چین میں خواتین ڈرائیورز کے لیے خصوصی پارکنگ سے نئی بحث چھڑ گئی

Women-Only Pink Parking Spots In China

ایک عام بات مشہور ہے کہ خواتین کبھی بھی اچھی ڈرائیور ثابت نہیں ہوسکتیں۔ جتنے دلائل اس بات کے حق میں دیئے جاتے ہیں اتنے ہی اس کی مخالف میں بھی پیش کیے جاتے ہیں۔ لیکن ایسا محسوس ہوتا ہے کہ چین میں اس بات کو تسلیم کرلیا گیا ہے کہ خواتین گاڑی چلانے اور خاص طور پر اسے پارک کرنے کے معاملے میں اناڑی ہوتی ہیں لہٰذا انہیں عام ڈرائیور کی نسبت گاڑی کھڑی کرنے اور اسے دوبارہ باہر نکالنے کے لیے اضافی جگہ درکار ہے۔

چین کے شہر ہانگژو میں مختلف مقامات پر خواتین ڈرائیورز کے لیے مختص پارکنگ اسپاٹس بنائے گئے ہیں جو عام پارکنگ اسپاٹس کے مقابلے میں ڈیڑھ گنا بڑے ہیں۔ تاہم اس ‘گلابی پارکنگ’ کے معاملے نے عام شہریوں کے درمیان ایک نئی بحث کا آغاز کردیا ہے۔ حتی کہ چینی سوشل میڈیا (سینا ویبو) پر اس اقدام پر انتظامیہ اور ذمہ دار افراد کو تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ سوشل میڈیا پر سرگرم افراد کا کہنا ہے کہ اس اقدام سے حکومت نے اس نظریے کو تقویت پہنچائی ہے کہ مردوں کے مقابلے میں خواتین ڈرائیورز گاڑی چلانے میں مہارت نہیں رکھتیں۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان میں خواتین کے لیئے دستیاب پانچ بہترین گاڑیاں

ہانگژو میں ایک پارکنگ لاٹ کے منیجر پین تیتونگ نے کیانژیانگ ایوننگ نیوز کو بتایا کہ اس فیصلے کا مقصد ان خواتین ڈرائیور کو سہولت فراہم کرنا ہے جو گاڑی چلانے اور پارک کرنے میں مہارت نہیں رکھتیں۔ انہوں نے اس اقدام کی حمایت کرتے ہوئے ہوئے مزید کہا کہ یہاں آنے والی بہت سی خواتین نے ان سے گاڑی پارک کرنے کے لیے اضافی جگہ فراہم کرنے کی درخواست کی تھی تاکہ وہ آسانی سے اپنی گاڑی کھڑی کرسکیں۔

یاد رہے کہ مجموعی طور پر اس جگہ 361 گاڑیاں کھڑی کرنے کی جگہ موجود ہے جبکہ صرف 8 پارکنگ اسپاٹس کو خواتین کے لیے مختص کیا گیا ہے۔ اس سے قبل گزشتہ سال شنگھائی میں بھی خواتین کے لیے مختص گلابی پارکنگ کا تجربہ کیا جاچکا ہے۔

China Women Only Parking

Top