پاک سوزوکی نے اکتوبر 2019ء کے لیے وِٹارا GLX کی قیمتیں بڑھا دیں


مقامی آٹو انڈسٹری افراتفری کا عالم ہے لیکن اس کے باوجود پاک سوزوکی نے اپنی وِٹارا GLX کی قیمت میں 5,60,000 روپے کا اضافہ کردیا ہے۔ 

کمپنی کی جانب سے پاکستان بھر میں اپنے ڈیلرز کو بھیجے گئے سرکلر کے مطابق گاڑی کی نئی قیمت بغیر ٹیکس کے 55,50,000 روپے ہے۔ واضح رہے کہ نئی قیمت یکم اکتوبر 2019ء سے نافذ ہو گی۔ سرکلر ذیل میں دیکھیں: 

کمپنی میں قیمت میں اس اضافے کی کوئی وجہ نہیں بتائی۔ لیکن یہ امر قابل ذکر ہے کہ چند روز پہلے پاک سوزوکی نے فروخت میں کمی کی وجہ سے اپنی چند گاڑیوں کی بکنگ روک دی تھی۔ اگست 2019ء میں پاک سوزوکی کی فروخت میں گزشتہ سال کے اسی مہینے کے مقابلے میں 56.15 فیصد کمی آئی۔ ہاتھوں ہاتھ فروخت ہونے والی ویگن آر حالیہ چند مہینوں میں سب سے زیادہ متاثر ہوئی اورمذکورہ عرصے میں اس کی فروخت میں 73.67 فیصد کی بڑی کمی ریکارڈ کی گئی۔ 

کمپنی پچھلے سال کے اسی مہینے میں 2،450 یونٹس کے مقابلے میں اِس مرتبہ  صرف 645 یونٹس فروخت کر پائی۔ 

خراب فروخت اور وِٹارا کی بڑھتی ہوئی قیمتوں سے ہٹ کر پاک سوزوکی نے صارفین کی توجہ حاصل کرنے کے لیے چوتھی جنریشن کی جمنی  بھی متعارف کروا دی ہے۔ کمپنی کی نظریں پاکستان میں اپنے صارفین کے لیے آٹومیٹک ویگن آر لانچ کرنے پر بھی ہیں۔ یہ خبریں بھی گردش کر رہی ہیں کہ مقامی آٹو میکر آئندہ چند دنوں میں اپنی مصنوعات کی قیمتیں بڑھائے گا۔ 

آئندہ دنوں میں اپنی کاروں کی قیمتی بڑھانے والے آٹومیکرز کے حوالے سے اپنی رائے پیش کیجیے۔


Google App Store App Store

My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top