اگست 2016 میں پیٹرولیم مصنوعات کے نرخ تبدیل نہ کرنے کا فیصلہ

petrol-1

عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں جاری اتار چڑھاؤ کے باوجود حکومت پاکستان نے مسلسل چوتھے ماہ بھی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں تبدیلی نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اب سے کچھ روز قبل آئل اینڈ گیس ریگولیٹر اتھارٹی (اوگرا) کی جانب سے وزارت پیٹرولیم کو مختلف مصنوعات کے نرخ میں تبدیلی کی تجاویز دی گئی تھیں۔ تاہم اس بار بھی وزیر اعظم نواز شریف نے اوگرا کی سفارشات منظور کرنے سے انکار کردیا اور اگست 2016 کے لیے بھی گزشتہ ماہ کے نرخ برقرار رکھنے ہدایات جاری کی ہیں۔

اوگرا کی جانب سے پیٹرول پر 2.12 روپے فی لیٹر، ہائی اسپیڈ ڈیزل پر 0.26 روپے فی لیٹر اور مٹی کی تیل پر 3.94 روپے فی لیٹر اضافہ کی تجویز دی گئی تھی۔ علاوہ ازیں اوگرا نے لائٹ ڈیزل پر 1.24 روپے فی لیٹر اور ہائی آکٹین پر 0.60 روپے فی لیٹر کمی کا بھی مشورہ دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: پیٹرول کی قیمت 40 روپے لیٹر ہونی چاہیئے: سندھ اسمبلی میں قرار داد منظور

وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ خطے کے دیگر ممالک کے مقابلے میں یہاں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بہت کم ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات پر قیمتوں میں کمی لانے کے لیے حکومت نے GST اور PL میں بھی واضح کمی کی ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ مارچ 2013 میں جب موجودہ حکومت اقتدار میں آئی تو پیٹرول کی قیمت 106.60 روپے فی لیٹر تھی اور آج پیٹرول 64.27 روپے فی لیٹر پر فروخت ہورہا ہے۔

مارچ 2013 اور اگست 2016 کے درمیان پیٹرولیم مصنوعات اور ان پر عائد ٹیکس کا موازنہ

پیٹرولیم مصنوعات فی لیٹر قیمت
(مارچ 2013)
فی لیٹر قیمت
(اگست 2016)
جی ایس ٹی + پی ڈی ایل
(مارچ 2013)
جی ایس ٹی + پی ڈی ایل
(اگست 2016)
پیٹرول 106.60 64.27 24.70 17.53
ہائی اسپیڈ ڈیزل 113.56 72.52 23.66 23.66
لائٹ ڈیزل 98.26 43.35 16.55 6.26
مٹی کا تیل 103.69 43.25 20.30 5.15
ہائی آکٹین 140.06 72.86 33.32 24.05

مارچ 2013 اور اگست 2016 میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں اور ٹیکس میں فرق کو انفوگرافکس سے بہتر طور پر سمجھا جاسکتا ہے

fuel price comparison new

پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں آخری بار اپریل 2016 میں واضح اضافہ کیا گیا تھا۔ اسے اتفاق کہیے یا کچھ اور کہ اسی ماہ پاناما لیکس سے متعلق خبریں منظرعام پر آئی تھیں جس سے حکومتی خاندان پر عوامی اعتماد کو شدید ٹھیس پہنچی تھی۔ یہی وجہ ہے کہ سیاسی حلقوں میں وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں تبدیل نہ کیے جانے کے فیصلے کو عوام میں حکومت کی مقبولیت میں اضافہ کی ایک کوشش قرار دیا جارہا ہے۔ دوسری طرف شعبے کے ماہرین عالمی منڈی میں تیل کی قیمت میں جاری رد و بدل کو اس کی بنیادی وجہ بتا رہے ہیں۔ بہرحال معاملہ کوئی بھی ہو جب تک اس سے عوام اور بالخصوص گاڑیوں اور موٹرسائیکل چلانے والوں کو مناسب فوائد حاصل ہورہے ہیں تب تک ہمیں اس فیصلے کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے۔

رواں سال پیٹرولیم مصنوعات کی فی لیٹر قیمتوں کا خلاصہ

سال 2016 پیٹرول لائٹ ڈیزل ہائی اسپیڈ ڈیزل مٹی کا تیل ہائی آکٹین
جنوری 76.26 44.94 80.79 48.25 80.66
فروری 71.25 39.94 75.79 43.25 75.66
مارچ 62.77 37.97 71.12 43.25 72.62
اپریل 64.27 37.97 72.25 43.25 72.62
مئی 64.27 37.97 72.25 43.25 72.62
جون 64.27 37.97 72.25 43.25 72.62
جولائی 64.27 37.97 72.25 43.25 72.86
اگست 64.27 37.97 72.25 43.25 72.86
Asad Aslam

A PakWheeler with a degree in mass communication. He tweets as @masadaslam

Top