لاہور میں جدید ڈرائیونگ سینٹرز بنائے جائیں گے

Electronic Driving Centre

صوبہ پنجاب میں گاڑی چلانے کے تربیت اور اجازت نامے (ڈرائیونگ لائسنس) جاری کرنے کے طریقہ کار کو جدت سے ہم آہنگ کیا جارہا ہے۔ حکومت پنجاب نے صوبے بھر میں جدید ڈرائیونگ سینٹرز قائم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ان مراکز میں گاڑی چلانے کا اجازت نامہ (ڈرائیونگ لائسنس) حاصل کرنے کے خواہش مند افراد کا جدید انداز سے امتحان لیا جائے گا۔ اس امتحان میں درخواست گزار اصلی گاڑی پر سوار نہیں ہوگا بلکہ اس کی جگہ ایک کمپوٹر اسکرین کی مدد لی جائے گی۔

صوبائی حکومت کی جانب سے اس جدید نظام کے استعمال کی منظوری دے دی گئی ہے۔ توقع ہے کہ اسے آئندہ ماہ اکتوبر 2016 کے آخر تک لاہور میں مستعمل ہوجائے گا۔ ابتدا میں یہ نظام لاہور میں ٹریفک پولیس کے مختلف مراکز بشمول ٹھوکر نیاز بیگ، پولیس لائنز، عرفہ سافٹویئر ٹیکنالوجی پارک، CTO لاہور کے دفتر اور LCCHS ڈیفنس میں استعمال کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: لاہور کے بعد اب موٹروے پر بھی جدید ای-چالان کا اجرا شروع

driving-simulator

پنجاب حکومت کے موجودہ اقدامات سے گاڑی چلانے کا اجازت نامہ حاصل کرنے والوں کو کافی سہولت حاصل ہوگی۔ یاد رہے کہ مستقل ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے سے قبل لرنر ڈرائیونگ لائسنس ہونا ضروری ہے۔ علاوہ ازیں جدید نظام کے تحت ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے خواہشمند افراد کو کمپوٹرائزڈ امتحان میں کم از کم 75 نمبر اور بنیادی قوانین سے متعلق سوالات کا درست جواب دینا بھی لازمی ہے۔

پنجاب میں اس نئے اور جدید نظام کے لاگو ہونے سے ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے مراحل پہلے سے زیادہ آسان اور کم وقت میں طے ہونے کی توقع کی جارہی ہے۔

Top