اسلام آباد کے گاڑیاں چلانے والے اب پمپس پر فیول کی پیمائش کر سکیں گے

0 2 190

نئے منصوبے کے تحت اسلام آباد میں گاڑیاں چلانے والے اب شہر کے کسی بھی پٹرول پمپ پر فیول ڈسپنسرز کی پیمائش چیک کر سکتے ہیں۔

ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقت نے کہا ہے کہ ہم ‘کوانٹٹی آن اسپاٹ چیک’ منصوبے کے تحت یہ سروس فراہم کر رہے ہیں۔ یہ پروجیکٹ پٹرول اسٹیشنز پر غلط پیمائش کے حوالے سے عوام کے خدشات ختم کر دے گا۔

اسلام آباد میں گاڑیاں چلانے والوں کے لیے منصوبہ:

ڈی سی نے مزید کہا کہ یہ منصوبہ فیول اسٹیشنز اور گاڑیوں کے مالکان کے درمیان اعتماد قائم ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ «اس سے چند پٹرول پمپس پر کم پیمائش کی نگرانی بھی کی جائے گی۔»

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کسٹمر کو ذہن میں رکھ کر ایسے منصوبے متعارف کروانا جاری رکھے گی۔ انہوں نے میڈیا کو بتایا کہ شروع میں یہ سہولت شیل پمپس پر موجود ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام کو زیادہ سے زیادہ سہولت پہنچانے کے لیے اس کا دائرہ مزید اسٹیشنز تک بھی پھیلایا جائے گا۔

کمشنر نے مزید کہا کہ اسلام آباد میں کوالٹی چیکنگ ٹیمیں مسلسل چھاپے مار رہی ہیں۔ انہوں نے زور دیا کہ «ٹیمیں کم پیمائش کرنے والے پمپس کو فوراً بند کر رہی ہیں۔

اسلام آباد میں آن لائن ٹیکس پیمنٹ سروس:

پچھلے ہفتے اسلام آباد نے گاڑیوں کے مالکان کے لیے آن لائن ٹیکس پیمنٹ سروس لانچ کی۔ نئے منصوبے کا آغاز اسلام آباد ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈپارٹمنٹ نے کیا ہے۔

خبروں کے مطابق گاڑیوں کے مالکان اپنی کار رجسٹریشن فیس، ٹوکن ٹیکس اور ٹرانسفر فیس گھر بیٹھے آرام سے آن لائن ادا کر سکتے ہیں۔ مالکان آن لائن بینکنگ یا دوسرے ڈجیٹل پیمنٹ طریقے استعمال کرکے ادائیگی کر سکتے ہیں۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے ڈائریکٹر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن بلال اعظم نے کہا کہ محکمے نے اپنے کام کو مؤثر بنانے اور شہریوں کی سہولت کے لیے یہ قدم اٹھایا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے ڈجیٹل پاکستان منصوبے کے تحت ڈپارٹمنٹ نے یہ ون-وِنڈو آپریشن شروع کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ «اب دارالحکومت میں گاڑیوں کے 11 لاکھ مالکان کو ٹوکن ٹیکس، رجسٹریشن اور ٹرانسفر فیس ادا کرنے کے لیے ایکسائز آفس آنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔» بلال اعظم نے کہا کہ وہ ‘سٹی اسلام آباد ایپ’ پر رجسٹرڈ ہونے کے بعد اے ٹی ایم، ڈیبٹ کارڈز اور ای-بینکنگ کے ذریعے ادائیگی کر سکتے ہیں۔

مزید نیوز، ویوز اور ریویوز کے لیے پاک ویلز بلاگ پر آتے رہیں۔

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.