پروٹون ساگا پاکستان میں کم طاقت کے انجن کے ساتھ متعارف کروائی جائے گی، لیکن کیوں؟

15 297

ہمیں معلوم ہوا ہے کہ پروٹون ساگا پاکستان میں ٹیکس پر رعایت حاصل کرنے کے لیے ایک کم طاقت کے انجن، یعنی 1332 cc کے بجائے 1299 cc، میں متعارف کروائی جائے گی ۔ 

تفصیلات کے مطابق ملائیشیا کے قومی آٹومیکر پروٹون نے الحاج گروپ کے ساتھ اشتراک کرتے ہوئے پاکستان میں پروٹون کاریں بنانے کے لیے وزارت صنعت و پیداوار سے گرین فیلڈ اسٹیٹس حاصل کیا۔ الحاج گروپ ملک میں FAW کاریں بنانے کی وجہ سے پہلے ہی مشہور ہے۔ دنیا بھر سے تعلق رکھنے والے کئی نئے آٹو ادارے آٹو ڈیولپمنٹ پالیسی (ADP) ‏2016-21ء‎ کے تحت پاکستان کے آٹو سیکٹر میں داخل ہوئے۔ اس جوائنٹ وینچر کا سنگِ بنیاد پچھلے سال مارچ میں رکھا گیا تھا تاکہ ملک میں کمپنی کے آپریشنز کا آغاز کیا جا سکے۔ یہ جوائنٹ وینچر 2020ء کی دوسری ششماہی سے ملک میں پروٹون کاریں متعارف کروانے کے لیے تیار ہے۔

پروٹون ساگا – چھوٹا انجن زیادہ ٹیکس رعایت کے ساتھ! 

پروٹون ساگا ایک سیڈان کار ہے جو پہلے 1332 cc کے انجن میں پیش کی جانی تھی۔ البتہ کمپنی کے عہدیداران کے مطابق یہ نسبتاً چھوٹے انجن یعنی 1299 cc میں پیش کی جائے گی۔ پروٹون ساگا کے CBU یونٹس اصل 1332 cc VVT انجن کے ساتھ ہی آئے ہیں۔ انجن کو چھوٹا کرنے کی وجہ بہت دلچسپ ہے کیونکہ کمپنی پاکستان میں مارکیٹ کے رُخ کو جان چکی ہے۔ پاکستان میں ٹیکس ڈھانچہ 1300cc سے نیچے کی کاروں کے لیے مختلف ہے جبکہ 1300cc سے زیادہ کی کاروں کے لیے الگ۔ یہی وجہ ہے کہ کمپنی ملک میں صارفین کی ترجیحات کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنی کار کو کسٹمائز کر رہی ہے۔ یوں آٹومیکر نئی پروٹون ساگا کی قیمت کے معاملے میں فائدے میں رہے گا کہ جو پاکستان میں موجودہ کاروں کے مقابلے میں بہتر قیمت پر آئے گی۔ پروٹون ساگا مقامی سیکٹر میں ہونڈاسٹی اور آنے والی گاڑی ٹویوٹا یارِس کی براہِ راست مقابل ہوگی۔اس انجن تبدیلی کی وجہ سے یہ آٹو میکر مارکیٹ میں صارفین کی توجہ حاصل کرنے میں بھی کامیاب ہوگا۔ واضح رہے کہ پروٹون ساگا کے مقامی طور پر تیار ہونے والے یونٹس 2021ء میں آئیں گے۔

تجرباتی مراحل سے گزرتے ہوئے: 

حال ہی میں پروٹون ساگا کو سڑکوں پر تجرباتی مراحل سے گزرتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔ یہ کمپنی کی لائن اَپ میں ایک اہم گاڑی ہے کیونکہ یہ ملائیشیا میں ادارے کی کُل فروخت کا 70 فیصد دیتی ہے۔ پروٹون کی جانب سے یہ سیڈان پچھلے 30 سالوں سے بنائی جا رہی ہے اور اِس وقت اپنے تیسری جنریشن کے ماڈل میں ہے۔ پاکستان میں نظر آنے والی پروٹون ساگا کی تصویریں دیکھیں:

وزیر اعظم کو ملائیشیائی ہم منصب کی جانب سے پروٹون X70کا تحفہ: 

ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم مہاتیر محمد نے حال ہی میں وزیر اعظم پاکستان کو پروٹون X70 کا تحفہ دیا۔ پروٹون X70 دسمبر 2018ء میں لانچ کی گئی تھی۔ صرف ایک سال میں کمپنی X70 کے 26,000 سے زیادہ یونٹس فروخت کر چکی ہے۔ حال ہی میں اسلام آباد میں ملائیشیا کے سفارت خانے سے ایک ٹوئٹ میں اشارہ دیا کہ پروٹون X70 جلد ہی پاکستان میں بھی آئے گی۔ اس SUV کو پاکستان میں مختلف مقامات پر ٹیسٹ مراحل سے گزرتے دیکھا گیا ہے اور کمپنی متوقع طور پر اسے 1.8-لیٹر کے بجائے 1.5 لیٹر انجن میں متعارف کروائے گی۔ پروٹون کی MPV ایگزورا بھی ملک میں دیکھا جا چکی ہے جو پاکستان میں ملائیشیائی آٹومیکر کی متوقع گاڑیوں میں سے ایک ہے۔ یہ مقامی مارکیٹ میں ہونڈا BR-V اور ٹویوٹا رَش کا مقابلہ کرے گی۔ ذرا ان تصویروں پر نظر ڈالیں:

الحاج پروٹون مینوفیکچرنگ تنصیب: 

الحاج گروپ پاکستان میں پروٹون کاروں کا باضابطہ ڈسٹری بیوٹر ہے۔ کمپنی نے مقامی شعبے میں 30 ملین ڈالرز کی سرمایہ کاری کی ہے اور کراچی میں 55 ایکڑ پر پھیلی اپنی مینوفیکچرنگ تنصیب بنا رہی ہے کہ جو سالانہ 25,000 یونٹس بنانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ یہ سرمایہ کاری روزگار کے 2,000 براہِ راست اور 20,000 بالواسطہ مواقع پیدا کرے گی۔ ملائیشیائی آٹومیکر اپنی برآمدات کو بڑھانا چاہتا ہے اور پاکستان میں الحاج گروپ کے ساتھ شراکت داری بھی 10 سالہ طویل مدتی منصوبے کا حصہ ہے۔

پاکستان میں آنے والی پروٹون کی گاڑیوں کے بارے میں اپنے قیمتی خیالات پیش کیجیے۔ پاکستان کی آٹوموبائل انڈسٹری کے حوالے سے مزید خبروں کے لیے پاک ویلز پر آتے رہیے۔

Google App Store App Store
تبصرے