2018 ء میں سب سے زیادہ گوگل کیے گئے کار برانڈز کی فہرست


ہم سالوں تک اپنے پسندیدہ برانڈز کے حق میں دنیا بھر سے لڑ سکتے ہیں اور پھر بھی کسی نتیجے تک نہیں پہنچ سکتے۔

ویگو نامی ایک انشورنس کمپنی نے ایک رپورٹ میں اعداد و شمار مرتب کرکے ایسے مباحثوں کا خاتمہ کرنے کا فیصلہ کیا کہ جس میں دنیا کے ہر ملک کی مقبول ترین گاڑیاں بنانے والی کمپنیوں کی فہرست مرتب کی گئی۔ یہ فہرست دنیا بھر میں آٹوموٹِو صنعت کے حقیقی بڑے کھلاڑیوں کو سمجھنے میں مدد دی۔

ویگو معروف سرچ انجن کے ذریعے سب سے زیادہ گوگل کی گئی گاڑیوں کی فہرست بھی مرتب کی ہے اور اسے ملک کے حساب سے تریب دیا ہے۔ کئی ایسے کاروں کے برانڈز ہیں جنہوں نے اپنی کامیابی سے دنیا کو حیران کیا اور ساتھ ہی کئی ممالک ایسے ہیں جن کے بارے میں ہمیں اندازہ نہ تھا کہ وہ اسٹائلش کاروں سے کتنی محبت کرتے ہیں۔

ٹویوٹا:

ہمیں معلوم ہے کہ ٹویوٹا گاڑیاں بنانے والا دنیا کا سب سے زیادہ معروف اور کامیاب ادارہ ہے لیکن ہمیں کبھی توقع نہ تھی کہ یہ کئی ملکوں بالخصوص امریکا میں ہر کسی کے خوابوں کا محور و مرکز ہوگا۔ جی ہاں، امریکی شہری ٹویوٹا کے عاشق ہیں کیونکہ یہ ملک میں سب سے زیادہ سرچ کیا گیا کار برانڈ ہے۔

کل 56 دیگر ممالک بھی ہیں جن میں سرچ میں ٹویوٹا سرفہرست ہے، جو جاپان کے گاڑیاں بنانے والے اس ادارے کو فہرست میں سب سے اوپر لاتے ہیں۔ ٹویوٹا ماہانہ اوسط سرچز میں سب سے زیادہ تلاش کیا گیا کار برانڈ بھی ہے۔ ٹویوٹا اوسطاً 7.8 ملین سرچز رکھتا ہے جبکہ ہونڈا اور فورڈ اوسطاً ماہانہ 7 ملین اور 6.4 ملین سرچز رکھتے ہیں۔

BMW اور مرسڈیز-بینز:

BMW دوسرے نمبر پر ہے کیونکہ اس مصنوعات کی تلاش میں کُل 25 ممالک کے عوام پیش پیش ہیں۔ مرسڈیز-بینز بہت کم فرق سے تیسرے نمبر پر ہے۔ 23 ممالک کے عوام گاڑیاں بنانے والے اِس جرمن ادارے کے دلدادہ ہیں۔

ٹیسلا:

ہو سکتا ہے آپ کو حیرت ہو کہ آخر ٹیسلا پہلے نمبر پر کیوں نہیں؟ تو ٹیسلا نے حالیہ چند سالوں میں ہلچل تو بہت مچائی ہے لیکن اس کی مقبولیت ابھی ٹویوٹا یا BMW یا مرسڈیز-بینز کی طرح دنیا کے کونے کھدرے میں نہیں پہنچی۔

خلافِ قاعدہ:

دنیا بھر میں کئی حیران کن سرگرمیاں بھی ہوئیں۔ جیسا کہ روس کے باشندے ہیونڈے اور جاپان کے زیادہ تر BMW کی تلاش میں دکھائی دیے۔ پاکستان نے بھی سرچ کی تلاش میں حیران کن نتیجہ دیا کہ جو 2018ء میں زیادہ تر لیمبورگھینی کے پیچھے رہے۔


Top