ایف بی آر نے نان-فائلرز کو گاڑیاں خریدنے سے روک دیا


فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے جمعہ 14 ستمبر 2018ء کو انکم ٹیکس نان-فائلرز پر پابندی لگا دی۔

سرکاری ذرائع کے مطابق نان-فائلرز چار پہیوں والی کوئی گاڑی نہیں لے سکیں گے، البتہ اس پابندی کا اطلاع موٹر سائیکل یا رکشہ خریدنے پر نہیں ہوتا۔

فائنانس ایکٹ 2018ء کے ذریعے نیا سیکشن 227C انکم ٹیکس آرڈیننس میں شامل کیا گیا تاکہ فائلرز کی تعداد بڑھائی جائے۔

اس سیکشن کے تحت جب تک کہ فرد فائلر نہ ہو اور اس کا نام ایکٹو ٹیکس پیئرز لسٹ (ATL) میں شامل نہ ہو، مقامی یا درآمد شدہ گاڑی کی بکنگ کی کوئی درخواست و رجسٹریشن آگے نہیں بڑھائی جائے گی۔

مزید برآں، FBR کے مطابق، تمام گاڑیاں اپنی انجن گنجائش سے قطع نظر اس پابندی کے زمرے میں آئیں گی۔

اس سے پہلے چند ماہ قبل جب اس پابندی کا اعلان کیا گیا تھا تو عوام کی بڑی تعداد نے اس پر اعتراض کیا تھا اور بعد ازاں جولائی 2018ء میں حکومت نے 1000cc سے کم کی گاڑیوں کی خرید و درآمد پر نان-فائلرز کو چھوٹ دے ےدی تھی۔

مزید خبروں کے لیے ہمارے بلاگ پر آتے رہیے۔


Top