ہونڈا اٹلس کاریں اس مہینے سے مہنگی ہو جائیں گی


پاکستان میں گاڑیاں بنانے والے اداروں میں سے ایک ہونڈا اٹلس نے آج اپنی گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کردیا ہے۔

ادارے کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق منفی شرح مبادلہ کے اثرات اور 1 فیصد اضافی امپورٹ ڈیوٹی اس اضافے کی وجوہات ہیں۔ قیمتوں میں اضافہ 30,000 سے 1,00,000 روپے تک ہے اور آج یعنی 2 جولائی 2018ء سے ہی نافذ العمل ہوچکا ہے۔

نئی قیمتیں سونپے گئے مال میں اُن گاڑیوں پر لاگو ہوں گی جن کی رسید 30 جون 2018ء کے بعد کی ہے۔ اس کے باوجود اضافی فیچرز کی قیمتیں وہی رہیں گی۔ ہونڈا کا نظرثانی شدہ نرخ نامہ یہ ہے۔

ماڈلز موجودہ قیمت – پاکستانی روپے نئی قیمتیں – پاکستانی روپے فرق – پاکستانی روپے
ہونڈا سوک 1.8L I-VTEC 2499000 2599000 100000
ہونڈا سوک 1.8L اوریل 2649000 2749000 100000
ہونڈا سٹی 1.3L MT 1699000 1729000 30000
ہونڈا سٹی 1.3L AT 1839000 1869000 30000
ہونڈا سٹی 1.5L MT 1759000 1789000 30000
ہونڈا سٹی 1.5L AT 1899000 1929000 30000
ہونڈا سٹی 1.5L ایسپائر MT 1839000 1939000 50000
ہونڈا سٹی 1.5L ایسپائر AT 2029000 2079000 50000
ہونڈا BR-V MT 2099000 2134000 35000
ہونڈا BR-V CVT 2249000 2284000 35000
ہونڈا BR-V S CVT 2349000 2384000 35000

مندرجہ بالا تمام قیمتیں ایکس-فیکٹری ہیں۔

چند روز قبل اٹلس ہونڈا اپنی موٹر سائیکلوں کی قیمتوں میں بھی 2000 روپے تک کا اضافہ بھی کرچکا ہے۔

ہونڈا اپنی گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافہ کرنے والا پہلا ادارہ نہیں، درحقیقت یہ صرف ہونڈا ہی اپنی گاڑیوں کے نرخوں میں چوتھی بار اضافہ کرچکا ہے۔ دیگر ادارے مثلاً ٹویوٹا، پاک سوزوکی اور الحاج فا بھی اپنی گاڑیوں کی قیمت میں بڑا اضافہ کر چکے ہیں۔

محتاط اندازوں کے مقابلے امریکی ڈالر 130 روپے کی زیادہ سے زیادہ قیمت تک جائے گا۔ اس لیے یہ دیکھنا حیران کن نہ ہوگا کہ سال 2018ء کے اختتام تک قیمتوں میں کم از کم ایک یا دو مرتبہ مزید اضافہ ہو۔ نیا مالی سال اضافی قیمتوں کے ساتھ شروع ہوا ہے، اب دیکھنا یہ ہے کہ باقی سال کیا لاتا ہے۔

تب تک کے لیے تازہ ترین آٹو نیوز کے لیے PakWheels.com پر آتے رہیے۔


Top