درآمد شدہ ہیچ بیک خریدنے سے پہلے 3 مقامی تیار شدہ گاڑیوں ضرور دیکھیں

swift-fawv2-wagonr

شہروں میں ٹریفک کی صورتحال بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے۔ اس پر قابو پانے کے لیے نئی شاہراہوں کی تعمیر تو ایک طرف پہلے سے موجود خستہ حال سڑکوں تک کو ٹھیک نہیں کیا جارہا۔ پھر عوامی ٹرانسپورٹ کے انتہائی دگرگوں حالات کے باعث عوام کی اکثریت ان پر سفر کرنا پسند نہیں کرتی۔ پھر مختلف اداروں کی جانب سے آسان اقساط پر گاڑیوں کی فراہمی کے باعث بہت افراد موٹر سائیکل کی جگہ گاڑی خریدچکے ہیں۔ یوں چھوٹی گاڑیوں کی فروخت میں قابل ذکر اضافہ ہورہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کیوں نہ بڑی سیڈان کی جگہ چھوٹی گاڑیاں آزمائیں؟ وقت اور پیسے دونوں بچائیں!

کم و بیش پچھلے دس سالوں میں بغیر ڈگی والی چھوٹی گاڑیاں، جنہیں ہیچ بیک بھی کہا جاتا ہے، کی مقبولیت میں کافی تیزی دیکھنے میں آرہی ہے۔ دیگر طرز کی گاڑیوں جیسا کہ سیڈان اور جیپ کے برعکس ہیچ بیک قیمت میں کم ہوتی ہیں۔ نیز انہیں چلانا اور مختصر جگہ پر کھڑا کرنا بھی زیادہ سہل ہے۔ اس مضمون میں ہم مقامی کار ساز اداروں کی تیار کردہ تین ہیچ بیکس کے بارے میں بات کریں گے۔ درآمد شدہ گاڑیوں میں دلچسپی رکھنے والوں کو پاکستان میں تیار ہونے والی ان گاڑیوں پر ضرور غور کرنا چاہیے۔

سوزوکی سوِفٹ (Suzuki Swift)

چھوٹی گاڑیوں کی جب بھی بات تو ذہن میں پہلا نام سوزوکی کا ہی آتا ہے۔ یہ معاملہ صرف میرے اور آپ کے ساتھ نہیں بلکہ سوزوکی موٹرز دنیا بھر میں اپنی چھوٹی گاڑیوں ہی کی وجہ سے مشہور ہے۔ گو کہ یہاں سوزوکی کی تیار شدہ گاڑیوں میں کافی خامیاں ہیں لیکن پھر بھی یہ بہرحال سب سے مقبول کار ساز ادارہ ہے۔ پاک سوزوکی نے سال 2010 میں سوِفٹ کے نام سے ایک نئی ہیچ بیک پاکستان میں متعارف کروائی۔ یہ پانچ دروازوں والی اگلے پہیوں کی قوت سے چلنے والی گاڑی ہے جو گزشتہ 6 سال سے پاکستان میں تیار کی جارہی ہے۔

سوزوکی سوِفٹ میں 1328cc انجن شامل ہے جسے 5-اسپیڈ مینوئل اور 4-اسپیڈ آٹومیٹک گیئر کے ساتھ پیش کیا جاتا ہے۔ اس کے تین ماڈلز بنام DX، DLX اور DLX آٹومیٹک دستیاب ہیں۔ ایک ہیچ بیک ہونے کے باوجود یہ چوڑائی میں کافی پھیلی ہوئی ہے ۔ اضافی چوڑائی سے گاڑی کے اندر کافی گنجائش مل جاتی ہے اور پچھلی نشست پر تین افراد باآسانی بیٹھ سکتے ہیں۔سوزوکی سوِفٹ کے بہترین ماڈل یعنی DLX آٹومیٹک میں الائے رمز، دھند میں نظر آنے والی خصوصی لائٹس (fog lights) ، برقی ڈور مررز، دروازوں کے ریموٹ کنٹرول لاک، ڈبل ڈن مع چار اسپیکرز وغیرہ شامل ہیں۔ اس کے علاوہ سوِفٹ میں ABS اور EBD بھی دیا گیا ہے۔

آسان ماہانہ اقساط پر سوزوکی سوِفٹ حاصل کرنے کے لیے یہاں کلک کریں

گو کہ آغاز میں سوزوکی سوِفٹ کا پاکستان میں زیادہ پزیرائی حاصل نہ ہوئی تاہم مالی سال 2011-12 کے دوران سوزوکی نے 7000 سوِفٹ فروخت کر کے اسے ایک نئی بلندی پر پہنچا دیا۔ بعد ازاں آنے والے سالوں میں اس کی فروخت میں بتدریج کمی دیکھی جارہی ہے جس کی بنیادی وجہ عالمی سطح پر نئی سوِفٹ کی آمد ہے۔ پاکستان میں بھی لوگوں کا خیال ہے کہ سِوک کی نئی جنریشن متعارف کروائی جانی چاہیے۔ 1300cc انجن کی حامل پہلی جنریشن سوزوکی سوِفٹ پاکستان میں ان قیمت پر فروخت کی جارہی ہے:
سوزوکی سوِفٹ DX – قیمت: 12,21,000 روپے
سوزوکی سوِفٹ DLX – قیمت: 12,97,000 روپے
سوزوکی سوِفٹ DLX آٹو میٹک – قیمت: 14,33,000 روپے

فا -وی2 (FAW V2)

چند افراد کے لیے شاید اس گاڑی کا نام کچھ نیا ہو لیکن یقین جانیے کہ FAW V2 پاکستان میں دستیاب بہترین ہیچ بیک میں سے ایک ہے۔ الحاج FAW موٹرز نے پہلی بار اسے 2013 میں متعارف کروایا تھا۔ یہ بھی اگلے پہیوں کی قوت سے چلنے والی پانچ دروازوں والی گاڑی لیکن اس کا صرف ایک ہی ماڈل پاکستان میں تیار کیا جارہا ہے۔

فا-وی2 میں 1298cc انجن شامل ہے جسے 5-اسپیڈ مینوئل گیئر باکس سے منسلک کیا گیا ہے۔ درحقیقت V2 چینی کار ساز ادارے FAW کی وہ گاڑی ہے جو ٹویوٹا وٹز کی پہلی جنریشن سے اخذ کی گئی ہے البتہ اس کا انداز نسبتاً مختلف ہے۔ یہ بتانے کا مقصد ان لوگوں کو اعتماد فراہم کرنا ہے کہ جو اس گاڑی کی خریداری میں کسی قسم کے شک و شبہ میں مبتلا ہوجاتے ہیں۔ یہ چونکہ نئی گاڑی ہے اس لیے یہاں اسے ویسی مقبولیت حاصل نہیں کہ جیسی سوزوکی گاڑیوں کو حاصل ہے۔ گو کہ اس کی تیاری کے حوالے سے چند ایک شکایت دیکھی گئی ہیں لیکن اب تک جتنے بھی لوگوں نے FAW V2 خریدی ہیں انہیں کبھی کوئی بڑی مسئلہ درپیش نہیں ہوا۔

یہ بھی پڑھیں: 10 سے 15 سال بعد آپ کی درآمد شدہ گاڑی کا کیا ہوگا؟

FAW V2 Pakistan

FAW V2 Pakistan

اگر اس کا موازنہ سوزوکی سوِفٹ سے کریں تو FAW V2 اونچائی اور لمبائی میں سوِفٹ سے زیادہ بڑی ہے لیکن چوڑائی میں 10 ملی میٹر چھوٹی ہے۔ چونکہ یہ فرق اتنا زیادہ نہیں اس لیے V2 میں بھی آپ باآسانی تین افراد کو پیچھے بٹھا سکتے ہیں۔ پاکستان میں دستیاب اس کا واحد ماڈل VCT-I ہے جو 10,49,000 روپے میں دستیاب ہے۔ اس میں کئی جدید سہولیات موجود ہیں جن میں ABS، ریموٹ کنٹرول وغیرہ بھی شامل ہے۔ اگر آپ سوزوکی گاڑیاں پسند نہیں کرتے تو ضرور بالضرور اس گاڑی کو خریدنے پر غور کرنا چاہیے۔

سوزوکی ویگن آر (Suzuki WagonR)

یہ بھی چھوٹی گاڑیوں کے شعبے کے بے تاج بادشاہ یعنی سوزوکی ہی کی ایک منفرد ہیچ بیک ہے۔ گو کہ یہ گاڑی سوزوکی سوِفٹ سے قدرے چھوٹی اور کم قیمت ہے لیکن اولذکر دونوں ہیچ بیک کی طرح اگلے پہیوں کی قوت سے چلنے اور پانچ دروازوں ہی کی حامل ہے۔ پاک سوزوکی نے ویگن آر کو 2014 میں متعارف کروایا تھا۔ یوں یہ سوِفٹ اور V2 دونوں ہی سے نئی کہی جاسکتی ہے۔

ابتداء میں پاک سوزوکی نے ویگن آر کے تین ماڈل VX، VXR اور VXL متعارف کروائے تھے تاہم بعد ازاں VX ماڈل ختم کردیا گیا۔ پاکستان میں تیار کی جانے والی سوزوکی ویگن آر کے ماڈل اور قیمتیں یہ ہیں:
سوزوکی ویگن آر VXR – قیمت: 9,79,000 روپے
سوزوکی ویگن آر VXL – قیمت: 10,19,000 روپے

سوزوکی ویگن آر میں 998cc کا انجن موجود ہے۔ البتہ سوزوکی سوِفٹ اور V2 میں شامل 4-سلینڈر انجن کے برعکس ویگن آر میں 3-سلینڈر انجن شامل ہے۔ ویگن آر میں صرف 5-مینوئل گیئر یہ دیا جاتا ہے۔ میرے خیال سے پاک سوزوکی کو اسے آٹومیٹک گیئر باکس کے ساتھ بھی متعارف کروانا چاہیے کیوں کہ بہت سے لوگ جدید گیئر باکس کو ترجیح دیتے ہیں اور پاک سوزوکی ان ممکنہ خریداروں کو کھو رہی ہے۔

ویگن آر کے بہترین ماڈل یعنی VXL میں ریموٹ سے دروازے کھولنے کی سہولت اور برقی پاور اسٹیئرنگ بھی دیا گیا ہے تاہم اوپر ذکر کی گئی دونوں ہیچ بیک میں شامل چند خصوصیات شامل نہیں ہے۔ مثلاً ویگن آر مین صرف اگلی جانب پاور ونڈوز ہیں اور سائیڈ مررز بھی برقی کنٹرول والے نہیں ہیں۔ اس کے علاوہ ویگن آر میں ABS اور ایئربیگز بھی شامل نہیں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: کیا جاپانی ویگن آر واقعی پاکستانی ویگن آر سے زیادہ اچھی ہے؟

شاید آپ سوچ رہے ہوں گے کہ پاکستان میں تو سوزوکی مہران (Mehran) اور سوزوکی کلٹس (Cultus) بھی ہیں۔ لیکن حقیقت میں یہ دونوں ہی گاڑیاں ٹیکنالوجی کے اعتبارے سے بہت پرانی ہوچکی ہیں اور سوزوکی سوِفٹ، FAW V2 یا پھر سوزوکی ویگن آر سے ان کا کوئی مقابلہ نہیں ہے۔ امید ہے کہ قارئین کو ہماری یہ کاوش پسند آئے گی اور وہ درآمد شدہ ہیچ بیک خریدنے سے پہلے ایک بار اپنے ہی ملک میں تیار ہونے والی گاڑیوں پر بھی غور کریں گے۔

  • blankMind

    how about regular maintenance of FAW V2? I mean air filter..oil filter etc prices..other spare parts availability…then can it be easily repaired by the car mechanic in the market ?

Top