لاہور ای ٹکٹنگ زون بننے جا رہا ہے

1284620-image-1483559733-472-640x480

انسپکٹر جنرل پنجاب پولیس کیپٹن(ریٹائرڈ) عثمان خٹک کی سربراہی میں ہونے والی ایک میٹنگ میں اس بات کی تصدیق کی گئی کہ لاہور ٹکٹنگ پروجیکٹ 1 ماہ میں مکمل کر لیا جائے گا۔ انٹیگریٹڈ کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر لاہور میں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے عثمان خٹک کا کہنا تھا کہ ای-ٹکٹنگ ٹریفک قوانین کی خلاف ورزیوں کی نگرانی کرنے کا ایک قابل تحسین منصوبہ ہے جس کے زریعے شہریوں کو درپیش ٹریفک مسائل کا ازالہ کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے اس پورے پروجیکٹ کے مکمل نفاز کو یقینی بنانے کا حکم بھی صادر فرمایا۔

ابتدائی طور پر، ای-چالان ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والی ان گاڑیوں کو جاری کیے جائیں گے جن کی وہیکل رجسٹریشن شناختی کارڈ کے مطابق ہوگی۔ اسی میٹنگ میں انسپکٹر جنرل پولیس نے ٹریفک پولیس کو اس بات پر ابھارا کہ وہ سیف سٹی پروجیکٹ کے ساتھ پورا تعاون کریں تاکہ چالان سسٹم کو بہترین بنایا جاسکے۔ اس موقع پر انسپکٹر جنرل پولیس نے چیف ٹریفک آفیسر رائے اعجاز اور سیف سٹی پروجیکٹ کے پروجیکٹ ڈائریکٹر کو ہدایت کی کہ وہ زاتی طور پر اس سارے منصوبے کی نگرانی کریں تاکہ اس کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جاسکے۔

ایم ڈی لاہور سیف سٹی پروجیکٹ علی عامر ملک نے آئی جی پی کو بتایا کہ آپٹیکل فائبر کی تنصیب آخری مراحل میں ہےاور موٹر وے ٹول پلازہ پر کیمرے نصب کیے جا رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کیمروں کے زریعے لاہور میں آنے اور جانے والی ٹریفک کی بہتر نگرانی کی جاسکے گی۔

اسی میٹنگ میں ڈی آئی جی ٹریفک پولیس پنجاب اور سی ٹی او لاہور نے بتایا کہ ٹریفک سے متعلق آگاہی کے لیے 9 ڈیجیٹل سائن بورڈ مخصوص 5 شاہراہوں پر نصب کیے جائیں گے۔ ٹریفک پولیس وارڈنز کا معیار بلند کرنے کے لیے ٹریننگ کورسز پر بھی اس میٹنگ میں بحث کی گئی۔

 

Top