Survey by Qualaroo
+ Reply to Thread
Page 3 of 13 FirstFirst 12345 ... LastLast
Results 41 to 60 of 255
Like Tree495Likes

Thread: Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top (Urdu)

  1. #1
    PakWheeler Follow
    hafeeznasri's Avatar
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Karachi
    Age
    56
    Posts
    146
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top (Urdu)

    بسم اللہ الرحمان الرحیم

    پہلا دن 17 ستمبر 2014 ۔۔۔ کراچی سے فیصل آباد روانگی بذریعہ ٹرین

    دوسرا دن 18 ستمبر 2014 ۔۔۔ فیصل آباد سے راولپنڈی بذریعہ بس

    تیسرا دن 19 ستمبر 2014 ۔۔۔ ٹیکسلا سے بالا کوٹ

    چوتھا دن 20 ستمبر 2014 ... بالا کوٹ سے چلاس براہ بابوسر ٹاپ

    پانچواں دن 21 ستمبر 2014 ۔۔۔ چلاس سے ہنزہ کریم آباد

    چھٹا دن 22 ستمبر 2014 ۔۔۔ ہنزہ کریم آباد

    ساتواں دن 23 ستمبر 2014 ۔۔۔ کریم آباد سے سوست

    آٹھواں دن 24 ستمبر 2014 ۔۔۔ سوست سے خنجراب پاس واپسی کریم آباد ہنزہ

    نواں دن 25 ستمبر 2014 ۔۔۔ کریم آباد سے چلا س

    دسواں دن 26 ستمبر 2014 ۔۔۔ چلاس سے ناران براہ بابوسر ٹاپ

    گیارھواں دن 27 ستمبر 2014 ۔۔۔ ناران سے بالاکوٹ

    بارھواں دن 28 ستمبر 2014 ۔۔۔ بالاکوٹ سے راوالپنڈی

    تیرھواں دن 29 ستمبر 2014 ۔۔۔ راوالپنڈی سے کراچی

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1506180

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1506184

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1506181

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1506182

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1506185

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1506183



  2. #41
    PakWheeler Follow
    alkandar's Avatar
    Join Date
    Mar 2006
    Posts
    653
    Follows
    2
    Following
    0
    Mentioned
    7 Post(s)
    Tagged
    2 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    wow.....Bahut zabardast.....Umda tahreer aur tasaveer.......Hun tay main vi jasaan............Subscribed.
    alkandar

  3. #42
    PakWheeler Follow
    sjamil89's Avatar
    Join Date
    Jun 2010
    Location
    Karachi
    Age
    57
    Posts
    86
    Follows
    0
    Following
    1
    Mentioned
    2 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Haji Saheb bohot khoob or train ki chaaye ki kia baat hai 😜😜




    Sent from my iPhone using PW Forums mobile app

  4. #43
    PakWheeler Follow
    awtkhan's Avatar
    Join Date
    Jul 2012
    Location
    Karachi
    Age
    60
    Posts
    646
    Follows
    24
    Following
    0
    Mentioned
    67 Post(s)
    Tagged
    7 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    ماشاءاللہ.. بہت اچھے. خوب جا رہا ہے سفرنامہ

  5. #44
    PakWheeler Follow
    Irfan1954's Avatar
    Join Date
    Jun 2013
    Location
    Lahore
    Age
    62
    Posts
    79
    Follows
    0
    Following
    0
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    1 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Zabardast

  6. #45
    PakWheeler Follow
    hafeeznasri's Avatar
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Karachi
    Age
    56
    Posts
    146
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    چوتھا دن،20 ستمبر 2014
    صبح سو کے اٹھا تو اندازہ ہوا کہ باہر بارش ہورہی ہے نماز سے مزاغت کے بعد باہر نکل گیا ہلکی ہلکی بوندا باندی میں

    بالاکوٹ کے پہاڑ بہت سہانا منظر پیش کر رہے تھے میں پیدل کافی دور تک گھومتا پھرتا رہا لیکن صرف روڈ

    روڈ, ۔واپس آیا تو ہوٹل کا ٰملۃ بمعہ جاگ چکا تھا ان کو ناشتے کا آرڈر دیا اور خود اپنا سامان سمیٹ کر بیگ تیار

    کیا، ناشتہ آرام آرام سے کیا کیونکہ میں بارش یا بوندا باندی تھمنے کا انتظار کر رہا تھا۔ ناشتے سے فارغ ہوکر

    سامان بائیک پر باندھا 8 بجے تک آسمان کھل گیا تھا اور دھوپ نکل آئی تھی اس لئے اپنا سفر شروع کیا میرا اصل

    سفر آج سے شروع ہونا تھا کیونکہ پہاڑی علاقہ تو اب شروع ہوا تھا دل میں وسوسے اور اندیشے سر اٹھارہے

    تھے اس لئے رب تعالیٰ سے خوب اچھی طرح انکساری کے ساتھ دعا مانگی کہ باقی سفر بھی آسان فرما۔ بالاکوٹ

    کا پل عبور کرتے ہی وہ چڑھائی شروع ہوتی ہے جو اصل میں چڑھائی ہے۔ مانسہرہ سے بالاکوٹ تک جو چڑھائی

    اترائی آئیں تھی وہ بہرحال ویسی نہیں تھیں جوکہ اب شروع ہونی تھیں۔ بسم اللہ کہہ کر وہ چڑھائی چڑھنی شروع

    کی جوں جوں بلندی بڑھتی جارہی تھی خوف اور اندیشے کم ہوتے جارہے تھے اور اعتماد بحال ہوتا جارہا تھا۔

    چڑھائی کے ساتھ ساتھ کلچنگ، گیئرنگ کا ڈھنگ بھی آگیا تھا، کافی بلندی پر پہنچ کر ایک ہموار جگہ بائیک کو

    روکا اور اوپر سے بالاکوٹ کی تصاویر اتاریں۔ سڑک کا فی چوڑی اور نئی بنی ہوئی تھی ٹریفک بھی نہ ہونے

    کے برابر تھا بالاکوٹ سے تھوڑا اوپر جاکر فاریسٹ والوں کی چیک پوسٹ آگئی تھی انہوں نے انٹری کے بعد

    جانے دیا ،جوں جوں سفر طے ہورہا تھا بلندی بڑھتی ہی جارہی تھی اور ساتھ ہی ساتھ میرا اعتماد بھی بڑھتا جارہا

    ہے۔ اب میں وادی کاغان کو خوب اچھی طرح انجوائے کر رہا تھا بارش کے بعد کی تیز دھوپ نے ماحول اور

    وادی میں نکھارر پیدا کر رکھا تھا اور موٹر سائیکل کے سفر کا اصل مزہ میں اب لے رہا تھا اس سے پہلے تو میں

    دراصل فاصلے طے کر رہا تھا۔ یعنی آپ یوں کہہ سکتے ہو کہ پنڈی سے لیکر بالاکوٹ تک فاصلہ طے کیا خوف

    اور اندیشوں کے زیر سایہ۔ اور بالاکوٹ سے آگے تک بائیک کے سفر کا اصل مزہ لیا۔ بیس بائس کلومیٹر طے

    کرکے کیواٹی آگیا جہاں سے راستہ شوگراں کو جاتا ہے یہاں بھی کچھ دیر رک کر تصاویر بنائیں اور سفر کو

    جاری رکھا ایک جگہ پہنچ کر جب میں نے تھکن محسوس کی تو بائیک تو مناسب ہموار جگہ پر روک کر گھاس پر

    لیٹ گیا وہاں ایک بڑے میاں غالباً چروارہے تھے میرے برابر آکر بیٹھ گئے اور مقامی زبان میں بات کرنے لگے

    جو میری سمجھ سے بالاتر تھیں۔ کافی آرام کرنے کے بعد چلتے وقت ان صاحب کی کچھ مالی مدد کی اور روانہ

    ہوگیا جب فرید آباد پہنچا تو چائے کا موڈ بن گیا وہیں ہوٹل کے باہر چارپائی پر لیٹ گیا وہاں بھی کچھ لوگ بیٹھے

    تھے بات چیت کے دوران جب ان پر انکشاف ہوا کہ میں اکیلا بائیک لیکر نکلا ہوں و حیران بھی ہوئے اور ہر

    طرح مدد کی پیشکش کی۔ یہاں سے نکلا تو تھوڑی دیر کے بعد مہانڈری آگیا خوبصورت سفر جاری تھا، اور کاغان

    پہنچ گیا یہاں پہنچ کر ایک دفعہ پھر چائے کا دور چلایا ساتھ ہی کچھ بسکٹ اور اپنے ساتھ لائے پوپ کارن کھائے

    اور ناران کیلئے نکل گیا۔ کاغان سے ناران تک با ئیس کلو میٹر کا فاصلہ پینتالیس منٹ میں طے کیا کیونکہ یہاں جگہ

    جگہ روڈ انڈر کنسٹرکشن ہے کہیں کہیں پانی اور کیچڑمیں سے بھی گذرنا پڑا تھا، بہرحال دوپہر ساڑھے گیارہ

    بجے تک میں ناران پہ
    نچ گیا۔ گ

    بالا کوٹ سے روانگی
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510299

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510300

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510301

    ہم چلے تو ہمارے، سنگ سنگ نظارے چلے۔

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510303

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510306

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510309

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510312

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510310

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510311

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510308

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510307

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510305

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510304

    چرواہے صاحب
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510313

    Attached Images Attached Images  

  7. #46
    PakWheeler Follow
    hafeeznasri's Avatar
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Karachi
    Age
    56
    Posts
    146
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    ناران مجھے کافی بدلا بدلا نظر آیا پچھلی دفعہ غالباً 2010 میں ناران آئے تھے اس وقت کے ناران اور اب کے

    ناران میں کافی بدلاؤ محسوس کیا ۔ بہت اچھے اچھے ہوٹل کھل چکے ہیں۔ میرا ارادہ تو ناران میں نے رکنے کا تھا

    ،لیکن جب میں نےگھڑی اور اپنی جسمانی حالت کی طرف نظر ڈالی تو سفر جاری رکھنے کو دل چاہ رہا تھا۔ اسی

    شش پہنچ میں پورا ناران کا بازار گزر گیا اور میں جھیل سیف الملوک والے دھاتی پل کو عبور کرکے ایک چوڑے

    پتھر کے پاس بائیک کو کھڑا کرکے بیٹھ گیا۔ یہاں کچھ مقامی بچے آگئے اور مجھ میں اور میری بائیک میں دلچسپی

    لینے لگے ان کی مدد سے کچھ تصاویر اتاریں، سامنےرہبری بورڈ نظر آیا اس کی بھی تصویر اتاری اس بورڈ نے

    یہ شش پنج ختم کرنے میں مدد دی۔ اس بورڈ کے حساب سے بوروائی بتیس کلومیٹر اور جھل کھٹ باون کلومیٹر رہ

    گیا تھا اگر میں وہاں جاکر رکتا جاتا ہوں تو بابوسر ٹاپ وہاں سے صرف چالیس کلومیٹر رہ جاتا جو میں اگلے دن

    صبح صبح فاصلہ طے کرکے کوہستان گلگت چلاس کے علاقے میں اتر کر استور آسانی سےجا جاسکتا تھا۔ اور

    شام سے پہلے پہلے استور پہنچ کر قیام کیا جاسکتا تھا۔ یہ پروگرام مجھے کافی مناسب لگا چنانچہ میں مطمئن ہوگیا۔

    سوچا تھوڑا اس پتھر پر لیٹ کر آرام کرلوں پھر نکلوں گا کھانے کا کوئی پروگرام نہیں تھا۔ ابھی میں یہ پروگرام

    بناکر پتھر پر بیٹھا ہی تھا کہ اچانک ایک بائیک میرے سامنے سے گزری اس بائیک کا حلیہ بھی چیخ چیخ کر بتارہا

    تھا کہ میری طرح کا کوئی بائیکر ٹورسٹ ہے ۔یہ بائیک ناران سے نکلی تھی اور بابوسر کے رخ پر چلی گئی اور

    میں ہاتھ ملاتا رہ گیا کہ ایک ساتھی مِس ہوگیا۔ میں دوبارہ پتھر پر بیٹھ گیا۔تھوڑی دیر ھی گزری تھی تو دیکھا کہ وہ

    بائیک والا واپس آرہا ہے میں اس کو آوازیں دیتا رہا لیکن وہ میرے سامنے سے گذر کر ناران میں داخل ہوگیا آواز

    نہ سننے کی وجہ ہوسکتا ہے اس کا ہیلمٹ ہو جو اس نے پہن رکھا تھا ۔ بہرحال اب میں نے موقع غنیمت جانا اور

    اپنی بائیک اسٹارٹ کی اور اس بائیک کے پیچھے چل پڑا گو کہ وہ بائیک نظروں سے اوجھل ہوچکی تھی لیکن

    مجھے یقین تھا کہ اگر ناران میں ہوئی تو کہیں نہ کہیں اسے جا لوں گا۔ ایسا ہی ہوا ابھی تھوڑا ہی فاصلہ طے کیا

    تھا کہ وہ بائیک ایک جگہ کھڑی نظر آئی اور اسکے سوار بھی اسکے پاس ہی تھے میں نے اپنی بائیک انکی

    بائیک کے ساتھ پارک کردی اور ہیلمٹ اتار کر سلام دعا کی اور ان سے ان کا پروگرام پوچھا۔ یہ جان کر میری

    خوشی کی انتہا نہ رہی کہ وہ بھی بابوسر کراس کرکے چلاس اترنے کا ارادہ رکھتے تھے فرق صرف اتنا تھا

    میرے اور ان کے پروگرام میں کہ وہ آج ہی بابوسر پاس کراس کرنا چاہ رہے تھے جبکہ میرا پروگرام کل صبح

    صبح بابوسر کو کراس کرنے کا تھا میں نے انکو اپنا پروگرام بتایا تو وہ اس پر راضی نہ ہوئے کیونکہ ان کے پاس

    دن کم تھے اب مجھے اپنا پروگرام تبدیل کرنا تھا جو میں نے کر لیا۔



    ناران کی طرف جاتے ہوے
    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510317

    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510318

    کاغان کا بازار
    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510319

    ناران
    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510348

    ناران پر رہنمائی بورڈ
    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510320

    ںاران میں مقامی بچوں کے ساتھ
    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510321

    میرے ہمسفر
    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510322

    bike tour from rawalpindi to khunjrab pass via babusar top urdu -1510323




    Attached Images Attached Images                

  8. #47
    PakWheeler Follow
    alkandar's Avatar
    Join Date
    Mar 2006
    Posts
    653
    Follows
    2
    Following
    0
    Mentioned
    7 Post(s)
    Tagged
    2 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Bahut Umda..
    alkandar

  9. #48
    Senior PakWheeler Follow
    mtariqumer's Avatar
    Join Date
    Sep 2014
    Location
    Karachi
    Age
    28
    Posts
    1,350
    Follows
    6
    Following
    0
    Mentioned
    17 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Buhat khoob........... amazing and hard to believe that these areas covered on bike

  10. #49
    PakWheeler Follow
    hafeeznasri's Avatar
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Karachi
    Age
    56
    Posts
    146
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    اب ہم نے ایک دوسرے کو اپنا تعارف کروایا وہ دو تھے اور بائیک ایک اور میں ظاہر ہے اکیلا تھا۔ ان میں سے

    ایک کا نام فاروق اور دوسرے کا نام آصف تھا اور وہ لاہور سے بائیک پر چلے تھے ان کی فائنل منزل فیری میڈو

    تھا جو ظاہر ہے کہ انہوں نے اگلے دن ہی کرنا تھا انکے پاس سوزوکی ۱۰۰ (2014 ماڈل) تھی اس میں انہوں

    .نے جست کی چادر کے بکس بنوائے ہوئے تھے

    اور ان بکسو ں کے پیچھے رکشے کے انڈیکٹیر لگوائے ہوئے تھے اور ان کے پاس سامان بھی کافی زیادہ تھا۔



    موڈیفائڈ بائیک
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510379

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510380
    تصوراتی سفر کا عملی اغاز
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510381

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510382

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510383

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510384


    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510385


    جب ہمارا تعارف ہوگیا اور منزلوں کا تعین بھی ہوگیا اور یہ بھی طے پا گیا کہ آج ہی بابوسر کراس کرنا ہے تو

    میں نے
    ان سے جلدی کرنے کو کہا کیونکہ اس وقت غالباً دوپہر کے ساڑھے بارہ بج چکے تھے ،بہرحال میں نے جلدی

    جلدی کچھ کھانے پینے کی اشیاء خریدیں اور ہم دونوں بائیکر چلنے کیلئے تیار ہوگئے اب راستہ خوبصورت اور

    دشوار گذار ہورہا تھا لیکن دو بائیکیں ہونے کی وجہ سے دل کو ڈھارس تھی اور ظاہر ہے کہ انہیں بھی میری وجہ

    سے ڈھارس تھی۔ ان دونوں ساتھیوں کے آ نے سے میں اپنے سفر کافی کو کافی انجوائے کر رہا تھا۔ ہم جگہ جگہ

    رکتے رکا تے تصویر یں اتار تے ڈھائی بجے کے قریب ہم جل کھٹ پہنچ گے ۔ یہاں ہم نے نماز ظہر اور عصر

    اختصار کے ساتھ پڑھیں، اور چائے کے سا تھ کچھ لوازمات بھی کھائے جو ہم اپنے ساتھ لائے تھے، سوا یا

    ساڑھے تین بجے تک ہم جل کھٹ سے روانہ ہوگئے راستے میں انتہائی خوبصورت جھیل لولوسر آئی اس پر بہت

    ساری تصاویر اتاریں۔ میں نے اپنا کیمرا فاروق صاحب کو دے دیا تھا جو بائیک کے پیچھے بیٹھے تھے انہوں نے

    میری لائیو تصاویر اتاریں بائیک چلاتے ہوئے جو آپ دیکھ رہے ہیں جل کھٹ سے آگے روڈ انڈر کنسٹرکشن ہے

    لیکن کافی چوڑا ہے مستقبل قریب میں یہ روڈ کےکے ایچ، کے متبادل کے طور پر استعمال ہوگا، زمین ہموار ہو

    چکی ہے صرف کارپیٹنگ ہونا باقی ہے امید ہے کہ موسم سرما کے شروع ہونے سے پہلے اسکو مکمل کرلیا جاے

    گا۔ کیونکہ کام کی رفتار خا صی تیز ہے۔

    زیر تعمیر روڈ اور ہم
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510393

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510392

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510391

    جھیل لو لو سر
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510390

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510389

    جھل کھٹ
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510388

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510387

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1510394

    بابو سر ٹاپ سے کافی پہلے خوفناک چڑھائی شروع ہوجاتی ہے بائیک بڑی مشکلوں سے چڑھ پارہی تھی ان

    دونوں کی بائیک پر سامان بھی زیادہ تھا اور وہ تھے بھی دو،تو ان کی بائیک جواب دے رہی تھی چنانچہ فاروق

    صاحب کو میں نے اپنی بائیک پر بٹھالیا اس طرح ہمارا ایک دوسرے کا ساتھ کام آیا۔ بابوسرٹاپ پر بالآخر شام پانچ

    بجے کے قریب پہنچ گئے ، یہ ایک انتہائی خوش کن، خوشگوار لمحہ تھا کیونکہ بابوسر کو کراس کرنے کا ہمارا

    خواب 1981؁ء سے ادھورا چلا آرہا تھا جب بھی کبھی ہم نے شما لی علا قاجات کا پروگرام بنایا بابوسر ٹاپ

    کو ہمیشہ بند پایا، اور اس زمانے میں بابوسر کو صرف جیپ کے ذریعے ہی کراس کیا جاسکتا تھا لیکن اب چونکہ

    راستہ کافی چوڑا کردیا گیا ہے تو اب تقریباً ہر طرح کا ٹریفک اس پر چل سکتا ہے۔ بہرحال جب ہم اس ٹاپ پہنچے

    تو یہ میری زندگی کا ایک انتہائی خوش کن اور مسرت آمیز لمحہ تھا،،میں برملا کہہ سکتا ھوں کہ یہ لمحہ میری

    زندگی کا سب سے خوبصورت لمحہ تھا، ایک عجیب سا احساس تھا جو رگ و پے میں اتر رہا تھا جسکو لفظوں

    میں بیان نہی کیا جاسکتا، مجھ جیسے بندے کیلئے تو یہ کے ٹو سر کرنے کے برابر ہی تھا اور وہ بھی ائیک پر،

    اس سفر اور اس لمحہ کا میں لمبے عرصے سے انتظار کر رہا تھا لحاظہ خوشی اور حیرت کے خوشگوار لمحات

    تھے وہاں ہم نے کافی تصاویر اتروائیں۔ یہاں زیادہ دیر رک نہیں سکتے تھے کیونکہ سورج غروب ہونے میں صرف

    ایک گھنٹہ ہی باقی تھا لحاظہ ان خوشگوار لمحوں کو جلد ہی سمیٹ لیا سردی بہت زیادہ ہونے کے باوجود جانے کو

    دل بھی نہیں چاہ رہا تھا، بادل نحواستہ بابوسرٹاپ پر پولیس چیک پوسٹ پر انٹری کروائی اور اترائی کا سفر شروع

    کردیا ۔




    اترائی بھی کافی خطرناک تھی بائیک کنٹرول کرنا کافی مشکل ہورہا تھا ہم جلد از جلد یہ سفر طے کرکے چلاس

    پہنچنا چاہتے تھے ، چاہتے تھے کہ دن کی روشنی کا زیادہ سےزیادہ استعمال کر لیا جاے لیکن ایک گھنٹے بعد ہی

    سورج غروب ہوگیا۔تھوڑی دیر بعد گپ اندھیرا چھا گیا اور ہمیں اپنی بائیکس کی لائٹس آن کرنا پڑیں، ڈھلان ایسی کہ

    بائیک کو روکنا انتہائی دشوار ہورہا تھا نیچے ڈھلان پر بھی جگہ جگہ روڈ انڈر کنسٹریکشن ہے تو ٹرکوں کی

    آمدورفت کی وجہ سے مٹی انتہائی بھر بھری ہوئی وی تھی اور اس بھر بھری مٹی میں موٹے موٹے پتھر سر

    اٹھائے کھڑے تھے۔ اندھیرے کی وجہ سے وہ پتھر نظر بھی نہیں آرہے تھے اور مٹی کے بھر بھرے پن کا احساس

    بھی نہیں ہو پارہا تھا۔ ڈھلان کی وجہ سے اسپیڈ بھی آؤٹ آف کنٹرول ہورہی تھی اس لئے ایک جگہ جاکر میری

    بائیک لہراکر گر گئی دوسری بائیک پر بیٹھے فاروق صاحب نے میری مدد کی اور بائیک اٹھوائی اسی طرح ایک

    جگہ آصف صاحب کی بائیک بھی گری وہاں بھی ہم نے ایک دوسرے کی مدد کی اس طرح ناران میں ہم دونوں

    بائیکرز کا ملاپ کام آیا۔ شام سات سوا سات بجے تک ہم کے کے ایچ پر زیرو پوائنٹ پر پہنچ گئے وہاں موجود

    پولیس اہلکاروں نے ہاتھ کے اشارے سے چلاس کا راستہ بتایا جوکہ زیرو پوا ئنتٹ سے 4/5 کلو میٹر آگے تھا۔

    ساڑھے سات تک ہم چلاس پہنچ گئے اور وہا ں پاکستان ہوٹل میں کمرہ حاصل کیا۔ تما م شما لی علاقاجات میں

    رہنے والے مسافر حضرا ت، جو ناٹکو اور دوسری بس سر وسسز سے سفر کرتے ہیں وہ پاکستان ہوٹل سے واقف

    ہیں کہ ہر بس یہاں رکتی ہے اور لوگ اتر کر کھانا چائے وغیرہ پیتے ہیں اور نماز ادا کرتے ۔ہیں

    تھکن بہت زیادہ تھی راستے کے گرود غبار نے بھوت بنایا ہوا تھا لہٰذا باری باری سب لوگ نہائے یہاں پانی گرم

    کرنے کی ضرورت بالکل نہیں تھی کیونکہ چلاس بذات خود انتہائی گرم علاقہ ہے پانی البتہ ٹھنڈا تھا جس سے

    نہاکر بہت فرحت محسوس ہورہی تھی نہا دھوکہ اور کپڑے بدل کر نیچے آئے کھانا کھانے کیلئے۔ اس وقت دو تین

    بسیں بھی آئی ہوئی تھیں جن کے مسافروں سے ہوٹل میں رش بہت زیادہ تھا، کافی انتظار کے بعد کھانا آیا۔ تنور کی

    تازہ تازہ روٹی اور دال ماش نے بہت مزہ دیا پھر مغرب اور عشاء کی نماز پڑھی اور کمرے میں آگئے وہاں روم

    کولر لگا ہوا تھا جس نے کمرے کا ٹمپریچر انتہائی مناسب کر دیا تھا تھکن کی وجہ سے جلد ہی نیند کی آغوش میں

    چلے گئے رات کوکسی وقت آنکھ کھلی تو موبائل کو چارجنگ پر لگا کر دوبارہ سوگیا صبح فجر میں بھی آنکھ نہیں

    کھلی جب آنکھ کھلی تو سات آٹھ بج رہے تھے۔





  11. #50
    PakWheeler Follow
    faisal_here's Avatar
    Join Date
    Dec 2010
    Location
    Islamabad
    Posts
    421
    Follows
    0
    Following
    0
    Mentioned
    1 Post(s)
    Tagged
    3 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    very good going
    Allah Tera Shukar

  12. #51
    PakWheeler Follow
    hafeeznasri's Avatar
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Karachi
    Age
    56
    Posts
    146
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    پانچواں دن 21 ستمبر 2014



    جب آنکھ کھلی تو سات آٹھ بج رہے تھے حوائج ضرور یہ سے فارغ ہوکر فجر کی نماز پڑھی جب سب تیار ہوگئے

    تو نیچے ناشتےکیلئے آگئے ناشتہ کا آرڈر دیا اور خود گپ شپ لگانے لگے وہاں ناشتے کی میز پر ہم نے اپنا

    تفصیلی تعارف کروایا۔ فاروق صاحباور آصف صاحب دونوں ہی تجربہ کار ہائیکرز اور ٹریکر تھے انہوں نے پیدل

    ان تمام علاقوں کا چپہ چپہ کھنگالا ہوا تھا ، موٹربائیک پر پہلی دفعہ نکلے تھے۔ اس مقصد کیلئے انہوں نے نئی

    بائیک خریدی تھی اس میں زبردست خوبصورت موڈیفیکیشن کروائی ہو ئی تھی اور ہر طرح کا سامان بھر رکھا تھا

    جس کی وجہ سے انکی بائیک کافی سے زیادہ بوجھل ہورہی تھی، دونوں حضرات نے پیدل نوری ٹاپ، کراس کر

    رکھا تھا۔ جبکہ فاروق صاحب تو کے ٹو کے بیس کیمپ تک ہو آے تھے جبکہ میں ایک عام سا سیاح ہی تھا، ایک

    اوربات جو قابل غور تھی جو انہوں نے بتائی کہ یہ لوگ راتوں کو پیدل ٹارچ کی روشنی میں سفر کرنے کے عادی

    تھے ، پہاڑی علاقوں میں رات ہو جانا ان کیلئے کوئی معنی نہیں رکھتا تھا ، جبکہ میں اس معاملے میں کافی حساس

    ،واقع ہوا تھا ، میری کوشش ہوتی تھی کہ شام ہونے تک ٹھکانے پہنچا جائے، اس معاملہ میں یہ لوگ مجھے کافی

    لاپرواہ لگے، یعنی یہ لوگ وقت کی پابندی نہیں کررہے تھے، مثلاً انہیں فیری میڈو جانا تھا اور یہ ساڑھے نو بجے

    تک چلاس میں بیٹھے ناشتہ ہی کر رہے تھے، جبکہ میرے حساب سے انہیں کم از کم صبح دس بجے تک تو رائے

    کوٹ برج تک پہنچ ہی جانا چاہئے تھا۔ ناشتہ کی ٹیبل پر ان سے پہاڑی علاقوں کی مناسبت سے کافی معلوماتی

    گفتگو ہوئی۔
    ناشتہ سے فارغ ہوکر واپس کمرے میں آئے اور سامان وغیرہ کو بائک پر باندھا، اور جب ہم روانہ

    ہونے کیلئے نیچے اترے تو ساڑھے دس بج چکے تھے انہوں نے چلاس سے پیٹرول بھی بھروایا اس میں مزید آدھا

    گھنٹہ ضائع ہوا اور چلاس سے نکلتےنکلتے گیارہ بج گئے، بہرحال کے کے ایچ پر گلگت کی طرف سفر شروع کیا

    ، رات کو جب ہم چلاس پہنچے تھے تو موبائل کے سگنل بحال ہوگے تھے،اور واٹس ایپ پر سلمان صاحب کا

    میسج آگیا تھا ، کہ وہ اب ہنزہ میں ہیں اور اگلے دن انہوں نے خنجر اب پاس کےلئے نکلنا ہے۔ یعنی وہ آگے آگے

    اور میں پیچھے پیچھے ایک ہی منزل کی جانب سفر کر رھے تھے
    چلاس سے رائے کوٹ برج تک کا کے کے

    ایچ کا یہ ٹکڑا بہت زیادہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکا ہے اور مرمت کا کام بھی لگتا ہے عرصہ دراز سے بند پڑا

    ہے چلاس سے رائے کوٹ برج تک کا جو فاصلہ ایک گھنٹہ میں طے ہوجانا چاہئے تھا وہ تقریباً ڈھائی گھنٹے میں

    مکمل ہوا جب میں وہاں پہنچا تو دوپہر کا ایک،ڈیڑھ بج چکا تھا ، فاروق اور آصف صاحب ابھی تک نہیں پہنچے

    تھےمیں وہیں شنگریلا ہوٹل کے گیٹ پر لیٹ کران دونوں کا انتظار کرنے لگا، تھوڑی ہی دیر میں وہ بھی پہنچ گئے

    بائیک سے اترتے وقت کی تصویر آپ دیکھ رہے ہیں ،خراب راستے نے ہمیں بری طرح تھکا دیا تھا میرا اوربائیک

    کا انجر پانجر ڈھیلا ہوا تھا، یہاں شنگریلا ہوٹل والوں نے ہوٹل کے اندر داخل ہونے کی فیس لگارکھی ہے اسلئےا

    اندر تو داخل نہیں ے وہیں باہر لان میں تصویریں کھینچوائیں وہاں ایک اور صاحب بھی آگئے جو فاریسٹ گارڈ تھے

    ہمارے ساتھ تصویر کھینچواکر فرمائش کی کہ وہ تصویر ان کو ارسال کردی جائے۔


    پاکستان ھوٹل چلاس سے رائے کوٹ برج تک کا سفر
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511255

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511253

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511254


    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511252

    زیرو پوئنٹ بابوسر اور کے کے ایچ
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511258

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511256

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511259

    رائے کوٹ برج پر
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511267

    تتہ پانی
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511262

    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511260

    شنگریلا کے گیٹ پر دونوں ساتھیوں کا انتظار
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511264

    لو وہ دونوں پہنچ گئے
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511263

    شنگریلا رائے کوٹ
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511276


  13. #52
    PakWheeler Follow
    kfateh's Avatar
    Join Date
    Sep 2014
    Location
    Karachi
    Age
    53
    Posts
    399
    Follows
    0
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    1 Thread(s)
    Problems Posted
    1
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    very interesting journey

  14. #53
    PakWheeler Follow
    hafeeznasri's Avatar
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Karachi
    Age
    56
    Posts
    146
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    ناشتہ کے دوران فاروق صاحب نے مجھ سے کہا کہ آپ استور کیوں جارہے ہیں اگر تو آپ نے ترشنگ جانا ہے یا

    دیوسائی پار کرکے اسکردو میں اترنا ہے تو ضرور جائیں، ورنہ وہاں جانے کا کوئی فائدہ نہیں۔ چنانچہ ان کے

    کہنے اور سلمان صاحبکےمیسج کے بعد استور جانے کا پروگرام ملتوی کردیا، اور رائے کوٹ برج سے سیدھا

    پہلے گلگت اور وہاں سے ہنرہ جانے کا پروگرام بنایا۔ یعنی سلمان صاحب کے نقش قدم کو فالو کررہاتھا۔ با ئیک کا

    پروگرام بھی انہی کو فالو کرنا تھا۔ فاروق اور آصف صاحب جیپ لینے کے لئے بات چیت کرنے میں لگ گئے اور

    میں نے ان دونوں سے بوجھل دل سے اجازت چاہی کہ اچھے ساتھی الللہ کی نعمتوں میں سے ایک ہوتے ہیں،

    چنانچہ گلے مل کر اور ایک دوسرے کو اپنے اپنے ایڈریس دے کر رخصت ہوئے۔

    راےکوٹ برج سے ایک انتہائی شاندار سفر کا آغاز ہوا جس کا اختتام خنجراب پاس تھا مجھے ایسا لگا کہ

    جیسےمیرے پر نکل آئے ہوں اور میں لطیف فضاؤں میں تیر رہا ہوں ،ا س میں کوئی شک بھی نہی کہ شمالی

    علاقوں کی فضائیں لطیف اور معطر ہیں جن کی خاطر انسان یہ سب جوکہم اٹھا تا ہے۔ ایک تو میری بائیک شاندار

    اور نئی تھی دوسرے انتہائی اعلیٰ معیار کا نیا تعمیر شدہ روڈ کے کے ایچ اپنی تمام تر حشر سامانیوں کے ساتھ

    میرے آگے بچھا جارہا تھا اورجیسے کہہ رہا ہو کہ ااؤ میرے بھائی میں تمہیں خوش آمدید کہتا ہوں ، میں تمہارے

    ساتھ ساتھ چلوں گا خنجراب پاس تک تم اکیلے تھوڑی ہو میں جو ہوں تمہارے ساتھ، گھبرانا مت ہمت رکھنا میں

    تمہیں خنجراب پاس دکھا کر لاؤں گا اور واپس رخصت کرنے آؤں گا۔



    رائے کوٹ برج پر شنگریلا کے سامنے
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511290

    فاریسٹ گارڈ اور آصف کے ساتھ
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511291

    الوداعی پکچر
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511292

    رائے کوٹ برج سے اگلی منزل
    Bike Tour From Rawalpindi To Khunjrab Pass Via Babusar Top  URDU  -1511293


  15. #54
    PakWheeler Follow
    hafeeznasri's Avatar
    Join Date
    Apr 2014
    Location
    Karachi
    Age
    56
    Posts
    146
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    دوپہر ڈیڑھ بجے رائے کوٹ برج سے شروع ہونے والا یہ سفر میری زندگی کا انتہائی خوبصورت سفر تھا بائیک

    چلانے کا مزہ آگیا، بہترین سفر کرتے ہوئے تقریباً 45 منٹ کے بعد میں جگلوٹ سے کچھ کلو میٹر پہلے ایک

    قصبہ میں پہنچا، اب مجھے بھوک بھی لگ رہی تھی اور نماز بھی پڑھنی تھی یہاں ایک مسجد دیکھ کر رک گیا

    مسجد کے سامنے ایک ہوٹل تھا،یہاں بائیک کھڑی کی ہوٹل والے کو اسکی نگرانی کا کہہ کر مسجد میں نماز

    پڑھنے چلا گیا مسجد میں پہاڑ سے اترنے والا نالہ گذر رہا تھا اسکے ٹھنڈے پانی سے وضو کیا تو طبیت میں

    تازگی آگئی،لمبے سفر کی تکان اتر گائی، جماعت کے ساتھ نماز پڑھی اور ساتھ ہی عصر کی قصربھی پڑھ لی،

    پھر اتر کر ہوٹل میں آیا، ہوٹل والے حسب عادت مسافر دیکھ کر اور بائک کو دیکھ کر مجھ میں اور بائیک میں

    دلچسپی لینے لگے اور

    یہ سن کر بہت خوش اور حیران بھی ہوئے کہ میں کراچی سے اکیلا چلا آرہا ہوں۔ ہوٹل سے اٹھتی ہوئی تنور کی

    روٹی کی خوشبو نے بھوک چمکا دی تندور کی کڑک کڑک تازہ روٹی اور گوشت کے سالن نے بہت مزہ دیا۔ مے

    کے ٹھنڈے پانی نے بہت ہی تازگی بخشی، یہاں سے میں تقریباً پونے تین بجے چلا اور جگلوٹ کے قصبے سے

    ہوتا ہوا دنیا کے اس منفرد مقام پہنچا جہاں تین سلسلہ کوہ آپس میں ملتے ہیں، یعنی کوہ قراقرم،کوہ ہندوکش، اورکوہ

    ہمالیہ۔ یہاں سے نانگا پربت کی برفپوش چوٹی بھی نظر آ رہی تھی اور ذرا آگے چل کر دریائے سندھ،دریائے گلگت

    سے ملاپ کر رہاتھا،، رائےکوٹ برج سے لیکر گلگت تک ٹریفک نا ہونے کے برابر تھا لیکن جتنا بھی تھا بس یوں

    سمجھیں کہ آندھی طوفان بنا ہوا تھا،اچھا روڈ ہونے کا بھرپور ناجائز فائدہ اٹھاتے ہوے یہ ٹرک اور بس ڈرائیور

    حضرات اپنی اور دوسروں کی زندگیوں سے کھیلتے ہوے نظر آے،، روڈ خواہ کتنا ہی اچھا کیوں نہ ہو ان پہاڑی

    علاقوں میں ڈرائیونگ بہرحال محتاط انداز سے کرنی چاہئے۔ میں محتاط اور شاندار ڈرائیو کرتا ہوا پونے چار بجے

    گلگت کے ناٹکو کے بس اڈے کے سامنے ایک ورکشاپ کے پاس پہنچ گیا، یہاں مجھےاپنی بائیک کا آئل چینج

    کروانا تھا ۔ورکشاپ کے مالک نے دیکھتے ہی حال حلیہ سے ہی اندازہ لگا لیا تھا کہ مسافر ہوں اور لمبی ڈرائیو

    کرکے آیا ہوں پوچھنے پر جب اس پرانکشاف ہوا کہ میں کراچی سے آیا ہوں تو انتہائی محبت سے پیش آئے۔ بہت

    محبت کا اظہار کیا، اپنی بینچ پر مجھے لیٹنے کی پیشکش کی،اس بینچ کے سامنے ٹی وی چل رہا تھا،،آج کافی

    دنوں کے بعد ٹی وی دیکھ رہا تھا، کچھ دنیا اور پاکستان کی خیر خبرلی،کچھ اپنی سنائی،انہوں نے اپنی دکان میں کام

    کرنے والے لڑکوں سے ایک کو آئل چینج کرنے پر لگادیا اور ایک کو چائے لینے کے لئے بھیج دیا ،ان صاحب کا

    نام عطاء الرحمن تھا اور وہ ہنرہ کے رہنے والے تھے کراچی کئی بار جا چکے تھے میرے پروگرام کو سن کر تو

    بہت خوش ہوئے تصویرمیں آپ انہیں دیکھ سکتے ہیں آئل چینج کرنے کے بعد جب میں بائیک پر آیا تو دیکھا کہ

    بریک لائٹ لٹک رہی ہے غالباً اسکے نٹ بولڈ راستے میں کہیں گر گئے تھے یہ چلاس سے رائے کوٹ برج تک

    کے سفر کا نتیجہ تھا، عطاء الرحمن صاحب نے وہ بھی ٹھیک کروادی اور اس کا کوئی معاوضہ بھی نہیں لیا، میں

    نے زبردستی ان لڑکوں کو کچھ رقم دی۔ بہرحال یہ محبتیں تو پاکستان کے چپہ چپہ پر آپکو ملتی ہیں اس کا آغاز

    ٹیکسلا کے پیٹرول پمپ سے ہوا تھا اور ابھی جاری تھا جب عطاء الرحمن کی ورکشاپ سے نکلا تو سوا چار بج

    چکے تھے اور میری منزل ہنرہ تھی۔ عطاء الرحمن سے بات چیت کی تو
    انہوں نے کہا کہ آپ آرام سے مغرب تک

    ہنرہ پہنچ سکتے ہیں کیونکہ روڈ بہت اچھا ہے۔ عطاء الرحمن صاحب سے اور بھی موضوعات پر بات چیت ہوئی

    تھی ہنرہ اور پاکستان کے حوالے سے، جسے کسی اور وقت کیلئے سنبھال کر رکھتے ہیں۔ فی الحال تو ہنرہ جانے

    والے پل کی طرف چلتے ہیں جس کے بارے میں عطاء الرحمن صاحب نے بتایا کہ نیا بنا ہے اور آپکو گلگت شہر

    میں داخل ہوئے بغیر وہ ہنرہ کے ہائی وے پر ڈال دے گا چنانچہ واپس تین چار کلو میٹر چلا اور اس نئے پل پر

    موٹر بائیک چڑھا دی ،
    کیونکہ مجھے شام سے پہلے ہنرہ پہنچنا تھا۔ یہ پل تنیور کی آبادی میں پہنچا دیتا ہے،بہت

    خوبصورت اور صاف ستھری آبادی ہے، تنیور سے لیکر اوپر کریم آباد اور پھر سوست تک ہنرہ کے خوبصورت

    لوگ صاف
    ستھرے کپڑے پہنے روڈ کے کنارے واک کرتے ہیں اور آنکھوں کہ بھلے

    لگتے ہیں ۔




    Attached Images Attached Images             

  16. #55
    PakWheeler Follow
    nishat12's Avatar
    Join Date
    Jul 2012
    Location
    Lahore
    Age
    53
    Posts
    627
    Follows
    5
    Following
    1
    Mentioned
    13 Post(s)
    Tagged
    1 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Sir, very Nice sharing, another adventurer story is going on with new passions toward old destinations like Mr. Abdul Waheed Khan sahib's thread. Congratulation to you from the core of my heart on completion of such a brave / great achievement by you . May almighty Allah, grant all your prayers and wishes.

    With best regards,
    Ali Imran

  17. #56
    PakWheeler Follow
    greatusama's Avatar
    Join Date
    Sep 2012
    Location
    Lahore
    Posts
    457
    Follows
    1
    Following
    0
    Mentioned
    18 Post(s)
    Tagged
    6 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Its amazing...U have made the history.
    Pakistan Aik Ishq Aik Junoon

  18. #57
    PakWheeler Follow
    rao.umair.3194's Avatar
    Join Date
    Jul 2013
    Age
    32
    Posts
    419
    Follows
    0
    Following
    0
    Mentioned
    6 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Maza a gya bohat ala! Ap ka tour parh kr apna khunjrab trip yad a gya. Hats of to u

  19. #58
    PakWheeler Follow
    pkazmat's Avatar
    Join Date
    Mar 2012
    Location
    Dubai
    Posts
    283
    Follows
    0
    Following
    0
    Mentioned
    7 Post(s)
    Tagged
    0 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Sir Jitni bhi Tareef ke jai Kam hai,,,Bohot Aala Nehayat he Shaandar
    AZMAT ALI

  20. #59
    Senior PakWheeler Follow
    ism1's Avatar
    Join Date
    Sep 2012
    Location
    Karachi
    Posts
    5,319
    Follows
    3
    Following
    0
    Mentioned
    313 Post(s)
    Tagged
    38 Thread(s)
    Problems Posted
    0
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Great Thread (y)
    "Mistakes" are painful, when happened.....but after some time...a collection of Mistakes are called "Experience" which leads to "SUCCESS".

  21. #60
    PakWheeler Follow
    kfateh's Avatar
    Join Date
    Sep 2014
    Location
    Karachi
    Age
    53
    Posts
    399
    Follows
    0
    Following
    0
    Mentioned
    3 Post(s)
    Tagged
    1 Thread(s)
    Problems Posted
    1
    Problems Solved
    0
    Best Answers
    0
    Good Answers
    0

    Default

    Nice thread full of good information and pictures...thans for sharing
    "Dosti aisa nata, jo sone se bhi mehenga"
    https://sites.google.com/site/fatehkhursheed/

+ Reply to Thread
Page 3 of 13 FirstFirst 12345 ... LastLast

User Tag List

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •