ٹویوٹا کرولا جی ایل آئی 1.6 آٹومیٹک 2013 – ایک ریویو مالک کی نظر سے

0 2 405

پاک ویلز ٹویوٹا کرولا GLi کا ایک ریویو لا رہا ہے، خود اس کے ایک مالک کی نظر سے۔ یہ 2013ء ماڈل آٹومیٹک ٹرانسمیشن رکھنے والے 1.6L انجن کے ساتھ آتا ہے۔ کمپنی نے یہ گاڑی 2011ء میں لانچ کی تھی، اور اس کا مینوئل ورژن 1.3L انجن کے ساتھ آتا ہے۔

یہ کار 15 انچ اسٹیل رِمز کے ساتھ آتی ہے، لیکن مالک نے اس میں الائے ویلز لگوائے ہیں۔

Engine

قیمت اور خریداری کا فیصلہ:

مالک نے یہ گاڑی ایک مہینے پہلے 18,15,000 روپے میں خریدی ہے۔ اس فیصلے کے بارے میں بات کرتے ہوئے مالک نے کہا کہ وہ پہلے دو مرتبہ یہ ماڈل رکھ چکے ہیں اور اسے بہت پسند کرتے ہیں۔ مالک کا کہنا ہے کہ «آلٹس کی قیمت بہت زیادہ ہے، البتہ اس کا انجن اور گیئرباکس وہی ہے، جبکہ گاڑی بہتر فیول ایوریج بھی رکھتی ہے۔»

gearbox

GLi اور آلٹس میں فرق:

ٹویوٹا آلٹس ری ٹریکٹ ایبل سائیڈ مررز، لیدر سیٹس، مختلف شکل کے میٹر اور الائے ویلز کے ساتھ آتی ہے۔ اس کے علاوہ GLi کا انفوٹینمنٹ سسٹم آلٹس کے مقابلے میں سادہ ہے۔

speedometer

ٹویوٹا کرولا GLi 1.6L کا فیول ایوریج:

مالک کے مطابق یہ اس کار کو ہلکے پیر کے ساتھ چلاتے ہیں، اس لیے انہیں شہر کے اندر 11.5 کلومیٹرز فی لیٹر کا ایوریج ملتا ہے، جبکہ لمبے روٹ پر یہ AC کے ساتھ اوسطاً 17 سے 17.5 کلومیٹرز فی لیٹر دیتی ہے۔

ٹویوٹا کرولا GLi 1.6L کے آئل چینج پر لاگت:

مالک نے بتایا کہ وہ اس کار کا آئل ہر 4,000 کلومیٹرز کے بعد تبدیل کرواتے ہیں، اور یہ انہیں 3,500 سے 4,000 روپے کا پڑتا ہے۔

سسپنشن اور گراؤنڈ کلیئرنس:

مالک سمجھتے ہیں کہ اس کار کا سسپنشن بہت سافٹ ہے، جبکہ روڈ کلیئرنس پاکستانی سڑکوں کے حساب سے بہترین ہے۔

ٹویوٹا کرولا GLi 1.6L میں سیٹوں کی گنجائش:

کار میں اگلی سیٹوں پر بیٹھنے کی گنجائش کافی جبکہ پچھلی سیٹوں پر نسبتاً کم ہے۔ مالک کا کہنا ہے کہ «شہر کے اندر سفر کے لیے اس میں پانچ جبکہ لمبے روٹ پر چار افراد آسانی سے بیٹھ سکتے ہیں۔»

sitting space

ٹویوٹا کرولا GLi 1.6L کے پارٹس کی دستیابی:

مالک نے ہمیں بتایا کہ اس کار کے تمام پارٹس لوکل مارکیٹ میں آسانی سے اور بہت مناسب قیمت پر مل جاتے ہیں۔ مالک نے کہا کہ «ان کی مختلف کوالٹیز ہیں جیسا کہ جینوئن، چائنیز اور تائیوانی۔» انہوں نے مزید کہا کہ اس کی جینوئن بیک لائٹ 22,000 روپے کی پڑتی ہے، جبکہ آپ چائنا کی 5,000 سے 6,000 میں خرید سکتے ہیں۔

ٹویوٹا کرولا GLi 1.6L کی معلوم خرابیاں:

اگر آپ اس کار کا آئل گریڈ تبدیل کروائیں تو اس کے انجن کا چَین سیٹ (ٹائمنگ چَین) مسئلہ کرتا ہے۔ مالک نے کہا کہ «یہی وجہ ہے کہ میں نے اپنی پچھلی دو کاریں فروخت کی تھیں۔»

اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ اس کے ڈیش بورڈ کی فٹنگ صحیح نہیں ہے۔

dashboard

کیا GLi 1.6L آٹو انڈرپاور ہے؟

مالک سمجھتے ہیں کہ اس کار کا پِک بہترین ہے اور یہ انڈر پاور نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ «میں اس کار میں فیملی اور سامان کے ساتھ شمالی علاقے گیا ہو، لیکن اس کی پرفارمنس تب بھی اطمینان بخش رہی۔»

ڈِگی کی گنجائش:

کار کی ڈِگی میں کافی گنجائش ہے اور اس میں باآسانی دو، تین بڑے سفری بیگ آ سکتے ہیں۔

trunk space

باڈی رول:

مالک کا کہنا ہے کہ وہ اس کار میں ہائی وے پر سفر کر چکے ہیں لیکن انہیں کبھی باڈی رول کا مسئلہ پیش نہیں آیا، جس کا مطلب ہے یہ ایک اسٹیبل گاڑی ہے۔

‏AC کی پرفارمنس:

مالک اس کار کے AC کی پرفارمنس سے خوش ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ «اس کی کولنگ لو سیٹنگ پر بھی زبردست ہے۔»

AC

ٹویوٹا کرولا GLi میں سیفٹی:

حالانکہ یہ کار ABS رکھتی ہے لیکن اس میں کوئی ایئربیگ نہیں ہے، جو اسے غیر محفوظ بناتا ہے۔ لیکن مالک سمجھتے ہیں کہ اس قیمت کی دوسری گاڑیوں میں بھی یہ فیچر نہیں ہے۔

فیچرز جو موجود نہیں:

مالک سمجھتے ہیں کہ اس کار میں ایئربیگز اور ری ٹریکٹ ایبل سائیڈ ویو مررز ہونے چاہیے تھے۔

side view mirror

وڈیو دیکھیں:

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.