لاہور ٹریفک پولیس موٹر سائیکل سواروں میں مفت ہیلمٹ تقسیم کرتی ہوئی

arai-helmet

ہفتہ 28 جولائی 2018ء کو لاہور ٹریفک پولیس نے “ہیلمٹ پہنیں، محفوظ سفر کریں” مہم کا آغاز کیا تاکہ سیفٹی کے حوالے سے شعور اور سڑکوں پر موٹر سائیکل چلاتے ہوئے ہیلمٹ کے استعمال کی اہمیت اجاگر کی جائے۔

پاکستان میں مقامی حکام موٹر سائیکل سواروں کو اپنی اور دیگر لوگوں کی جانیں خطرے میں ڈالنے سے روکنے کے لیے ہیلمٹ پہننے کی ترغیب اور تربیت دینے کے لیے قدم اٹھا رہے ہیں۔ اسی طرح لاہور ٹریفک پولیس نے ایک مہم شروع کی اور لبرٹی چوک پر مقامی موٹر سائیکل سواروں میں ہیلمٹس تقسیم کیے۔

ٹریفک پولیس کے مطابق ابتدائی مرحلے میں 2,000 ہیلمٹس مفت تقسیم کیے جائیں گے۔

lahore traffic police

حادثے کے بعد موٹر سائیکل سواروں کی اموات کا سب سے بڑا سبب ہیلمٹ نہ پہننا ہے اور یہی وجہ ہے کہ حکام اس معاملے کو سنجیدہ لے کر مفت ہیلمٹ فراہم کر رہے ہیں۔

یہ منصوبہ خود موٹر سائیکل سواروں کے تعاون کے کبھی کامیاب نہیں ہوگا۔ اس لیے یاد رکھیں کہ ہیلمٹ پہننا ہے اور یوں کسی بھی ناخوشگوار حالت میں خود کو بچانا ہے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیف ٹریفک آفس کیپٹن (ر) لیاقت علی ملک نے زور کہ موٹر سائیکل چلاتے ہوئے ہیلمٹ پہننا عام قانون ہے اور جو بھی اس قانون کو توڑے گا اس کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگست کے دوسرے ہفتے کے بعد موٹر سائیکل سواروں کو بغیر ہیلمٹ کے لاہور کی سڑکوں پر آنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ زندگی قیمتی ہے اس لیے اس کی حفاظت کیجیے، انہوں نے مزید کہا۔

لاہور ٹریفک پولیس کے علاوہ اسلام آباد ٹریفک پولیس نے گزشتہ سال اکتوبر میں سیفٹی کے حوالے سے شعور اجاگر کرنے کی ایک مہم چلائی تھی اور موٹر سائیکل پر پیچھے بیٹھنے والے کے لیے بھی ہیلمٹ لازمی قرار دیا۔

اس بارے میں اپنی رائے نیچے تبصروں میں پیش کیجیے۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top