اگر ٹویوٹا GT86 میں فراری انجن لگادیا جائے تو کیا ہوگا؟

Ferrari + Toyota GT86 Engine Swap (17)

جاپانی کار ساز ادارے بہترین انجن بنانے کے حوالے سے مشہور ہیں۔ ان کے تیار کردہ انجن نہ صرف حجم میں کم ہوتے ہیں بلکہ ایندھن بچانے کی صلاحیت بھی رکھتے ہیں۔ تاہم جب بات ہو برق رفتار انجن کی تو جاپانی اداروں کی پیش کش زیادہ متاثر کن نہیں ہے۔ گو کہ ہونڈا NSX کی طرح V6 انجن بھی دنیا میں کافی مشہور ہے لیکن اس کے بہتر ماڈل یعنی V8 انجن کی تعداد بہت کم ہے۔ اور اسی سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ یہ انجن دور حاضر میں برق رفتاری کے لیے زیادہ موزوں نہیں سمجھے ہیں۔ جاپانی اداروں کے تیار کردہ انجن بڑی سیڈان یا پھر سامان بردار گاڑیوں (مثلاً Toyota Tundra) میں استعمال کیے جاتے ہیں ۔ گو کہ لیکسز LFA میں نیا اور جدید V10 انجن پیش کیا جا چکا ہے تاہم یہ انجن بھی ہر اکثریت کی دسترس سے باہر ہے۔

مزید پڑھیں: فراری F12tdf انجن اور اس کے پرزوں سے متعلق دلچسپ ویڈیو

دنیا میں طاقتور ترین انجن بنانے والوں کی فہرست مرتب کی جائے تو فراری کا نام صف اول میں شامل ہوگا۔ چاہے بات ہو V8 کی یا پھر V12 کی، یورپی ادارہ دنیا کے تمام اداروں سے ممتاز حیثیت رکھتا ہے۔ یہ بات اپنی جگہ درست ہے کہ امریکی V8 انجن کی زبردست گھن گھرج سب سے زیادہ پسند کی جاتی ہے لیکن جب بات ہو کارکردگی کی تو فراری V8 کا کوئی ثانی نہیں ہے۔ یہی وجہ ہے کہ امریکی کمپنی فورڈ نے بھی مستنگ V8 کے بہتر ورژن میں فراری (Ferrari) اور دیگر یورپی V8 انجن کی برابری کرنے کی کوشش کی ہے۔

اب اگر کوئی شخص یہ خواہش رکھتا ہو کہ ڈرفٹنگ کے لیے بہترین جاپانی گاڑی میں طاقتور V8 انجن شامل کیا جائے تو اس کے لیے ٹیووٹا GT86 اور فراری V8 ہی بہترین انتخاب ثابت ہوسکتے ہیں۔ امریکی ریاست نیو ہیمپشائرسے تعلق رکھنے والے مایہ ناز ڈرفٹر ریان بھی یہی کام کرنے جارہے ہیں۔ ریان نے اس مقصد کے لیے 1986 اسپرنٹر AE86 کی طرز پر بنائی گئی نئی ٹویوٹا GT86 میں فراری 458 سے نکالا گیا ساڑھے چار ہزار سی سی V8 انجن لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ پچھلے ماڈل کی طرح نئی GT86 بھی منفرد چیسز اور پچھلے پہیوں کی قوت سے چلنے کی صلاحیت رکھتی ہے اس لیے اسے ڈرفٹنگ کے لیے بہترین خیال کیا جارہا ہے۔ یہ پہلا موقع نہیں کہ گاڑیوں کے شوقین کسی فرد نے GT86 کا انجن تبدیل کرنے کی ٹھانی ہو۔ اس سے قبل متعدد بار ٹویوٹا GT86 میں 6-سلینڈر، V6 انجن اور V8 انجن شامل کیا جاچکا ہے تاہم یہ پہلا موقع ہے کہ ٹویوٹا GT86 میں فراری V8 انجن لگایا جائے گا۔

اگر آپ یہ سوچ رہے کہ انجن تبدیل کرنا کوئی آسان کام ہے تو ایسا بالکل نہیں ہے۔ فراری V8 انجن گاڑی کے وسط میں نصب کرنے کے لیے تیار کیا جاتا ہے جبکہ ٹویوٹا GT86 میں انجن اگلی لگایا جاسکتا ہے۔ اس کے علاوہ فراری V8 تقریباً 9000 آر پی ایم اور 562 بریک ہارس پاور کے ساتھ 540 نیوٹن میٹر ٹارک بھی فراہم کرتا ہے۔ جس سے اس پورے کام کی پیچیدگی اور حساسیت کا بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔

Top