گرم موسم میں ڈرائیونگ کے لیے 6 ضروری ٹپس

0 856

ہمیں پاکستان کے زیادہ تر علاقوں میں سال بھر گرم موسم کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ایسے سخت موسم میں ڈرائیونگ ایک چیلنج بن جاتی ہے۔ شدید گرم موسم میں تو ویسے بھی سفر نہیں کرنا چاہیے، لیکن اگر ضروری ہو تو کچھ ایسے اقدامات ضرور ہیں جنہیں اٹھایا جائے تو کسی بھی مشکل سے بچا جا سکتا ہے۔ سفر شروع کرنے سے پہلے کار کے کچھ پیرامیٹرز لازماً چیک کرنے چاہئیں۔ گاڑی کو چیک کرتے ہوئے کبھی جلد بازی کا مظاہرہ نہ کریں کیونکہ اس سے بعد میں آپ کا کافی وقت بچے گا۔ ان کاموں کی فہرست تیار کر لیں جو گرم دنوں میں آپ کی زندگی کو آسان بنائیں گے۔

فلوڈ لیول چیک کریں:

جس طرح گرمیوں میں انسان کو پانی خوب پینا چاہیے، اسی طرح کار کو رواں انداز میں چلنے کے لیے فلوڈز (fluids) کی ضرورت ہوتی ہے۔ لمبے سفر پر نکلنے سے پہلے تمام فلوڈ لیولز اچھی طرح چیک کریں۔ سب سے پہلے اپنے ریڈی ایٹر میں coolant کا لیول چیک کریں۔ ریڈی ایٹر میں کولینٹ کا کم ہونا کار کے ہیٹ اَپ ہونے کا سبب بنے گا۔ اگر ضرورت ہو تو کولینٹ بھریں اور ڈھکن کو اچھی طرح بند کریں۔ بریک فلوڈ کی بوتل چیک کریں کہ اس میں بریک آئل کی ضروری مقدار موجود ہے۔ ڈِپ اسٹک کا استعمال کرکے انجن آئل کا لیول چیک کریں۔ بہتر تو یہی ہے یہ مکمل بھرا ہونا چاہیے لیکن پھر بھی یہ ڈِپ اسٹک پر بالکل درمیان میں بھی ہو تو چلے گا۔ ساتھ ساتھ ٹرانسمیشن اور پاور اسٹیئرنگ فلوڈ کو بھی ضرور چیک کریں تاکہ آپ کو سفر کے دوران کسی ناخوشگوار صورت حال کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ گرمیوں میں جس فلوڈ کے حوالے سے سب سے زیادہ لاپرواہی برتی جاتی ہے وہ وِنڈ شیلڈ واشر کا فلوڈ ہے۔ اس کی بوتل کو فلوڈ سے بھر دیں کیونکہ آپ کو کسی بھی وقت وِنڈ شیلڈ صاف کرنے کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ اس سے آپ کو کار سے نکلنے کی ضرورت نہیں رہے گی۔

بیٹری ٹیسٹ کریں:

اگر آپ کی کار میں بیٹری پرانی ہے تو بیٹری لوڈ ٹیسٹر یا ہائیڈرومیٹر کی مدد سے اسے چیک کریں۔ بیٹری کے ٹرمینل کو اچھی طرح صاف کریں تاکہ اس پر کوئی corrosion نہ رہ جائے۔ اس کام کے لیے ہمیشہ سیفٹی گلوز کا استعمال کریں۔ یقینی بنائیں کہ ٹرمینل اچھی طرح ٹائٹ کیے گئے ہیں تاکہ کوئی اسپارکنگ نہ ہو۔ بیٹری کے تمام ڈھکن ایک، ایک کرکے کھولیں اور الیکٹرولائٹ (بیٹری کا پانی) اچھی طرح چیک کریں۔ لیڈ پلیٹیں اچھی طرح الیکٹرولائٹ کے اندر ڈوبی ہوئی ہونی چاہئیں۔ اگر ضرورت ہو تو distilled پانی استعمال کریں۔ ڈھکنوں کو اچھی طرح بند کریں۔

بیلٹس:

ٹائمنگ بیلٹ ایک ربڑ بیلٹ ہے جو کرینک شافٹ کو کیم شافٹ گھمانے میں مدد دیتی ہے۔ اگر ٹائمنگ بیلٹ ٹوٹ جائے تو انجن چلنا بند ہو جائے گا۔ اس سے انجن کو کافی نقصان بھی پہنچ سکتا ہے۔ ایسی کسی بھی صورت حال سے بچنے کے لیے اسے بروقت تبدیل کریں۔ زیادہ تر کاروں میں ٹائمنگ بیلٹ بدلنے کا وقت 80,000 کلومیٹرز ہے (مزید تفصیلات کے لیے اپنی کار کا مینوئل دیکھیں)۔ سفر سے پہلے اسے دیکھیں۔ ایک اور بیلٹ ہوتا ہے جسے ایکسیسری ڈرائیو بیلٹ (سرپنٹائن بیلٹ، آلٹرنیٹر بیلٹ یا فین بیلٹ) بھی کہتے ہیں، جو ایئر کنڈیشننگ کمپریسر، مکینیکل پاور اسٹیئرنگ پمپ اور آلٹرنیٹر چلاتا ہے۔ ٹوٹنے کی صورت میں اس کے ذریعے ملنے والی پاور فوراً ختم ہو جائے گی۔ اس سے کئی مسئلے جنم لے سکتے ہیں، A/C بند ہو جانے سے بیٹری چارج نہ ہونے تک۔ اس کی اچھی طرح جانچ کریں یا اطمینان کے لیے کسی ماہر سے رابطہ کریں۔

ٹائروں کی ہوا دیکھیں:

گرم موسم میں ٹائر پھیلتے ہیں۔ گرمیوں کے دوران روڈ کا درجہ حرارت اصل درجہ حرارت سے کچھ ڈگری زیادہ ہی رہتا ہے۔ اس لیے ایسی صورت حال میں ٹائر کو کافی ٹوٹ پھوٹ کا شکارہوتا ہے۔ایئر پریشر جانچنے کے لیے کسی بھی قریبی ایئر فلنگ اسٹیشن پر جائیں اور اسے ضروری حد تک لائیں۔ اس کے علاوہ گرمیوں کے لیے بنائے گئے ٹائروں کا استعمال کریں جو عام ٹائروں کے مقابلے میں ذرا سخت ہوتے ہیں تاکہ شدید گرمی میں کام کر سکیں۔ بہترین طریقہ یہ ہے کہ اچھے معیار کا ٹائر پریشر مانیٹرنگ سسٹم حاصل کریں۔

ایئر کنڈیشنر چیک کریں:

گرمیوں میں سفر کے دوران ایئر کنڈیشنر کا کام کرنا چھوڑ دینے سے بُری خبر کوئی دوسری نہیں ہو سکتی۔ کار چلانے سے پہلے ایئر کنڈیشنر چلا کر دیکھیں کہ وہ صحیح سے کام کر رہا ہے یا نہیں۔ ٹھنڈا کار کیبن آپ کے سفر کی تھکاوٹ کو کم کر دیتا ہے۔ سفر شروع کرنے سے پہلے ایئر فلو کو دو مرتبہ چیک کریں۔ یقینی بنائیں کہ کیبن فلٹر صاف ہے۔ ضرورت پڑے تو اسے تبدیل کر دیں۔ اگر A/C بہترین طریقے سے کام کرتا نظر نہ آئے تو اس کا ریفریجرنٹ لیول کسی ماہر سے چیک کروائیں۔

فیول ٹینک لیول:

ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھتے ہوئے انفارمیشن کلسٹر میں فیول ٹینک لیول گیج چیک کریں۔ سفر کے لیے فاصلے کو دیکھتے ہوئے مناسب مقدار میں فیول ڈلوائیں، بہتر یہی ہے کہ ٹینک فل کروا لیں تاکہ اس پریشانی سے بچ سکیں کہ ایندھن ختم ہو جائے اور قریب میں کوئی فیول اسٹیشن نہ ہو۔ ایک عام غلط فہمی یہ بھی ہے کہ گرمیوں میں فیول ٹینک بھرا ہوا ہو تو اس میں آگ لگ سکتی ہے، اس میں کوئی حقیقت نہیں ہے۔ اس لیے سفر سے پہلے ٹینک لازماً فل کروائیں۔

وقت ایک دولت ہے۔ اس لیے شدید گرمی میں کسی مصیبت سے بچنے کے لیے یہ آسان گائیڈلائنز اپنائیں۔ گرمیوں میں ڈرائیونگ کے لیے اپنی ٹپس اور ٹرکس نیچے کمنٹس میں شیئر کریں۔

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.