ویمن آن ویلز – پنجاب میں خواتین میں سینکڑوں موٹر سائیکلوں کی تقسیم


نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں کئی ایسے منصوبے شروع ہوئے ہیں جو سڑکوں پر بلاخوف گاڑیاں اور موٹر سائیکلیں چلانے پر خواتین کی حوصلہ افزائی کے لیے ہیں۔ پاکستان میں ویمن آن ویلز (Women on Wheels) نامی ایک منصوبہ بھی اسی مقصد کے لیے پنجاب میں شروع کیا گیا ہے۔

اس سے قبل حکومت نے پناجب سے تعلق رکھنے والی خواتین کو کم قیمت پر موٹر سائیکل فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا اور حال ہی میں، اتوار 14 اپریل 2018ء کو ویمن آن ویلز منصوبے کے تحت، تقریباً 700 خواتین کو الحمرا ہال میں منعقد ایک تقریب کے دوران موٹر سائیکلیں دی گئیں۔

موٹر سائیکلیں پنجاب کے وزیر ایکسائز مجتبیٰ شجاع الرحمٰن کی جانب سے مالکان کو دی گئیں۔ جبکہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر نے کہا کہ ہر شعبے میں خواتین کی شمولیت کے بغیر ملک ترقی نہیں کرے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس منصوبے کے تحت خواتین کو کم قیمت پر موٹر سائیکلیں دی جائیں گی۔

انہوں نے یہ بھی حوالہ دیا کہ ٹریفک پولیس کے حکام کس طرح سڑکوں پر اچھی طرح موٹر سائیکل چلانے میں خواتین کی مدد کر رہے ہیں۔

وزیر کے مطابق اب تک پنجاب کے مختلف شہروں میں خواتین کو 3,000 موٹر سائیکلیں دی جا چکی ہیں۔ مزید برآں، حکومت کا ہدف اس منصوبے کے صوبے کے 36 اضلاع تک پھیلانا ہے۔ یہ موٹر سائیکلیں خاص طور پر خواتین کے لیے تیار کی گئی ہیں۔

حکومت پنجاب کی جانب سے خواتین کے لیے شروع کردہ اس منصوبے کے ساتھ ساتھ سعودی عرب بھی 24 جون 2018ء سے اپنی خواتین کو گاڑیاں چلانے کی اجازت دینے کے لیے تیار ہے۔ 18 سال یا اس سے زیادہ عمر رکھنے والی خواتین کو ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے لیے درخواست دینے کی اجازت دی گئی ہے، اور پھر ان درخواستوں کا جائزہ لیا جائے گا۔ مملکت میں ڈرائیونگ اسکولز بنائے جا چکے ہیں جہاں خواتین جا سکتی ہیں اور خواتین اساتذہ سے ہی ڈرائیونگ سیکھ سکتی ہیں۔

ہماری طرف سے اتنا ہی، اس بارے میں اپنے خیالات کا اظہار نیچے تبصروں میں کریں۔


My name is M. Ali Laghari and I love to read and write about Cars.

Top