مٹسوبشی کا اہم اعلان: لانسر، گیلنٹ اور پجیرو کا دور ختم

2015-Mitsubishi-Shogun-2

مٹسوبشی کے سربراہ جناب اوسامو ماسوکو نے اعلان کیا ہے کہ ان کا ادارہ اپنی تین معروف برانڈز پجیرو، لانسر اور گیلنٹ کو ختم کر رہا ہے۔ جاپانی کار ساز ادارے کے سربراہ نے مزید بتایا کہ اب ہماری توجہ ماحول دوست گاڑیوں بالخصوص SUVs کی تیاری پر مرکوز ہے۔ خیال ظاہر کیا جارہا ہے کہ مٹسوبشی لانسر کو ختم کرنے کی وجہ اس SUV کی بہت زیادہ ایندھن خرچ کرنے خامی ہے۔ مٹسوبشی امریکا کی جانب سے اس اہم اعلان کے بعد مٹسوبشی آسٹریلیا نے بھی اس خبر کی تصدیق کردی ہے۔ یوں مٹسوبشی پجیرو کا دور بین الاقوامی سطح پر تمام ہوچکا ہے۔

مٹسوبشی اب سلیکان ویلی میں اپنا تحقیق و ترقی مرکز قائم کر رہی ہے جس کا مقصد جدید اور ماحول دوست گاڑیاں بنانا ہے۔ جاپانی کار ساز کمپنی مستقبل میں ہائبرڈ SUVs کی طویل فہرست کے ساتھ مختصر گاڑیاں بھی پیش کرنے کا ارادہ رکھتی ہے جو لانسر کے متبادل کے طور پر پیش کی جائیں گی۔ اوسامو ماسوکو نے مزید کہا کہ SUVs اور چار پہیوں پر چلنے والی گاڑیوں میں مٹسوبشی مستند نام سمجھا جاتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ اب ہماری نظریں اسی زمرے پر مرکوز ہیں۔

یہ بھی دیکھیں: [ویڈیو] مٹسوبشی لانسر ایوو کے حتمی ایڈیشن کی تیاری

مٹسوبشی پجیرو کا موجودہ پلیٹ فارم 2000 سے کام کر رہا تھا۔ لیکن اس پلیٹ فارم سے کسی نئی 4×4 گاڑی کو پیش نہ کرنا اس بات کی طرف اشارہ کرتا ہے کہ مٹسوبشی کچھ اور ہی ارادے رکھتی ہے۔ مٹسوبشی لانسر بھی اب 9 سال پرانی ہوچکی ہے۔ اس دوران لانسر کے کئی ایک انداز پیش کیے گئے لیکن کوئی بڑی تبدیلی نظر نہیں آئی۔ علاوہ ازیں مٹسوبشی اپنے تحقیق و ترقی شعبے کو بھی نئی پجیرو یا لانسر کی تیاری کے لیے سرمایہ فراہم نہیں کرسکا۔ مٹسوبشی نے پجیرو کی تیاری کے لیے کسی شراکت دار کو بھی تلاش کرنے کی کوشش کی تاہم اس میں بھی ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا۔

ماضی قریب میں مٹسوبشی کی ساکھ بہت تیزی سے گر رہی ہے۔ چند ہفتوں پہلے لانسر ایولوشن کے خاتمے کا بھی اعلان کیا گیا تھا اور اب ادارے کے سربراہ کی جانب سے مخصوص شعبے پر نظریں مرکوز کرنے اور خسارے کو کم کرنے کی کوششوں جیسے بیانات سے لگتا ہے کہ جاپانی ادارے کو بھی اپنی گرتی ہوئی ساکھ کا بخوبی اندازہ ہو رہا ہے۔

مٹسوبشی پجیرو کو پاکستان میں ایک خاص مقام حاصل ہے۔ ہمارے ملک میں اسے شان و شوکت کی علامت سمجھا جاتا ہے۔ ٹویوٹا لینڈ کروزر سے پہلے یہ ہمارے وڈیروں اور چوہدریوں کی آنکھ کا تارا ہوا کرتی تھی۔ باوجودیکہ اب پجیرو کم ہی نظر آتی ہے لیکن گاڑیوں کا شوق رکھنے والے پاکستانیوں کو اس سے اب بھی شدید محبت ہے۔ یہاں آپ کو آج بھی ایسے لوگ ملیں گے تو پسندیدہ SUV کی فہرست میں مٹسوبشی پجیرو کو سرفہرست رکھتے ہیں۔

Top