لاہور ہائی کورٹ نے پائپوں کے ذریعے گاڑیاں دھونے پر پابندی لگا دی

Car washing tips

منگل 18 دسمبر 2018ء کو لاہور ہائی کورٹ (LHC) نے پنجاب میں پائپوں کے ذریعے گاڑیاں دھونے پر پابندی عائد کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق عدالت نے اپنے تحریری حکم نامے میں صوبے میں پانی کے تحفظ کی خاطر گاڑیاں دھونے کے لیے پائپوں کے بجائے بالٹی میں پانی ڈال کر استعمال کرنے کا حکم دیا ہے۔ یہ حکم لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس شاہد کریم نے اس مسئلے کی جانب نشاندہی کرنے والی ایک پٹیشن کے فیصلے میں دیا۔

عدالت نے حکم دیا ہے کہ لاہور ڈیولپمنٹ اتھارٹی اور واٹر اینڈ سینی ٹیشن ایجنسی (WASA) سروس اسٹیشنوں پر مکمل پابندی عائد کریں۔ نہ صرف یہ کہ سروس اسٹیشنوں پر بلکہ گھروں پر بھی گاڑیاں دھونے کے لیے پائپوں کے استعمال پر پابندی لگا دی گئی ہے۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں زور دیا کہ عوام کو اس پابندی سے آگاہ کرنے کے لیے اقدامات فوری طور پر اٹھائے جانے چاہئیں۔ مزید برآں، حکومتِ پنجاب عدالت کے احکامات کی مکمل پیروی کو یقینی بنائے اور اس حکم پر ہونے والی پیشرفت کے حوالے سے اتھارٹی کو آگاہ کرے۔

قبل ازیں جمعرات 29 نومبر 2018ء کو لاہور ہائی کورٹ نے تمام ایسے سروس اسٹیشنوں کو معطل کرنے کا حکم جاری کیا تھا جو مناسب ری سائیکل سسٹم کی تنصیب کے بغیر کام کر رہے ہیں۔

اس حکم کے بارے میں آپ کیا سمجھتے ہیں، ذیل میں تبصروں میں بتائیں۔


PakWheels iOS App App Store Android

My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top