان میں ویوس آ رہی ہے کیونکہ یہ بھارت میں بھی لانچ ہو چکی ہے، البتہ XLi اور GLi ویریئنٹس کے خاتمے کی خبر یقینی نہیں۔

یہ دیکھنا زبردست ہوگا کہ ٹویوٹا IMC پاکستان میں اپنی سب سے زیادہ فروخت ہونے والی سیڈانز کو ختم کرے گا یا نہیں۔ گزشتہ تین چار ماہ میں کمپنی پاکستان میں 18,814 کرولا یونٹس فروخت کر چکا ہے جو گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 2 ہزار یونٹس زیادہ ہیں اور ان گاڑیوں کی بڑی تعداد XLi یا GLi ہے۔ ان مخصوص سیڈانز کی فروخت اب بھی بڑھ رہی ہے، اس لیے GLi اور XLi کا خاتمہ گاڑیوں اور کرولا کے چاہنے والے افراد کے لیے دلچسپ مرحلہ ہوگا۔

ہماری طرف سے اتنا ہی، اپنے خیالات نیچے تبصروں میں پیش کیجیے۔


Top