آئل کمپنیوں نے پاکستان میں ہائی کوالٹی ڈیزل متعارف کروانے سے انکار کر دیا

petrol

پاکستان میں موجود آئل کمپنیوں نے حکومت کی یورو 2 اور یورو 4 ہائی سپیڈ ڈیزل متعارف کروانے کی درخواست مسترد کر دی۔ پاکستانی مارکیٹ میں ان ڈیزل گریڈز کو متعارف کروانے کے حوالے سے خدشات کی بنا پر یہ درخواست مسترد کی گئی۔

پاکستان میں کام کرنے والی آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو وزارت پیٹرولیم نے تجویز دی کہ وہ آسان ضوابط کے تحت یورو 3 اور یورو 4 ہائی سپیڈ ڈیزل درآمد کریں۔

حکومت نے یہ بھی تجویز دی کہ مقامی ریفائنریوں کو اپ گریڈ کیا جائے تا کہ وہ عالمی معیار کا ایندھن تیار کرسکیں۔ وزارت نے آئل کمپنیز ایڈوائزری کونسل سے یہ بھی کہا کہ وہ ہائی سپیڈ ڈیزل درآمد کرنے کے لیے ایک طریقہ کار اور ٹائم فریم وضع کریں۔

آئل کمپنیز ایڈوائزری کونسل نے حکومت کی یہ درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اس ایندھن کو درآمد کرنے کا منصوبہ اس کے اخراجات کے حوالے سے پاکستان میں ابھی ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے وزارت کومزید بتایا کہ یورپ میں یورو 1 سے یورو 5 تک ایندھن اپ گریڈ کرنے میں 16 سال کا وقت لگا۔ وہاں ایندھن کے اپ گریڈ کا آغاز نئے انجنوں کے ڈیزائن ہونے کے بعد کیا گیا جنہوں نے اس اپ گریڈ ایندھن کو استعمال کیا جس سے ان کمپنیوں کے ایندھن کوالٹی بہتر کرنے کے منصوبے کو تقویت ملی۔ انہوں نے مزید یہ بحث کی کہ پاکستان کے حالات یورپ سے یکسر مختلف ہیں۔

 

Shaf Younus

I'm an Auto Enthusiast, a Student of Computer Science and above all, Citizen of Pakistan.

Top