پیٹرول، ڈیزل سمیت پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا فیصلہ

fuel price down

وفاقی حکومت نے اکتوبر 2016 کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 3 روپے تک کمی کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی سفارشات پر یہ فیصلہ کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا۔ یاد رہے کہ پچھلے ماہ تک ان قیمتوں میں رد و بدل وزیر اعظم نواز شریف کی مشاورت سے کیا جاتا تھا۔ تاہم عدالت عالیہ کے حکم پر اس کام کے لیے ایک کابینہ تشکیل دی گئی جسے ہر 15 روز بعد قیمتوں میں تبدیلی کا اختیار حاصل ہے۔

یہ بھی پڑھیں: خام تیل کی قیمت میں کمی کے باوجود پاکستانی عوام ثمرات سے محروم کیوں؟

انگریزی روزنامے ڈیلی ٹائمز کے مطابق اکتوبر 2016 میں پیٹرول کی قیمت پر 3 روپے فی لیٹر جبکہ ڈیزل کی قیمت پر 2.50 روپے فی لیٹر رعایت دی جائے گی ۔ علاوہ ازیں مٹی کے تیل و دیگر پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت میں بھی کمی کا امکان ہے۔ کابینہ اجلاس میں ہونے والے اس فیصلے کا اعلان رواں ماہ کی 30 تاریخ کو کیا جائے گا۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں کمی و زیادتی ہونے کے باوجود پاکستان میں مسلسل پانچ ماہ تک پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کوئی کی نہیں کی گئی۔ اس حوالے سے اوگرا کی کی تجاویز مسلسل پانچ مرتبہ مسترد کی جاچکی ہیں۔ آخری مرتبہ پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں واضح اضافہ اپریل 2016 میں کیا گیا تھا۔

بعض حلقوں کی جانب سے وفاقی حکومت کے اس اقدام کو ایک سیاسی حکمت عملی تصور کیا جارہا ہے۔ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا یہ فیصلہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے کہ جب ایک طرف حزب اختلاف کی بڑی جماعت پاکستان تحریک انصاف سخت اقدامات اٹھانے کی تیاری کر رہی ہے تو دوسری جانب لاہور ہائی کورٹ نے بھی پیٹرولیم مصنوعات پر اضافی سیلز ٹیکس کی وصولی پر وفاقی حکومت، وزارت پیٹرولیم اور اوگرا سے جواب طلب کرلیا ہے۔ جبکہ سرکاری ادارے اوگرا کا موقف ہے کہ عالمی منڈی میں خام تیل کی گرتی ہوئی قیمتوں کو دیکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔

Asad Aslam

A PakWheeler with a degree in mass communication. He tweets as @masadaslam

Top