سوزوکی کیری کے ساتھ ‘ایسا’ ہر گز نہ کریں!

suzuki carry dabba

پاکستان کی سڑکوں پر نظر آنے والے چلتے پھرتے ڈبے کا نام سوزوکی کیری ہے۔ اس عظیم گاڑی کو ایک قدیم تاریخی حیثیت حاصل ہے۔ اس وقت کیری کی دسویں نسل (جنریشن) چل رہی ہے جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ یہ سوزوکی جاپان کی پیش کردہ اولین گاڑیوں میں سے ایک ہوگی۔

سوزوکی کیری کی پہلی جنریشن 1961 میں پیش کی گئی تھی۔ اس میں پہلی بار اگلی مسافر نشستوں کے نیچے انجن لگائے جانے کا منفرد خیال پیش کیا گیا۔ اُن دونوں اسے سوزوکی لائٹ وین FB/FBD کہا جاتا تھا۔ ابتداء میں کیری کو 2-اسٹروک اور 2-سلینڈر انجن کے ساتھ پیش کیا گیا تھا۔ پاکستان میں پائی جانی والی موجودہ کیری کو دیکھتے ہوئے کہا جاسکتا ہے کہ اس میں اب بھی قدیم خوبیاں شامل ہیں۔ وقت کی ستم ظریفی ہے کہ اس کا ڈیزائن اور کارکردگی وغیرہ میں بہتری نہ آئی مگر اس کے بوجھ میں اضافہ ہوگیا۔

یہ بھی پڑھیں: 10 اہم سہولیات جو سوزوکی بولان اور راوی میں دستیاب نہیں!

بہرحال، سوزوکی کیری کو جاپانی ادارے کی اہم گاڑیوں میں شمار کیا جاتا ہے۔ پاکستان میں بہت سے لوگ اسے متعدد مقاصد کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ اسکول وین، مال بردار گاڑی سمیت دیگر بے شمار کاموں کے لیے اسے استعمال ہوتا دیکھ سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ کچھ منچلے اس بھولی بھالی گاڑی کو کچھ الگ ہی طرح استعمال کرتے ہیں۔ ذیل میں چند مثالیں ملاحظہ کیجیے:

دیگر ممالک میں گاڑیوں کا شوق رکھنے والے اس سستی سوزوکی گاڑی میں V8 اور 13B انجن لگا کر بھرپور لطف اٹھا رہے ہیں مگر پاکستان میں اسے کچھ اور ہی منفرد انداز سے استعمال کیا جا رہا ہے۔ یقین نہ آئے تو آپ خود دیکھ لیجیے:

پاکستان میں سوزوکی کیری (ڈبہ) کو سوزوکی بولان (Suzuki Bolan) کا نام سے پیش کیا جاتا ہے۔ یہ دراصل سوزوکی کیری کی ساتویں جنریشن ہے جس کا کوڈ نیم ST90V تھا۔ اس میں 796 س سی 3-سلینڈر F8B انجن لگایا جاتا ہے۔ گو کہ اس میں 8 نشستیں موجود ہے لیکن ہمارے یہاں مزید گنجائش نکال کر مزید لوگوں کو “ٹھونس” لیا جاتا ہے۔

کہتے ہیں شوق دا کوئی مول نئیں۔ اور اسی لیے گاڑیوں کے چند شوقین افراد نے سوزوکی کیری کو بھی اپنی پسند کی تزیئن و آرائش سے کچھ منفرد انداز دے ڈالا۔

Suzuki Carry Dabba

Suzuki Carry Dabba

اور کچھ شوقین حضرات تو اسے رفتار کے معاملے میں وہاں لے گئے کہ جہاں سوزوکی کیری کبھی خواب میں بھی نہ گئی ہوگی۔

Suzuki Carry Dabba

ان مثالوں سے آپ اندازہ لگاسکتے ہیں کہ لوگوں میں گاڑیوں کا شوق کس حد تک ہے۔ آخر میں بس اتنی گزارش کرنا چاہوں گا کہ اگر آپ کو گاڑیوں کا شوق ہے تو اسے ضرور پورا کریں مگر گاڑی کی ایسی حالت ہر گز نہ کریں کہ کوئی آپ کا ‘شوق’ کو دیکھ کر ‘shock’ رہ جائے!

Fahad Mehmood

Fahad Mehmood is an ardent car enthusiast and a photographer by profession. He's been an active PakWheels member since the beginning. When he's not writing about cars, he's shooting people and things with his camera. He hopes to go viral one day.

Top