اسلام آباد ٹریفک پولیس ای-چالان متعارف کروا رہی ہے


اسلام آباد ٹریفک پولیس نے ڈیجیٹل دنیا میں قدم رکھنے کا فیصلہ کرتے ہوئے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے موٹر سائیکل سواروں کو ای-چالان جاری کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اس ضمن میں نیشنل بنک آف پاکستان (NBP) اور ٹریفک پولیس کے درمیان 8 جنوری 2018ء کو انسپکٹر جنرل کے آفس میں مفاہمت کی یادداشت (Mou) پر بھی دستخط کیے گئے ہیں۔ جدید چالان کا متوقع نظام ٹریفک پولیس اہلکاروں کو اپنے اسمارٹ فون سے چالان کاٹنے کی سہولت فراہم کرے گا۔

علاوہ ازیں یہ نظام ان مسافروں کو بھی سہولت فراہم کرے گا جن کے خلاف چالان کاٹے جائیں گے۔ مسافروں کو جرمانے کی ادائیگی کے لیے لمبی قطاروں میں کھڑا ہونا نہیں پڑے گا بلکہ وہ جڑواں شہروں اسلام آباد و راولپنڈی میں کسی بھی ٹیلی کام کمپنی کے دفتر پر فوری ادائیگی کر سکیں گے۔ جرمانے کی ادائیگی پر کاغذی رسید کی بجائے برقی رسید بذریعہ ایس ایم ایس فراہم کی جائے گی۔

اسلام آباد ٹریفک پولیس کے مطابق اس جدید نظام کو اختیار کرنے کا مقصد چالان کاٹنے اور جرمانہ وصول کرنے کے نظام میں شفافیت کو یقینی بنانا ہے۔ اس سے شہر میں سینکڑوں مسافروں کو آسانی حاصل ہو گی اور جرمانے جمع کروانے کی پریشانیوں سے نجات مل جائے گی۔ حکام نے مزید بتایا کہ متاثرہ فرد کو بر وقت ٹکٹ جاری ہونے سے ٹریفک وارڈن اور مسافر دونوں کا قیمتی وقت بچایا جا سکے گا۔

IGP Islamabad Dr Sultan Azam Temuri speaking about the latest digital facility in the state capital

آئی جی پولیس سلطان اعظم نے اس حوالے سے کہا کہ “سیف سٹی پروجیکٹ کے تحت ہم ڈیجیٹل سہولیات کا دائرہ مزید وسیع کرنے کی بھر پور کوشش کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ای-ٹکٹ متعارف کروانے کا مقصد ٹریفک حکام کے ساتھ ساتھ عام عوام کو بھی سہولت فراہم کرنا ہے۔

اسلام آباد ٹریفک پولیس حکام نے بتایا کہ یہ دارالحکومت میں پولیس اہلکاروں کی مدد کے لیے متعارف کروائی جانے والی متعدد ڈیجیٹل سہولیات میں سے ایک ہے۔ نیشنل بینک آف پاکستان کی جانب سے ٹریفک پولیس اہلکاروں کو اس نظام کے استعمال کی تربیت فراہم کی جائے گی۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top