بجلی سے چلنے والی ہونڈا سُپر کب موٹر سائیکل 2018 میں پیش کی جائے گی

Honda Super Cub

جس طرح فورڈ ماڈل T اور ووکس ویگن بیٹل کو گاڑیوں میں ایک نمایاں تاریخی حیثیت حاصل رہی ہے بالکل ویسے ہی ہونڈا سُپر کب کو دنیا بھر کی موٹر سائیکلوں میں قابل ذکر مقام حاصل ہے۔ 1958 میں پیش کیے جانے کے بعد سے ہونڈا 8 کروڑ 7 لاکھ سے زائد سُپر کب فروخت کرچکا ہے۔ اب جاپانی ادارہ اسے جدید تقاضوں کے مطابق ڈھال کر ایک بار پھر پیش کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔ سال 2009 میں ہونڈا (Honda) نے الیکٹرک وہیکل- کب (EV-cub) کا تصور پیش کیا تھا جو آج سے دہائیوں قبل پیش کی جانے والی ہونڈا سُپر کب کے مشابہ تھا۔

1958 Honda Super Cub

1958 میں پیش کی جانے والی ہونڈا سپر کب

اس ضمن میں ہونڈا کے نمائندے نے کہا کہ گزشتہ 50 سالوں کے دوران انسانی جسم میں کوئی بڑی تبدیلی نہیں دیکھی گئی اور سُپر کب کے پرزوں کا سائز، شکل اور پوزیشن چونکہ ایک دوسرے کے مطابق ہیں اس لیے سُپر کب کا پرانا ڈیزائن ہی برقرار رکھا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ہونڈا نیوی: بھارت میں تیار ہونے والی پہلی ہونڈا موٹر سائیکل متعارف

اب ایسا محسوس ہوتا ہے کہ EV-Cub پر کام کافی تیزی سے جاری ہے کیوں کہ ہونڈا نے گزشتہ ہفتے یوکوہاما میں آٹوموٹیو انجینئرنگ ایکسپوزیشن 2016 میں ایک بار پھر ہونڈا EV-Cub کو پیش کیا ہے۔ ہونڈا نے یقین دہانی کروائی ہے کہ EV-Cub میں لیتھیم بیٹریز استعمال کی گئی ہیں۔ ان بیٹریز کو موٹر سائیکل سے علیحدہ کر کے عام گھریلو پلگ سے بھی چارج کیا جاسکے گا۔ ایک بار مکمل چارجنگ کے بعد یہ موٹرسائیکل 50 کلومیٹر تک سفر کرسکے گی۔ ہونڈا کی جانب سے EV-Cub کی پیمائش بھی پیش کردی گئی جس کی تفصیلات درج ذیل ہیں:
لمبائی: 1840 ملی میٹر (72.44 انچ)
چوڑائی: 670 ملی میٹر (26.38 انچ)
اونچائی: 1015 ملی میٹر (39.96 انچ)

ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے ہونڈا نے کہا کہ وہ بجلی سے چلنے والی اس موٹر سائیکل کو سال 2018 تک جاپان اور جنوبی ایشیائی مارکیٹ میں پیش کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ گو کہ جنوبی ایشیائی ممالک میں پاکستان بھی شامل ہے تاہم اب تک یہاں برقی اسکوٹر کا رجحان فروغ نہیں پا سکا اس لیے یہ کہنا قبل از وقت ہوگا کہ ہونڈا EV-Cub کو پاکستان میں پیش کرنے کا فیصلہ کرے گا یا نہیں۔

Adan Ali

Adan is a Tribe Leader at Drive Tribe, who writes to share his passion for cars, culture and gadgetry through words. So far his writings and contributions have been able to make their way to media outlets like PakWheels and Dawn. Reach out to him by tweeting @adanali12

Top