ٹویوٹا نے 90 لاکھ ہائبرڈ گاڑیاں فروخت کرنے کا سنگ میل عبور کرلیا

Toyota-Prius-Prime-featured

گاڑیوں کے عالمی نمبر ایک ادارے ٹویوٹا نے 90 لاکھ ہائبرڈ گاڑیاں فروخت کر کے نئی تاریخ رقم کردی ہے۔ ٹویوٹا نے یہ سنگ میل 9 سال سے بھی کم عرصے میں عبور کیا ہے۔ جاپانی کار ساز ادارے ٹویوٹا کی جانب سے ہائبرڈ ٹیکنالوجی کی حامل پہلی گاڑی اگست 1997 میں پیش کی گئی تھی جس کی باقاعدہ تیاری اسی سال اکتوبر کے مہینے میں شروع کی گئی۔ بعد ازاں جاپانی کارساز ادارے نے دنیا بھر کے 90 سے زائد ممالک اور خطوں میں 33 سے زائد ہائبرڈ گاڑیاں متعارف کروائیں۔

ٹویوٹا کی سب سے زیادہ فروخت ہونے والی ہائبرڈ گاڑیوں میں ٹویوٹا پرایوس سر فہرست رہی ہے۔ ٹویوٹا نے اب تک تقریباً 40 لاکھ پرایوس فروخت کی ہیں۔ اس کے بعد فہرست میں ٹویوٹا ایکوا اور پرایوس C کا نمبر آتا ہے جو لگ بھگ 10، 10 لاکھ کی تعداد میں فروخت کی جاچکی ہیں۔

پاک ویلز کے ذریعے ٹویوٹا پرایوس منگوانے کے لیے یہاں کلک کریں

جاپانی ادارے ٹویوٹا (Toyota) نے سال میں 15 لاکھ ہائبرڈ گاڑیاں فروخت کرنے کا ہدف رکھا ہے۔ ٹویوٹا کی کوشش ہے کہ سال 2020 تک ڈیڑھ کروڑ سے زائد ہائبرڈ گاڑیاں فروخت کرنے کا سنگ میل عبور کرسکے۔ ہائبرڈ گاڑیوں کی بڑھتی ہوئی مقبولیت اور فروخت کو دیکھتے ہوئے کہا جاسکتا ہے کہ ٹویوٹا یہ ہدف مقررہ وقت سے پہلے حاصل کرلے گا۔

یہ بھی پڑھیں: ہائبرڈ گاڑی خریدنا چاہتے ہیں؟ پریوس، وِزل سے بہتر گاڑیاں دیکھیے!

روایتی گاڑیوں کے مقابلے میں ہائبرڈ گاڑیوں کی اضافی فروخت سے نہ صرف ٹویوٹا بلکہ ماحول دوست افراد بھی خوش نظر آرہے ہیں۔ ایک اندازہ کے مطابق ٹویوٹا کی ان ہائبرڈ گاڑیوں سے دنیا کو 6 کروڑ 70 لاکھ ٹن کاربن ڈائی آکسائیڈ سے محفوظ رکھا جاسکا ہے۔ جبکہ پیٹرول و دیگر ایندھن کے استعمال میں تقریباً ڈھائی کروڑ کلو لیٹرز کمی آئی ہے۔ اگر آپ ٹویوٹا یا ہائبرڈ گاڑیوں کو بالعموم پسند نہیں بھی کرتے تو بھی کم از کم اس کارنامے پر تو ٹویوٹا کو داد دینی ہی چاہیے۔

مستقبل قریب میں ٹویوٹا کی ہائبرڈ گاڑیوں میں لیکسز 500h کا بھی اضافہ ہونے جارہا ہے۔ اس کے علاوہ گزشتہ جنیوا آٹو شو میں پیش کی جانے والی ٹویوٹا C-HR بھی جلد اس فہرست کا حصہ بنے گی۔ مزید برآں ٹویوٹا جاپان میں مقامی مارکیٹ کے لیے ٹویوٹا آورس ہائبرڈ بھی پیش کرچکا ہے۔

Top