نسان کی جانب سے ہائبرڈ GTR پیش کرنے کا عندیہ

nissan-r36-gtr-hybrid

حال ہی میں نئے انداز کی حامل 2017 نسان GTR کی رونمائی کرنے کے بعد جاپانی کار ساز ادارہ GTR R35 کی تیاری میں جت گیا ہے۔ نسان نے تصدیق کی ہے کہ نئی GTR سال 2020 میں پیش کردی جائے گی۔ اس ضمن میں ایک اہم ترین اعلان نسان کے نائب صدر کی جانب سے کیا گیا ہے جس میں انہوں نے اسپورٹس کار کو ہائبرڈ ٹیکنالوجی سے روشناس کروانے کی بات کی ہے۔ انہوں نے مستقبل میں پیش کی جانے والی نسان GTR میں ہائبر ٹیکنالونی شامل کرنے کا بھی اشارہ دیا ہے۔

نسان کے نائب صدر نے کہا کہ آنے والے وقت میں تمام ہی گاڑیاں بجلی سے چلنے کی صلاحیت رکھیں گی اور اسی کو دیکھتے ہوئے نسان GTR جیسی اسپورٹس گاڑیوں میں بھی یہ صلاحیت شامل کیے جانے کے واضح امکانات موجود ہیں۔ برقی نظام ٹارک کے فرق کو مٹانے اور بہترین کارکردگی کی فراہمی کے علاوہ ماحول دوست بھی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر نسان GTR کی اگلی جنریشن میں ہائبرڈ ٹیکنالوجی شامل ہو تو شاید کسی کے لیے یہ بات حیرت انگیز نہیں ہوگی۔

میکلرن P1 اور اکیورا NSX کی مثال سامنے رکھیں تو نسان کی اسپورٹس کار میں ہائبرڈ ٹیکنالوجی کی شمولیت کا امکان رد نہیں کیا جاسکتا۔ آزاد ذرائع کے مطابق ولیمز (فارمولا ون) کی انجینئرنگ ٹیم جاپان کار ساز ادارے نسان کو برقی نظام تیار کرنے میں معاونت کرے گی۔ اس بات کا بھی امکان ہے کہ سال 2020 میں پیش کی جانے والی نسان GTR کا انداز بھی پرانی جنریشن سے بہت زیادہ مختلف ہوگا۔ نئے انداز اور نئی ٹیکنالوجی کی حامل اگلی نسان GTR کتنی منفرد اور متاثر کن ہوگی، یہ تو آنے والا وقت ہی بتائے گا۔

Top