IMC ممکنہ طور پر اگلے سال اکتوبر میں پاکستان میں 2019ء ویوس پیش کرے گا


ٹویوٹا IMC پاکستان میں اپنے صارفین کے لیے 2018ء کے آغاز سے اب تک نئے ڈیزل انجنوں کے ساتھ ریوو اور فورچیونر پیش کر چکا ہے۔ اس نے ٹویوٹا رش اور مکمل نئی کرولا XLi آٹومیٹک بھی پیش کی اور آئندہ مہینوں میں نئے آنے والے اداروں سے نمٹنے کے لیے آٹو انڈسٹری میں کئی ملینز کی سرمایہ کاری کی منصوبہ بندی کر رہاہے۔

نئے آٹومیکرز کی آمد کا ادراک کرتے ہوئے مینوفیکچرر نئے انتخاب پیش کرکے اپنی گاڑیوں کی لائن اپ کی تشکیلِ نو کر رہا ہے۔ ہمارے معتبر ذرائع کے مطابق ادرہ ممکنہ طور پر GLi کو نئی ٹویوٹا ویوس 2019ء سے تبدیل کر سکتا ہے۔ ہمارے ذرائع کے مطابق کمپنی کی جانب سے نئی گاڑی کی لانچ ممکنہ طور پر 2019ء کی چوتھی سہ ماہی میں ممکن ہے، پہلے یہ بتایا گیا تھا کہ ادارہ نئی گاڑیاں پہلی سہ ماہی میں پیش کرے گا۔

واضح رہے کہ PakWheels.com سے بات کرتے ہوئے ٹویوٹا کے ایک وینڈر نے انکشاف کیا کہ ادارہ نومبر 2018ء سے ویوس کے پرزے بنانے کی ہدایات دے چکا ہے۔ گاڑی چین اور بھارت سمیت مختلف ممالک میں پہلے سے دستیاب ہے۔

توقع ہے کہ پاکستان میں ٹویوٹا ویوس ڈوئل VVT-I انجن کے ساتھ 1.3 لیٹر DOHC 16 والو میں پیش کی جائے گی جو مینوئل یا آٹو ٹرانسمیشن سے لیس ہوگی۔ 2019ء ٹویوٹا ویوس کے علاوہ پاک سوزوکی کی جانب سے بھی 660cc انجن کی حامل آلٹو 2019ء پیش کرنا متوقع ہے۔ نئی سوزوکی آلٹو کے بارے میں پیشن گوئی کی جا رہی ہے کہ یہ 2019ء کی پہلی سہ ماہی میں فروخت کے لیے پیش ہوگی۔ ادارے میں پھیلی خبروں کے مطابق سوزوکی ٹیسٹنگ کے لیے پہلے ہی نئی آلٹو 2019ء  کے تقریباً 25 یونٹ بنا چکا ہے اور ڈسپلے کے لیے مزید 20 سے 25 یونٹ تیار کیے جا رہے ہیں۔

اپنی رائے نیچے تبصروں میں پیش کیجیے۔


Top