کیا 11 ویں جنریشن کی ہونڈا سوِک آؤڈی اے5 سے بہت زیادہ ملتی جلتی ہے؟

0 10 769

ہونڈآ نے بالآخر آج ہونڈا سوِک 11 ویں جنریشن کا پروڈکشن کے لیے تیار ‘پروٹوٹائپ’ لانچ کر دیا ہے۔ ماہرین سمجھتے ہیں کہ ہونڈا کے پروٹوٹائپس اور پروڈکشن یونٹس تقریباً ایک جیسے ہی ہوتے ہیں۔ نئی سوِک بلاشبہ جدید اور اسمارٹ ہونے کے ساتھ خوبصورت curves رکھتی ہے۔ پہلی نظر میں لگتا ہے کہ یہ گاڑی اپنی اسپورٹی صورت کو برقرار رکھتے ہوئے اب ایگزیکٹو شکل میں آ گئی ہے۔

لیکن ایک اور پہلو بھی ہے جس پر گاڑیوں کے شوقین اس نئی لانچ ہونے والی کار پر بات کر رہے ہیں۔ سوِک کی پہلی تصویریں آؤڈی A5 سے بہت زیادہ ملتی جلتی ہیں۔ چند میڈیا آؤٹ لیٹس اور کار بلاگز نے ان میں یکسانیت کا ذکر کیا ہے۔

ہونڈا سوِک اور آؤڈی A5 کا پچھلا حصہ:

تصویروں نے ظاہر کیا ہے کہ ہونڈا سوِک اور آؤڈی A5 کافی ملتی جلتی ہیں، خاص طور پر ان کا پچھلا حصہ۔ اس کی وجہ یہ ہو سکتی ہے کہ اس کے پیچھے یورپی ڈیزائنر ہیں؛ یوں یہ جرمن سیڈان سے ملتی جلتی ہے، جو بلاشبہ یہ ایک اچھی خصوصیت ہے۔ شارپ angular بیک لائٹس، بمپر پر ہائی اپ ریفلیکٹرز، ڈوئل اوول ایگزاسٹ ٹپس اور کھنچا ہوا ٹرنک-لِڈ آؤڈی کی سیڈان سے بہت مماثلت رکھتا ہے۔

فرنٹ اور انٹیریئر کا کمپیریزن:

اگر آپ فرنٹ پر آئیں تو angular فرنٹ لائٹس، ہُڈ پر خمدار لائنیں اور مجموعی طور پر فرنٹ لُک سے بھی کافی یکسانیت کا احساس ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ انٹیریئر کا پہلا نظارہ بھی کافی ملتاجلتا لگتا ہے، خاص طور پر دونوں گاڑیوں کا فلوٹنگ انفوٹینمنٹ سسٹم۔

ہم یہ نہیں کہہ رہے کہ یہ  ہونڈا کی جانب سے جان بوجھ کر کی گئی آؤڈی کی نقل ہے، لیکن یکسانیت ضرور ہے۔ ہونڈا ہو سکتا ہے پروڈکشن یونٹس میں کچھ فیچرز اورڈیزائن تبدیل کر دے۔ ہوسکتا ہے کہ اس ڈیزائن کے ساتھ جاپانی آٹومیکر سوِک کو ایگزیکٹو کار کے سیگمنٹ میں لانا چاہتا ہو۔

کسی بھی حتمی فیصلے سے پہلے ہمیں پروڈکشن کارز کا انتظار کرنا ہوگا۔

خود دیکھ لیں:

Honda Vs Audi

مزید ویوز، نیوز، ریویوز کے لیے دیکھتے رہیے پاک ویلز بلاگ۔

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.