پاکستانیوں کی پسندیدہ ہیچ بیک مٹسوبشی میراج 2016 کا نیا انداز پیش کردیا گیا

mitsubishi-mirage

جاپانی کار ساز ادارے مٹسوبشی نے اپنے مشہور ترین گاڑی میراج 2016 کا نیا انداز (facelift) متعارف کروا دیا ہے۔ مٹسوبشی کی جانب سے میراج کا نام پہلی بار 1978 میں استعمال کیا گیا تھا تاہم 2003 میں اس نام سے گاڑیوں کی تیاری بند کردی گئی۔ بعد ازاں 2012 میں مٹسوبشی نے ایک بار پھر میراج نام سے ہیچ بیک متعارف کروانے کا فیصلہ کیا اور اس کا پہلا نظارہ ٹوکیو موٹر شو 2011 میں کروایا گیا جسے بہت پزیرائی حاصل ہوئی۔

دیگر ممالک کی طرح پاکستان میں بھی درآمد شدہ مٹسوبشی میراج کو کافی مقبولیت حاصل ہے۔ اس کا شمار ان چھوٹی ہیچ بیکس میں کیا جاتا ہے کہ جنہوں نے بہت جلد پاکستانی صارفین کے دلوں میں گھر کرلیا۔ استعمال شدہ جاپانی مٹسوبشی میراج 2013 طویل عرصے تک مقبول ترین درآمد شدہ ہیچ بیک رہی ہے۔ جاپان سے درآمد کی جانے والی مٹسوبشی میراج 3-سلینڈر 1000cc پیٹرول انجن اور CVT گیئر کی حامل ہیں۔ یہ 27.2 کلومیٹر فی لیٹر مسافت فراہم کرسکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: مٹسوبشی میراج 2013 کا تفصیلی جائزہ اور تصاویر

اب مٹسوبشی نے فلپائن میں جاری منیلا انٹرنیشنل آٹو شو 2016 میں اپنی مقبول ہیچ بیک کا نیا انداز پیش کیا ہے۔ گوکہ اسے پہلی بار لاس اینجلس آٹو شو 2015 میں دکھایا گیا تھا لیکن فلپائن میں اس کی زبردست مقبولیت کو دیکھتے ہیں اسے رواں آٹو شو کی بھی زینت بنایا گیا ہے۔ دونوں ہی آٹو شو میں میراج کو 3-سلینڈر 12- والو 1200cc انجن اور 5-اسپیڈ مینوئل یا CVT ٹرانسمیشن کے ساتھ پیش کیا گیا ۔ مٹسوبشی نے آبائی وطن جاپان کے علاوہ تقریباً تمام ہی ممالک میں اسے 1200cc انجن کے ساتھ پیش کردیا ہے۔

مٹسوبشی میراج درآمد کرنے کے لیے یہاں کلک کریں

مٹسوبشی میراج 2016 کے نئے انداز میں تھوڑا بہت جذباتی پن نمایاں ہے۔ مجموعی طور پر نئی میراج پچھلے ماڈلز سے زیادہ خوبصورت اور جدید معلوم ہوتی ہے۔ اس کے ظاہری حصے میں نئی ہیڈ لائٹس اور LED لائٹس کے علاوہ جابجا کروم کا بھی استعمال کیا گیا ہے۔ اندرونی حصے میں بھی معیار کو بہتر بنانے کے لیے عمدہ ساز و سامان استعمال کیا گیا ہے۔

مٹسوبشی (Mitsubishi) تھائی لینڈ میں موجود کارخانے میں نئی میراج گاڑیاں تیار کر کے دنیا بھر بشمول جاپان میں برآمد کر رہی ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ آیا جاپان میں بھی 1200cc انجن کے ساتھ میراج پیش کی جاتی ہے یا نہیں۔ اگر ایسا ہوا تو پھر ہم پاکستان میں بھی مٹسوبشی میراج 2016 کے نئے انداز کو اپنی سڑکوں پر دوڑتا ہوا دیکھ سکیں گے۔

Top