478 ہارس پاور کی حامل 4×4² مرسڈیز-بینز G500

mercedes-benz-mansory-g500-4x4-(1)

جب بات ہو برق رفتاری، دلکش انداز اور آف روڈنگ کی تو ذہن ازخود 4×4² مرسڈیز G500 کی طرف جاتا ہے۔ لیکن کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جو اس جیپ نما گاڑی کی رفتار سے مطمئن نظر آتے۔ انہیں میں سے ایک جرمن ادارہ مانصوری (Mansory) بھی ہے۔ جی ہاں یہ وہی ادارہ ہے کہ جس نے 4 پہیوں والی مرسڈیز G-ویگن کو تبدیل کر کے 6 پہیے والا ماڈل تیار کیا تھا۔ اب انہوں نے 4×4² مرسڈیز-بینز G500 کو تختہ مشق بناتے ہوئے اس کی رفتار میں اضافے کا ہدف طے کیا اور وہ اس میں پوری طرح کامیاب بھی ہوگئے۔

یہ بھی پڑھیں: ٹویوٹا تُندرا 10 لاکھ میل چلنے کے باوجود بھی بالکل نئی جیسی حالت!

مانصوری نے 4×4² مرسڈیز G500 کی رفتار مزید بڑھانے کے لیے اس کا وزن گھٹانے کا فیصلہ کیا۔ اور اس مقصد کو حاصل کرنے کے لیے انہوں نے 4×4² مرسڈیز G500 کے بھاری بھرکم حصوں کو ہلکے وزن والے کاربن فائبر سے تبدیل کردیا ہے۔ مانصوری کی تیار کردہ 4×4² مرسڈیز G500 میں بونٹ، ہیڈلائٹ کے اطراف، اگلی گِرل کے علاوہ دروازے کے شیشوں اور ہینڈلز کو بھی کاربن فائبر سے بنایا گیا ہے۔ اس کے علاوہ پہیے کے اوپر موجود wheel arches بھی کاربن فائبر سے بنائے گئے ہیں تاہم انہیں دیکھ کر سوال ذہن میمں آتا ہے کہ کیا واقعی اس حصے کو بھی تبدیل کرنا ضروری تھا؟

بہرحال، جرمن ادارے کی ان کوششوں کا نتیجہ یہ نکلا کہ اب 4000cc ٹون–ٹربو انجن مرسڈیز V8 انجن تقریباً 62 ہارس پاور اضافی فراہم کرسکتا ہے۔ یوں اب 4×4² مرسڈیز G500 ناقابل یقین 478 ہارس پاور اور 524 فٹ پاؤنڈ ٹارک کی حامل ہوچکی ہے۔ مانصوری کی یہ محنت بلاشبہ تعریف کے قابل کہی جاسکتی ہے۔ تاہم ایسی گاڑیاں صرف مشہور اور امیر کبیر شخصیات ہی کی قوت خرید میں آتی ہیں۔ دنیا میں شاید ہی کوئی آف روڈ گاڑیاں چلانے کا شوقین فرد ہوگا جو اتنی مہنگی گاڑیوں کو خریدنے کی سکت رکھتا ہو۔

Top