سیفٹی الرٹ! سیف سٹی لاہور پروجیکٹ کی وجہ سے سڑک کے ساتھ کھدائی سے محتاط رہیں

2

پورے لاہور میں سیف سٹی پروجیکٹ کے تحت کلوز سرکٹ کیروں کی تنصیب وزیراعلی شہباز شریف کے وژن کا حصہ ہے۔ جس کا مقصد براہ راست مانیٹرنگ سسٹم بنانا ہے جس سے سٹی ٹریفک پولیس اور ٹریفک قوانین لاگو کرنے والے اداروں کو بہتر طریقے سے ٹریفک قوانین لاگو کرنے میں مدد ملے گی۔ اس سسٹم کا مقصد لاہور کی بڑھتی ہوئی ٹریفک کو سنبھالنا ہے۔ سیف سٹی پروجیکٹ کے لیے کلوز سرکٹ کیمروں کی تنصیب کے لیے پنجاب حکومت نے متعلقہ محکمہ کو مصروف عمل کیا ہے تا کہ وہ اس کے لیے مناسب بنیادی ڈھانچہ تیار کریں جس سے ویڈیو فیڈ ایک ہی جگہ اکٹھی کی جاسکے۔ اس سلسلے میں کارکن کلوز سرکٹ کیمروں کو اس بڑے نیٹ ورک میں جوڑنے کے لیے مواصلات کی لمبی لائنز بچھا رہے ہیں۔ لازمی طور پر ان لائنوں کو بچھانے کے لیے گرین بیلٹ اور سڑکوں کے کنارے کھدائی کرنا ضروری ہے۔

اس سیفٹی الرٹ کا مقصد برسات کے موسم میں ان کھدائی والی جگہوں کے خدشات کو لوگوں تک پہنچانا ہے۔ گرین بیلٹ اور سڑک کے اطراف کھدائی پیدل چلنے والوں اور ڈرائیوروں دونوں کے لیے خطرے کا باعث بن سکتی ہے۔ محکمہ موسمیات نے آنے والے چند دنوں میں بارشوں کی پیش گوئی کی ہے۔ بارشوں کا یہ سلسلہ حال میں کام ہونے والی سائٹس کو نرم کرنے کا باعث بن سکتی ہیں جن سے سنک ہولز پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔ تو احتیاط کریں اور لاہور کی سڑکوں پر کام کی ان جگہوں پر کسی بھی سنک ہولز سے ہوشیار رہیں۔

123456

Notable Replies

  1. Lets call them development works and I am totally in favor of them and not against them.
    But only thing they should understand is the “Convenience of the Public”.
    Start these dig up works from Mid Night to Early morning when traffic hours are min. And the working team should make sure that digged up area is totally covered-well before they leave.

Post a Comment

Participants

Top