ہیونڈائی آئیونِک 2017: ٹویوٹا پریوس کی اجارہ داری کو کھلا چیلنج!

ioniq-a-leap-forward-for-hybrid-vehicles-3-1

ہر کار ساز اداراہ ٹویوٹا پریوس جیسی مقبولیت چاہتا ہےلیکن حقیقت یہ ہے کہ ہر گاڑی پریوس ہو نہیں سکتی ہے۔ اس کے باوجود ہیونڈائی کی جانب سے اس ضمن میں تازہ ترین کوششیں دیکھ کر لگتا ہے کہ وہ جاپانی کار ساز اداروں کا مقابلہ کرنے کے لیے بہت سنجیدگی سے کام کر رہا ہے۔ ہیونڈائی کی حال ہی میں پیش کردہ جدید گاڑیاں گو کہ جاپانی اداروں کے معیار سے میل نہیں کھاتیں لیکن یہ احساس ضرور دلوادتی ہیں کہ جنوبی کوریا کا یہ ادارہ بہت جلد دنیا بھر میں اپنی صلاحیتوں کو منوا لے گا۔ ہیونڈائی آئیونِک 2017 کی پیش کش بھی اسی سنگ میل کی جانب اٹھتا ہوا ایک قدم ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ٹویوٹا پریوس کی ممکنہ حریف ہیونڈائی آئیونِک کی تصویری جھلکیاں

لیکن سوال یہ ہے کہ آیا ہیونڈائی واقعی ٹویوٹا کو ٹکر دے پائے گا؟ جواب جاننے کے لیے براہ راست اہم ترین نقطے پر بات آتے ہیں۔ ہیونڈائی کا کہنا ہے کہ امریکہ میں آئیونِک 53 میل فی گیلن فراہم کرے گی جو 22.53 کلومیٹر فی لیٹر کے مساوی ہے۔ دوسری طرف ٹویوٹا پریوس 56 میل فی گیلن فراہم کرتی ہے جو 23.81 کلومیٹر فی لیٹر کے برابر ہے۔ ہیونڈائی آئیونِک میں 1600 سی سی اتکینسون-سائیکل انجن لگایا گیا ہے جو 40 فیصد تھرمل ایفیشنسی (thermal efficiency) پر چلتا ہے۔ ہیونڈائی کاپا انجن 104 ہارس پاور قوت فراہم کرتا ہے جبکہ 43 ہارس پاور کی طاقت بجلی سے پیدا ہوتی ہے۔ یہ رفتار چھ-اسپیڈ ڈیول کلچ ٹرانسمیشن کی طرف منتقل ہوتی ہے جس کا ڈیزائن ہائبرڈ گاڑیوں میں لگائے گئے گیئرباکس کی طرح بہترین ہے۔

اپنی پسندیدہ گاڑی پاکستان منگوانے کے لیے یہاں کلک کریں

ٹویوٹا پریوس کو پاکستان میں بے پناہ مقبولیت حاصل ہوچکی ہے۔ باوجودیکہ انڈس موٹرز نئی ٹویوٹا پریوس پاکستان میں پیش کر رہا ہے، لوگ جاپان سے تھوڑی استعمال شدہ پریوس درآمد کرنے میں زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں۔ اس کی بنیادی وجہ قیمت کا بہت بڑا فرق ہے۔ انڈس موٹرز سے نئی پریوس جتنی قیمت میں آئے گی اتنے میں آپ دو استعمال شدہ پریوس جاپان سے منگوا سکتے ہیں۔ ہیونڈائی آئیونِک کی عالمی سطح پر متعارف کروائے جانے میں ابھی تھوڑا وقت باقی ہے۔ ایسے میں اس کی پاکستانی مارکیٹ میں جلد آمد کے امکانات بھی کم ہی نظر آتے ہیں۔

Baber K. Khan

An auto enthusiast trying to bring car media mainstream.

Top