انڈس موٹر کمپنی نے پاکستان میں4  بلین روپے کی سرمایہ کاری کے پلان کا اظہار کردیا

Toyota Corolla 2015 in Pakistan

پاکستان کی صف اول کی کارساز انڈس موٹر کمپنی نے ہفتہ کو انکشاف کیا کہ وہ رواں سال اپنی پروڈکشن کی صلاحیت کو 54800 یونٹ سے بڑھا کر 60000 یونٹ کرنے کے لیے 4 بلین روپے کی سرمایہ کاری کا ارادہ رکھتے ہیں۔ زرائع کے مطابق فی الحال کمپنی چھٹیوں کے دنوں میں بھی کام کر کے ہر سال 65000 یونٹ بنا رہی ہے۔ 2018 تک اگر کمپنی اپنی پروڈکشن میں پلان کے مطابق اضافہ کر لیتی ہے تو یہ چھٹیوں میں بھی کام کر کے ہر سال 75000 یونٹ بنانےکے قابل ہوجائے گی۔

دنیا کے سب سے زیادہ گنجان آبادی والے علاقوں میں شامل ہونے کے باوجود پاکستان میں موٹرائیزیشن میں اتنی تیزی دیکھنے کو نہیں ملتی۔ رپورٹس کے مطابق اس وقت پاکستان میں ہر 1000 میں سے صرف 16 لوگوں کے پاس گاڑیاں ہیں اور 2020 تک یہ تعداد 1000 لوگوں میں سے 20 افراد پاس گاڑی ہونے تک ہی پہنچے گی۔ پچھلے چند سالوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم کہہ سکتے ہیں کہ مقامی آٹو موبائل انڈسٹری کی تیزی سے ترقی کی وجہ سے ہم امید کرسکتے ہیں کہ یہ اب 225000 یونٹ کی بجائے 2025 تک 500000 یونٹ کا حدف حاصل کر لے گی۔ اس تیزی سے ترقی کرتے ہوئے ماحول میں مطابقت رکھنے کے لیے انڈس موٹر کمپنی اپنی پروڈکشن صلاحیت کو 80000 یونٹ تک بڑھائے گی اور پھر وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اسے 100000 تک لے جائے گی۔ اس وقت کمپنی مقامی آٹو مارکیٹ میں 28 فیصد شیئرز رکھتی ہے اور اس اقدام سے کمپنی مقامی مارکیٹ میں زیادہ بڑا حصہ لینے میں کامیاب ہوجائے گی۔ کمپنی کی پروڈکشن صلاحیت میں اضافہ کے ساتھ ساتھ اس اقدام سے 400 براہ راست اور 4000 ان ڈائیریکٹ نوکریاں بھی آئیں گی۔

 

Top