پاکستان میں ہونڈا بریو کی لانچ میں تاخیر


ملک میں غیر یقینی معاشی صورت حال کی وجہ سے ہونڈا اٹلس کارز پاکستان (HACP) نے ہونڈا بریو متعارف کروانے کا منصوبوں کو روک دیا ہے۔ گزشتہ چند ماہ میں روپے کی قدر میں زبردست کمی بیشی کی وجہ سے آٹو مینوفیکچرر نے 1200cc کا مقامی طور پر اسمبل شدہ ماڈل متعارف کروانے میں احتیاط کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ہونڈا بریو ایک 5-دروازے کی کومپیکٹ ہیچ بیک ہے جو جاپانی آٹومیکر بھارت، جنوبی افریقہ اور تھائی لینڈ جیسی مارکیٹوں میں بجٹ سٹی کار کے طور پر فروخت کرتا ہے۔ یہ ماڈل پہلے اگلے سال پاکستان میں لانچ ہونا متوقع تھا، جس کی وجہ اس کی پاکستانی مارکیٹ سے مطابقت بتائی جاتی تھی۔

جب سے آٹو-پارٹس بنانے والوں کو مقامی طور پر اسمبل ہونے والی گاڑیوں کے پرزہ جات کے بلوپرنٹس دیے گئے، جو عام طور پر ماڈل کے اجراء سے دو سال قبل دیے جاتے ہیں، آٹو انڈسٹری کو چند ماہ قبل سے اس پیشرفت کے بارے میں جانتی ہے۔ ادارے نے حال ہی میں اپنی ان دستاویز تک رسائی روکی ہے جو منسوخی یا 2019ء میں اجراء کے ابتدائی منصوبوں کو مؤخر کرنے کا اشارہ ہے۔

“معاشی حالات، ڈالر کے مقابلے میں روپے کی غیر یقینی شرح، خام مال پر اضافی ریگولیٹری ڈیوٹیز لگانے کی خبروں وغیرہ نے ادارے کو مجبور کیا ہے کہ وہ اپنے نئے ماڈل کے اجراء کے منصوبوں کو مؤخر کرے۔” وینڈرز نے کہا۔

hatch-2-872

ہونڈا بریو کے بارے میں توقع تھی کہ یہ HACP کے کل پیداواری حجم میں مزید 3000 گاڑیوں کا اضافہ کرتا، عین اس وقت جب عرصہ دراز سے پاکستان کے جمود کے شکار آٹو-سیکٹر میں نئے کھلاڑی داخل ہوتے۔ ہیونڈائی، رینو (رینالٹ) اور کیا اگلے تین سالوں میں متعدد ماڈلز پیش کریں گے جو پاکستانی صارفین کو غیر معمولی ورائٹی پیش کرکے مارکیٹ میں زبردست مقابلے کی فضاء پیدا کر سکتے ہیں۔

“اس (ہونڈا بریو) کا اجراء نہ ہی حتمی ہے اور نہ اسے ختم کیا گیا ہے۔ ابھی اس کی پاکستانی مارکیٹ میں  آمد کو حتمی صورت دینا باقی ہے۔ یہ ابھی منصوبہ بندی کے مرحلے میں ہے۔” ہونڈا اٹلس کے ایک ترجمان نے کہا۔

HACP نے گزشتہ سال پاکستان میں ہونڈا-BRV متعارف کروائی تھی اور فروخت اور حجم میں 13 فیصد اضافے کا لطف اٹھایا اور اپنے معروف سوک اور سٹی ماڈلز کے 42,810 یونٹس فروخت کیے۔

تازہ ترین خبروں کے لیے آتے رہیے PakWheels.com پر۔


Top