ہونڈا “ففٹی” کی موٹر سائیکلوں کے مقابلے میں شرکت!

11

اپنے وقت کی بہترین موٹر سائیکل سمجھی جانے والی ہونڈا ‘ففٹی’ مجموعی طور پر دنیا بھر میں 7 کروڑ 5 لاکھ کی تعداد میں فروخت ہوئیں۔ اگر آپ کو یہ تعداد کم لگتی ہے تو اس کا اندازہ ٹویوٹا کرولا کی فروخت سے لگائیے کہ جو اب تک عالمی دنیا میں 4 کروڑ کی تعداد میں فروخت کی جاچکی ہے۔ ہونڈ ففٹی کو ‘سوپر کَب’ بھی کہا جاتا تھا لیکن اس نام میں لفظ ‘سوپر’ کا دور جدید کی سوپر کارز سے کوئی ربط نہیں ہے۔ اس لقب کے پیچھے ففٹی کی گوناگو خصوصیات تھیں جن کی بدولت یہ سامان کی نقل و حمل، کاروبار، خاندان اور ذاتی استعمال کے لیے بہترین سمجھی جاتی تھی۔ اس کے علاوہ ایندھن کی بچت کے اعتبار سے بھی یہ اپنی مثال آپ تھی۔ ڈسکوری چینل پر ہونڈا کی اس عظیم موٹر سائیکل سے متعلق ایک خصوصی پروگرام دکھایا گیا۔ اس پروگرام کے میزبان نے موٹر سائیکل کی مضبوطی ثابت کرنے کے لیےہونڈا ففٹی کو کئی میٹر بلندی سے زمین پر پھینکا اور پھر اسے اسٹارٹ کیا۔اونچائی سے گرنے کی وجہ سے موٹر سائیکل کےدونوں پہیوں کا نقشہ بدل گیا لیکن پہلی ہی کوشش میں موٹر سائیکل نہ صرف اسٹارٹ ہوئی بلکہ پچھلا پہیا بھی مکمل رفتار اور روانی سے گھومتا رہا۔

یہ بھی پڑھیں: پاک ویلز کے ذریعے موٹر بائیکس کی خرید و فروخت اور بھی آسان!

بہرحال، 7 کروڑ 50 لاکھ کی تعداد میں فروخت والی موٹر سائیکل میں اس وقت صرف ایک ہی ہونڈا ففٹی باقی ہے۔ اصلی حالت میں موجود یہ ہونڈا ففٹی 1961 کی ہے جس کا نام جاپانی کمپنی ڈیوس نے ہونڈا سوپر کَب سے تبدیل کر کے ‘فائر فلائے’ رکھ دیا ہے۔

یہ نام کیوں رکھا گیا؟ اس بارے میں جاننے سے قبل نیچے موجود تصاویر میں ہونڈا ففٹی کی نئی شکل ملاحظہ کریں کہ جہاں وہ موٹر سائیکل کے مقابلے میں شریک ہے۔

جاپانی ادارے ڈیوس نے حال ہی میں موٹر سائیکل کے شعبے کے لیے میتھیو رابرٹ کو نیا ڈائریکٹر مقرر کیا ہے۔ میتھیو نے ہونڈا ففٹی کے وقتوں میں پیش کی جانی والی GT اور TT بائیکس سے متاثر ہو کر ہونڈا سوپر کَب کو نئی شکل دینے کا فیصلہ کیا۔صرف یہی نہیں بلکہ انہوں نے اسے جاپانی کی قبل از 1964 موٹر سائیکل ریسنگ سیریز میں بھی اتارنے کا منصوبہ بنایا۔ ہونڈا ففٹی کی نئی ہئیت کو مختصر ہوائی جہاز کی طرح بنایا گیا ہے جس میں پیٹرول، بیٹری، بجلی اور کوائل سبھی کچھ سما سکتے ہیں۔ نئی موٹر سائیکل کی مجموعی چوڑائی صرف 4.5انچ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: گاڑیوں اور موٹر سائیکل سے متعلق سال 2015 کے بہترین مضامین

ڈیوس اسے موٹر سائیکل کے مقابلے میں دوڑانے پر غور کر رہی ہے اسے وجہ سے ڈیزائن کو مختصر اور ہلکا وزن رکھنے پر خصوصی توجہ دی گئی ہے۔ حتی کہ نمبر پلیٹ کا استعمال بھی اگلے حصے میں موجود لائٹس کے اوپر کیا گیا ہے جسے حسب ضرورت نمبر پلیٹ ہٹا کر استعمال کیا جاسکتا ہے۔

ہمارے پاس ایسی بے شمار موٹر سائیکلیں آج بھی سڑکوں پر رواں دواں ہیں کہ جو مغرب کے لیے قدیم اور تاریخی حیثیت رکھتی ہیں۔ تاہم مغرب کے برعکس ہمارے یہاں انہیں جدت سے ہم آہنگ کرنے یا نت نئے ڈیزائن میں تبدیل کرنے کا رجحان سرے سے ہے ہی نہیں۔ شاید اس مضمون کو پڑھ کر ہی کچھ جذباتی لوگ اپنی موٹر سائیکل کو ویسا بنانے کی کوشش کریں جیسی بائیک وہ خوابوں میں دوڑاتے پھرتے ہیں۔

Top