پاکستان میں نئی BMW X1 متعارف؛ قیمت صرف 40 لاکھ روپے

14379932_1245533795477073_4866803988659288804_o

گزشتہ عشرے سے کراس اوور گاڑیوں کی مقبولیت میں قابل ذکر اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ اور اس رجحان سے تمام ہی کار ساز ادارے فائدہ اٹھانے کے لیے اپنی نت نئی کراس اوور متعارف کروا رہے ہیں۔ اس کا اندازہ لگانا چاہیں تو امریکا ہی کی مثال لے لیں کہ جہاں سال 2016 کی پہلی ششماہی کے دوران کراس اوور گاڑیوں کی فروخت میں مجموعی طور پر 8 فیصد اضافہ ہوا جبکہ سیڈان گاڑیوں کی فروخت میں 6 فیصد کمی آئی ہے۔ تکنیکی اعتبار سے بات کی جائے تو کراس اوور طرز کی گاڑیاں درحقیقت ہیچ بیک پلیٹ فارمز پر تیار کی جاتی ہیں تاہم یہ زمین سے خاصی اونچی، بڑے پہیوں کی حامل ہونے کی وجہ سے SUV سے بھی میل کھاتی ہیں۔ اگر پاکستان کی بات کریں تو ہونڈا وِزل کی صورت میں ہمارے پاس ایک کامیاب ترین کراس اوور کی مثال موجود ہے۔ اس کے علاوہ بھی بہت سی درآمد شدہ کراس اوور سڑکوں پر رواں دواں نظر آتی ہیں جن میں ہونڈاHR-V سے لے کر نسان جیوک تک بے شمار برانڈز شامل ہیں۔

کراس اوور کے شوقین پاکستانیوں کے لیے تازہ ترین خوشخبری یہ ہے کہ پاکستان میں BMW X1 کی دوسری جنریشن متعارف کروادی گئی ہے۔ دیوان موٹرز کی جانب سے پچھلے ہفتے پیش کی جانے والی نئی X1 دراصل BMW ہی کے ذیلی ادارے مِنی کی ایک گاڑی Countrymen کے پلیٹ فارم پر تیار کی گئی ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ پاکستان میں BMW X1 کی قیمت صرف 39.9 لاکھ روپے رکھی گئی ہے اور اس میں ایک بہترین کراس اوور کی وہ تمام خصوصیات شامل ہیں کہ جو دیگر گاڑیوں میں حاصل کرنے کے لیےالگ پیسے ادا کرنا پڑتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: حقیقت یا نظر کا دھوکا؟ ہونڈا سِوک 2016 بی ایم ڈبلیو 3 سیریز جتنی بڑی ہے!

اس سے بھی زیادہ دلچسپ بات یہ ہے کہ BMW X1 کی اس نئی جنریشن میں اعزاز یافتہ 1500cc ٹربوچارجڈ 3-سلینڈر انجن شامل کیا گیا ہے۔ عام طور پر یہ انجن BMW کی مہنگی ترین گاڑیوں ہی میں پیش کیا جاتا تھا۔ یورو VI معیارات کے مطابق تیار کیا جانے والا یہ انجن 136 بریک ہارس پاور کے علاوہ 220 نیوٹن میٹر ٹارک فراہم کرنے کی بھی سکت رکھتا ہے۔

میں نے دیوان موٹرز کے ایک نمائندے سے گزشتہ ہفتے رابطہ کیا تو انہوں نے نئی کراس اوور کی پیشکش سے متعلق بتایا کہ کراچی شوروم پر جب اس گاڑی کو پیش کیا گیا تو صارفین کی جانب سے خاصی گرمجوشی کا مظاہرہ کیا گیا اور یہی وجہ ہے کہ جس نے ہمیں X1 کو پورے پاکستان میں پیش کرنے کی طرف راغب کیا۔

ماضی میں BMW کا نام ‘بہت مہنگی’ گاڑیوں کے ساتھ منسلک کیا جاتا تھا۔ لیکن اب ایسا محسوس ہوتا ہے کہ BMW پاکستان میں متوسط قیمت میں دستیاب گاڑیوں کی فہرست میں خود کو شامل کرنا چاہتا ہے۔ اس کا ایک مقصد پنج سالہ آٹو پالیسی سے حاصل ہونے والی رعایت کا بھی فائدہ اٹھانا ہوسکتا ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان میں BMW کی تمام ہی گاڑیاں مکمل تیار شدہ حالت (CBUs) میں تیار کی جاتی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ ان کی قیمت میں بھاری بھرکم ٹیکس بھی شامل ہوجاتا ہے۔ پاکستان میں پیش کی جانے والی BMW X1 کی لمبائی 4439 ملی میٹر، چوڑائی 1821 ملی میٹر اور اونچائی 1612 ملی میٹر ہے جبکہ اس کا ویل بیس 2670 ملی میٹر ہے۔زمین سے گاڑی کے فرش کی اونچائی 183 ملی میٹر ہے ۔ توقع ہے کہ پاکستان میں اس گاڑی کو اگلے پہیوں کی قوت سے چلنے (FWD) کی صلاحیت کے ساتھ پیش کیا جائے گا۔

دیوان موٹرز کی متعارف کروائی جانے والی BMW X1 کے سادے ماڈل کی قیمت 39,99,000 ہے جبکہ اس کے مزید بہتر ماڈل کی پیشکش بھی متوقع ہے۔ یاد رہے کہ X1 انٹیلی جنٹ چیسز کی حامل ہے جس میں ڈائنامک ٹریکشن کنٹرول (DTC)، ڈائنامک اسٹیبلٹی کنٹرول (DSC) اور انتہائی اعلی معیار کا اسٹیل اور ایلومینیئم استعمال کیا گیا ہے۔ اس کے پچھلے حصے میں 58.7 مربع فٹ کی جگہ موجود ہے کہ جہاں سامان رکھا جاسکتا ہے۔ اس کے علاوہ اگر مزید گنجائش درکار ہو تو پچھلی نشستوں کو تہ کرنے کی سہولت بھی موجود ہے۔ ذیل میں BMW X1 کی دیگر خصوصیات کی فہرست ملاحظہ فرمائیں:

14322350_10209703274010500_738204000303341426_n

بی ایم ڈبلیو X1 کا وزن اپنی طرز کی گاڑیوں سے خاصہ کم ہے لیکن اس کے باوجود تیاری کے لیے استعمال ہونے والے ساز و سامان کا معیار بہت عمدہ رکھا گیا ہے۔ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ لگ بھگ 40 لاکھ روپے کی قیمت میں پیش کی جانے والی یہ گاڑی پاکستان میں بہت سے خریداروں کو اپنی جانب متوجہ کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔

We all make mistakes in life but I believe in learning from them and that is why I have opted to become an auto-journalist. I have a tech background but I prefer to write and express my views on cars because I am petrol head.

  • Noman

    My Favorite. Hope the quality & performance better then honda vezel. MUST BUY.

Top