پاکستان میں ٹرک متعارف کروانے کے لیے گندھارا کا رینو کے ساتھ معاہدہ


گندھارا نسان نے پاکستان میں ہیوی ڈیوٹی ٹرک درآمد کرنے کے لیے رینو (رینالٹ) ٹرکس SAS کے ساتھ درآمدی معاہدے پر دستخط کردیے ہیں۔

گندھارا نسان سرمایہ کاری اور نئی گاڑیاں متعارف کروانے کے ذریعے مقامی مارکیٹ میں اپنی موجودگی کو پھیلا رہا ہے۔ ادارے کو حکومت کی جانب سے براؤن فیلڈ درجہ دیا گیا تھا، اور اس کے بعد سے اب تک وہ کافی متحرک دکھائی دے رہا ہے اور اب جیسا کہ اوپر بتایا گیا ہے کہ ادارے نے فرانس سے پاکستان میں CBUs کی درآمد کے لیے رینو ٹرکس SAS کے ساتھ معاہدے پر دستخط کردیے ہیں۔

واضح رہے کہ گندھارا چند ٹرک درآمد کرچکا ہے تاکہ انہیں پاکستانی سڑکوں پر تجرباتی مراحل سے گزارے۔ مزید یہ کہ گندھارا نے نسان موٹر کمپنی کے ساتھ بھی ایک معاہدے پر دستخط کیے کہ وہ پاکستان میں ڈاٹسن کاریں متعارف کروائے، اور وہ اس حوالے سے پہلے چار سالوں میں 4.5 ارب پاکستانی روپے (تقریباً 41 ملین ڈالرز) کی سرمایہ کاری کرے گا۔ نسان اور گندھارا کراچی کے پورٹ قاسم میں موجود گندھارا کی تنصیبات کو عالمی معیار کے مینوفیکچرنگ پلانٹ میں تبدیل کرنے کے لیے مل کر کام کریں گے۔

مزید برآں، ادارے نے چینی شراکت دار JAC موٹرز کے ساتھ مل کر JAC X200 کو مقامی طور پر تیار کرنا شروع کردیا ہے۔ مقامی طور پر تیار شدہ X200 کی تقریب رونمائی اپریل 2018ء میں گندھارا نسان ٹرک پلانٹ، پورٹ قاسم، کراچی میں ہوئی تھی۔ اس گاڑی کی قیمت تقریباً 16 لاکھ روپے ہے۔

آگے بڑھتے ہوئے گندھارا آنے والے دنوں میں پاکستان میں JAC T6 ڈبل کیبن پک اپ متعارف کروانے کے لیے تیاری پکڑ رہا ہے۔

گندھارا نسان کے ساتھ ساتھ رینو ملک میں اپنی گاڑیاں متعارف کروانے کے لیے فیصل آباد میں اپنا اسمبلی پلانٹ بھی لگا رہا ہے۔ رینو نے پاکستانی صارفین کے لیے اپنی ویب سائٹ (www.RenaultPakistan.com) بھی جاری کردی ہے۔

اب تک کے لیے اتنا ہی، نیچے تبصرے کے ذریعے اپنی رائے ضرور دیجیے۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top