لو آ گئی ٹویوٹا کرولا 2020ء!


جب بات کرولا اور سوِک جیسی گاڑیوں کی ہو تو اُن کے بارے میں کوئی بھی نئی خبر سب کے لیے دلچسپی کا باعث بنتی ہے۔کرولا ٹویوٹا کی روزی روٹی ہے کیونکہ یہ 150 سے زیادہ ممالک میں فروخت ہوتی ہے اور کمپنی کی کل فروخت میں 20 فیصد حصہ دیتی ہے۔ ٹویوٹا کے مطابق دنیا بھر میں کرولا کے 16 اسمبلی پلانٹس ہیں، اور اپنے قیام سے اب تک اس کے 46 ملین سے زیادہ یونٹس اب تک فروخت ہو چکے ہیں۔ موجودہ کرولا 11 ویں جنریشن میں ہے اور ہم کرولا کی اگلی جنریشن کے بارے میں مسلسل خبریں دے کر اپنے قارئین کو تازہ ترین پیشرفت سے آگاہ کرتے رہے ہیں۔

رواں سال کے اوائل میں غیر ملکی مارکیٹوں میں ٹویوٹا کرولا ہیچ بیک کی رونمائی ہوئی تھی اور بعد ازاں کرولا اسپورٹس-ویگن بھی منظرِعام پر آئی۔ یہ سمجھا جاتا تھا کہ کرولا سیڈان نئے کرولا ہیچ بیک اور ویگن ویریئنٹس کے انداز اور سہولیات جیسی ہوگی۔ ان گاڑیوں نے شائقین کو ایک اندازہ بھی دیا کہ اب نئی سیڈان میں کیا کچھ آ سکتا ہے۔ کمپیوٹر سے بنائی گئی رینڈرنگ بھی پیش پیش رہیں اور ہم نے اپنے بلاگز کے ذریعے کرولا کی نئی جنریشن کے بارے میں غیر تصدیق شدہ تفصیلات اور آراء بھی پیش کیں۔

تو خواتین و حضرات! خیر مقدم کیجیے “ٹویوٹا کرولا 2020” کا۔ ٹویوٹا کے مطابق دنیا کی مقبول ترین اور بہترین کار اب پہلے سے کہیں بہتر ہو گئی ہے۔ ٹویوٹا نے عالمی لانچ کے موقع پر باضابطہ طور پر دو خصوصی تقاریب میں نئی کرولا کی رونمائی کی؛ ایک کارمل، کیلیفورنیا میں منعقد ہوئی اور دوسری گوانگژو انٹرنیشنل آٹو، چین میں۔ واضح رہے کہ ہماری یہ تحریر اس وقت امریکا و چین کے لیے مخصوص کرولا سیڈان کے بارے میں رہے گی۔ میرے خیال میں چینی مارکیٹ کے لیے بنائی گئی کرولا یورپ اور دیگر تمام خطوں کے لیے کرولا بنے گی، جس میں آسیان اور بالآخر پاکستان بھی شامل ہیں۔

گو کہ نئی کرولا ایک عالمی ماڈل ہے، لیکن چین اور شمالی امریکا کے ورژنز میں معمولی سا فرق ہے۔ سامنے کے حصے میں فرق کے علاوہ باقی گاڑی اندر اور باہر سے ایک جیسی ہے۔ امریکی و چینی گاڑی میں سامنے والا بمپر مختلف ہے، جو بظاہر دونوں گاڑیوں کو مختلف صورت دیتا ہے۔ فوری طور پر یوں پہچانیں کہ شمالی امریکا کے ویریئنٹ میں ٹویوٹا کا نشان ہیڈلائٹس کے درمیان شیٹ میٹل کے حصے پر چپکا ہوا ہے، جبکہ چینی یا آپ اسے ایشیائی ماڈل کہہ سکتے ہیں میں ٹویوٹا کا نشان پچھلی جنریشن کی کرولا کی طرح دونوں ہیڈلائٹس کے درمیان پتلی سی جالی پر لگا ہوا ہے۔ گرل اوربمپر کے درمیان فرق کے علاوہ شمالی امریکی و چینی گاڑی ہیڈلائٹس کا بھی مختلف ڈیزائن رکھتی ہیں گو کہ دونوں میں بائی-بیم LED ہیڈلائٹس ہیں۔ آپ دونوں ورژنز کے تقابل میں ایک میں گول اور دوسری میں ذرا لمبی فوگ لائٹس بھی پائیں گے۔ باہر سے چین کے ماڈل کا سامنے والا حصہ پہلے سے موجود کرولا ہیچ بیک جیسا لگتا ہے۔

سائیڈ سے دیکھیں تو آپ اے-پلر پر نیا گلاس پینل دیکھ سکتے ہیں کہ جہاں سائیڈ ویو مررز لگے ہوئے ہیں۔ پچھلے دروازے کے ساتھ آپ کو گزشتہ کرولا کی طرح تکون شکل کے بجائے نئی trapezoidal  صورت کے گلاس پینلز نظر آئیں گے ۔ پچھلے اور اگلے دروازوں پر نئی ونڈوز پینل کے حصے کار کے اندر سے باہر دیکھنے اور کھڑکی کھلنے میں اضافہ کرتے ہیں۔ پچھلے اور اگلے دروازوں کے خمیدہ نچلے کنارے ہیں جو گاڑی کو ایک اسپورٹی شکل و صورت دیتے ہیں۔ نئے ڈیزائن کے حامل سائیڈ ویو مررز بھی ہیں جن کے اندر ٹرن سگنلز موجود ہیں۔ پیچھے کی جانب نئی ڈیزائن کردہ LED لائٹس اور بمپر ہیں۔ دونوں ٹیل لائٹس کو جوڑنے والی نئے انداز کی ڈگی نئی کرولا کو ایک خوبصورت شکل و صورت دیتی ہے۔ مجموعی طور پر 12 ویں جنریشن کی کرولا نے بظاہر اپنے انداز کو بہتر کیا ہے۔ میری ذاتی رائے میں جہاں تک بیرونی انداز کی بات ہے چینی مارکیٹ کے لیے بنائی گئی کرولا امریکی ویریئنٹ کے مقابلے میں زیادہ بہتر نظر آتی ہے۔

بظاہر چینی و امریکی ویریئنٹس مختلف لگتے ہیں لیکن میکانیکی طور پر دونوں بالکل ایک جیسے ہیں۔ جیسا کہ پہلے بتایا گیا کہ نئی کرولا 2020ء ٹویوٹا کے نئے عالمی پلیٹ فارم TNGA “ٹویوٹا نیو گلوبل آرکی ٹیکچر” پر مبنی ہے، چھوٹی گاڑیوں کے لیے مخصوص GA-C۔ یہ ماڈیولر پلیٹ فارم اس وقت موجودہ جنریشن کے مختلف ٹویوٹا ماڈلز کے ساتھ ساتھ CH-R میں استعمال کیا جا رہا ہے۔ نئی کرولا پچھلی جنریشن کے مقابلے میں زیادہ لمبی اور چوڑی ہے۔ اس کا ویل بیس 11ویں جنریشن کی کرولا جتنا ہی ہے لیکن نیا ماڈل ماضی کے مقابلے میں نیچے ہے۔ کرولا ‏4،640‎ ملی میٹر طویل، ‏1،780‎ ملی میٹر چوڑی اور ‏1،435‎ ملی میٹر اونچی ہے، جس کا ویل بیس ‏2،700‎ ملی میٹر ہے۔ ٹویوٹا کے مطابق کرولا کا سامنے والا رُخ اور ریئر ٹریک ڈائی مینشنز زیادہ چوڑے ہیں۔ نئی کرولا کی اونچائی بھی پچھلی جنریشن کے مقابلے میں 20 ملی میٹر کم ہوئی ہے۔ ٹویوٹا عہد کرتا ہے کہ ایک زیادہ چوڑی اور نچلی حالت گاڑی کو بہتر استحکام کے ذریعے نچلے سینٹر آف گریوٹی کے ساتھ بہتر ڈرائیونگ ڈائنامکس دیتا ہے۔ نیا پلیٹ فارم سڑک کے شور کو کم کرنے کے ساتھ کرولا کو زیادہ خاموش اور آرام دہ پلیٹ فارم دیتا ہے۔

انٹیریئر کے معاملے میں جیسا کہ ہم نے پہلے ہی پیشن گوئی کی تھی کہ وہ کرولا ہیچ بیک یا کرولا اسپورٹس-ویگن جیسا ہی ہے۔ امریکی اور چینی دونوں ویئرنٹس بالکل ایک جیسا انٹیریئر رکھتے ہیں۔ درمیان میں AC وینٹس اور ہیچ بیک کے لیے کلائمٹ کنٹرول یونٹ کے اوپر 8 انچ کی HD ٹچ اسکرین ہیڈ یونٹ موجود ہے۔ بیس ماڈلز میں 7 انچ کی ٹچ اسکرین ہے۔ نیا ٹیبلٹ-اسٹائل کا ہیڈ-یونٹ پوری ٹویوٹا ماڈل لائن میں مکمل طور پر نیا ڈیزائن انداز رکھتا ہے اور نئی فل-سائز سیڈان ٹویوٹا ایوالون اور کے ساتھ ساتھ نئی Rav4 SUV میں بھی دیکھا سکتا ہے۔ نئی کرولا کے بہتر ویریئنٹس میں 7 انچ کا ڈجیٹل کلسٹر بھی ہے جو ہم ہیچ بیک میں دیکھ چکے ہیں۔ ڈرائیور اینالاگ اور ڈجیٹل اسپیڈومیٹر کے اسٹائلز کے درمیان اپنا انتخاب کر سکتا ہے۔ ایک روایتی نیڈل-ٹائپ اینالوگ کلسٹر بنیادی اور نچلے درجے کے ماڈلز میں دستیاب ہوگا۔ کرولا سیڈان میں روایتی 4.2 انچ ملٹی انفارمیشن ڈسپلے (MID) معیاری طور پر آئے گا۔

ڈجیٹل آٹومیٹک کلائمٹ کنٹرول اور اسٹیئرنگ پر موجود کنٹرولز بھی دستیاب ہیں۔ ٹویوٹا ڈیش بورڈ اور کیبن کے اندر دیگر حصوں کے لیے بہتر مٹیریلز کے ساتھ ہی انٹیریئر کو شور سے پاک کرنے کے لیے اہم جگہوں پر نوائس ڈیڈننگ کے استعمال کا عہد کرتا ہے۔ ایپل کار پلے، اینڈرائیڈ آٹو کے ساتھ ساتھ وائی فائی، ایمیزن الیگزا سے مطابقت اور چھ اسپیکرز کو بھی معیار بنایا گیا ہے۔ ٹویوٹا فلی لوڈڈ امریکی کرولا میں دروازوں میں سب ووفرز کے ساتھ 800-واٹ پریمیئم JBL آڈیو سسٹم بھی پیش کرتا ہے۔ بیرونی پیمائش میں اضافے نے انٹیریئر گنجائش اور ساؤنڈر کے لیے جگہ کو پچھلی جنریشن کے مقابلے میں بہتر بنایا ہے۔ سیٹوں کے بہتر معیار کے ساتھ بہتر سیٹ ڈیزائن بھی پیش کیا جائے گا جس میں معیار کپڑا یا بہتر ماڈلز میں سافٹیکس/لیدریٹ ہوگا۔ مجموعی طور پر نئی کرولا پچھلی جنریشن کے پرانی طرز کے اکتانے والے اور بے لطف انداز کے مقابلے میں مکمل طور پر نیا انٹیریئر ڈیزائن رکھتی ہے۔

گاڑی کا انداز سے تفصیلی جائزہ لیں تو یہاں بھی سب کچھ نیا ہے۔ ٹویوٹا نے تصدیق نہیں کی کہ چین کے لیے کون سے انجن آپشنز دستیاب ہوں گے۔ چینی ویریئنٹ ہائبرڈ آپشن میں دو ٹرِم لیولز کے ساتھ پیش کیا گیا ہے؛ ایک ریگولر ہائبرڈ اور دوسرا بہتر ماڈل بطور لیوِن ہائبرڈ۔ یورپ میں کرولا ہائبرڈ ‏1.8L‎ ہائبرڈ اور 2.0L ہائبرڈ کے ساتھ پیش کی گئی ہے اور ان میں سے کوئی بھی انجن کلاس ہائبرڈ کے ساتھ کرولا سیڈان میں ہو سکتا ہے۔ البتہ ہمیں شمالی امریکا کے لیے باضابطہ تفصیلات کی تصدیق مل چکی ہے۔ امریکی کرولا دو انجن آپشنز میں پیش کی جائے گی؛ پہلا وہی گزشتہ کرولا جیسا ‏1.8L (2ZR-FAE)‎ کا حامل 4 سلینڈر انجن ہے۔ ٹویوٹا حوالہ دیتا ہے کہ گو کہ یہ انجن پچھلی جنریشن کی کرولا میں سے ہے، لیکن اس کی طاقت کے ساتھ ساتھ مؤثریت کو بڑھانے بنانے کے لیے اسے بہتر بنایا گیا ہے۔ باضابطہ اعداد و شمار ابھی فراہم نہیں کیے گئے۔ پچھلی جنریشن میں یہ انجن ‏138hp‎ پیدا کرتا ہے، تو ہم نئی کرولا میں کچھ مزید ہارس پاور کی توقع رکھ سکتے ہیں۔ اس انجن کے ساتھ کرولا ویریئنٹس اسی پچھلی جنریشن کی CVT ٹرانسمیشن کے ساتھ پیش کیے جائیں گے۔ ٹویوٹا کی شمالی امریکا پریزنٹیشن میں پہلی بار کرولا کے ہائبرڈ ویریئنٹ کی رونمائی بھی کی گئی جو امریکا میں پیش کیا جائے گا۔ اس حوالے سے کوئی اضافی تفصیلات نہیں دی گئیں لیکن ایسا لگتا ہے کہ یہ چین میں پیش کردہ گاڑی جیسا ہی ہوگا۔

دیگر انجن آپشنز میں ٹویوٹا کا نیا ‏2.0L (M20-FKS)‎ ڈائنامک فورس انجن ہے۔ یہی انجن کرولا ہیچ بیک میں پیش کیا گیا ہے۔ یہ انجن ‏169hp‎ اور ‏4,800rpm‎ پر زیادہ سے زیادہ ‏204NM‎ کا ٹارک پیدا کرتا ہے۔ ٹویوٹا کے مطابق نیا انجن کم ایندھن کھپت کے ساتھ زیادہ کارکردگی پیش کرتا ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ‏2.0L‎ انجن بظاہر چھوٹا اور ہلکا ہے، جس سے گاڑی کے سینٹر آف گریوٹی کو نیچے لے جانے اور مجموعی توازن کو بہتر بنانے میں مدد مل رہی ہے۔ یہ ماڈل پر منحصر ہے کہ 6-اسپیڈ مینوئل مع ریو میچ فیچر پیش کیا جاتا ہے یا پھر ہیچ بیک میں پیش کردہ انجن جیسا ٹویوٹا کا نیا CVT ٹرانسمیشن مع لانچ گیئر فیچر کا حامل انجن۔

اب سب سے بڑی خبر ہے سسپنشن میں کہ جو نئی کرولا کے اجراء سے قبل اصل سسپنس تھا۔ یہاں مکمل طور پر نظرثانی اور اپڈیٹ شدہ میک فرسن اسٹرٹ فرنٹ سسپنشن ہے جبکہ ٹویوٹا نے روایتی ٹورشن بیم سیٹ اپ کو پیچھے سے نکال دیا ہے۔ ٹویوٹا نے نئی کرولا کو مکمل طور پر نئے ملٹی-لنک ریئر سسپنشن سے لیس کیا ہے۔ ٹویوٹا نے بہتر ہینڈلنگ، استحکام اور آرام دہ سفر کے لیے بہتر اور آپٹمائزڈ ڈیمپنگ فورس فراہم کرنے کی خاطر نئے شاک ایبزاربر شامل کیے ہیں۔ بنیادی ماڈل میں 16 انچ اسٹیل رِمز ہوں گے جبکہ باقی ویریئنٹس میں 16 انچ نیو اسٹائل الائز۔ اس کے علاوہ آپ 18 انچ کے الائز کا انتخاب بھی کر سکتے ہیں۔

جب سیفٹی کا معاملہ آتا ہے تب بھی ٹویوٹا مایوس نہیں کرتا۔ تمام کرولا ٹویوٹا سیفٹی سینس TSS کے ساتھ آتی ہیں۔ اس کا مطلب ہے کہ تمام کرولاز یہاں تک کہ بنیادی ماڈل بھی PCS (پری-کولیژن سسٹم)، DRCC (ڈائنامک ریڈار کروز کنٹرول)، LDA (لین ڈپارچر الرٹ) مع اسٹیئر اسسٹنٹ، NTA (لین ٹریسنگ اسسٹ، AHB (آٹومیٹک ہائی بیمز )، RSA (روڈ سائن اسسٹ) سے لیس ہوں گے۔ ہمیشہ کی طرح کرولا کے تمام ویریئنٹس روایتی آٹھ ایئر بیگز، الیکٹرانک اسٹیبلٹی کنٹرول، ٹریکشن کنٹرول، ہِل اسٹارٹ اسسٹ، الیکٹرانک بریک ڈسٹری بیوشن کے ساتھ آئیں گے۔ سیفٹی کے معاملے میں ٹویوٹا نے “سیفٹی کنیکٹ” فیچر بھی شامل کیا ہے، تاکہ حادثے یا دیگر ہنگامی حالات کی صورت میں مدد گاڑی کی GPS لوکیشن پر براہ راست پہنچ سکے۔ یہ سسٹم گاڑی کے ایئربیگ ڈپلائمنٹ ماڈیول کے ساتھ منسلک ہوگا۔

مجموعی طور پر نئی کرولا ہر شعبے میں بہتر لگتی ہے۔ 12ویں جنریشن کرولا ٹویوٹا کے لیے بہت سنجیدہ معاملہ ہے حالانکہ حریف سوِک کے مقابلے میں کرولا کی عالمی فروخت تاریخ میں سب سے عروج پر ہوں گی، لیکن شمالی امریکی مارکیٹ میں سوِک سے تقابل کریں تو یہ 50,000 سے زیادہ گاڑیوں کی فروخت کھو چکا ہے جو تقریباً 14 فیصد یونٹ بنتے ہیں، یہ کرولا کے لیے ٹویوٹا کی واحد سب سے بڑی مارکیٹ بھی ہے۔ کہیں بہتر اور تعریفیں سمیٹتی سوِک پہلے ہی کومپیکٹ کاروں کے شعبے میں نئے معیارات مرتب کر چکی ہے اور ٹویوٹا یقینی بنانا چاہے گا کہ اس کی اگلی جنریشن ہر لحاظ سے اپنے حریفوں سے بہتر ہو۔ اب دیکھتے اور انتظار کرتے ہیں کہ ہینڈلنگ اور ڈرائیونگ کے معاملات میں یہ گاڑی سڑک پر کیسی کارکردگی دکھاتی ہے۔

12 ویں جنریشن کی کرولا 2020ء اگلے 6 ماہ میں سال 2020ء کے ماڈل کے طور پر امریکا میں فروخت کے لیے پیش کی جائے گی۔ اسی دوران یہ چین اور یورپ میں دستیاب ہوگی۔ قیمت پر کوئی تفصیل موجود نہیں البتہ سمجھا جا رہا ہے کہ یہ امریکا میں 11 ویں جنریشن کی کرولا جتنی قیمت ہی میں ہوگی۔ نئی کرولا رواں ماہ عوام کے لیے LA آٹو شو میں بھی پیش کی جائے گی۔ ہم توقع رکھ سکتے ہیں کہ پاکستان میں 12 ویں جنریشن کی کرولا کا اجراء 2020ء کے وسط سے اواخر کے درمیان کہیں ہوگا۔ ہم اپنے قارئین کو اس حوالے سے کسی بھی تازہ خبر سے آگاہ کریں گے اور معلومات کے ایک بار دستیاب ہونے پر پیش کریں گے۔

نئی کرولا کی لانچ سے قبل ٹویوٹا نارتھ امریکن ریجن کے CEO جم لینٹر نے کہا کہ

“یہ دیکھنے میں موجودہ ماڈل سے بہتر ہے۔ موجودہ ماڈل ذرا اونچا اور بہت زیادہ ہموار نہیں ہے۔ نئی کرولا کا سینٹر آف گریوٹی نیچے ہے، یہ بہتر سفر اورہینڈلنگ رکھتی ہے اور ایندھن میں بہتر مؤثریت کے لیے کم وزن رکھتی ہے۔”

ذیل میں شمالی امریکا کا ویریئنٹ ہے:


ذیل میں آپ چینی مارکیٹ کی کرولا دیکھ سکتے ہیں جو بالآخر یورپ اور پاکستان سمیت ایشیا کے دیگر ممالک تک پہنچے گی۔


اس دوران آپ اس موضوع پر گفتگو کے لیے پاک ویلزکے فورم میں شمولیت اختیار کر سکتے ہیں Pakwheels.com/12thGenerationCorolla۔

تو کرولا کی نئی جنریشن کو دیکھنے کے بعد آپ کی کیا رائے ہے، ہمیں ضرور آگاہ کریں۔


Fazal Wahab

I am Civil Engineer by Profession and have love for High Rise Towers, Underground construction and Carbon Fiber Composites, automobiles is my first love. Its my passion to know and share about anything new in automobile industry.

Top