ہیونڈائی سوناٹا کو عالمی سطح پر بند کرنے کی تیاری

0 12 624

ہیونڈائی موٹر کمپنی نے ہیونڈائی سوناٹا کو بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ کمپنی کا اِس درمیانے سائز کی سیڈان کی اگلی جنریشن کو تیار کرنے کا کوئی منصوبہ نہیں رکھتی۔ کمپنی آفیشل کے مطابق DN9 کے ترقیاتی منصوبے پر کام جاری نہیں کیا جا رہا۔

سوناٹا کو جنوبی کوریا کی نیشنل کار بھی کہا جاتا ہے۔ یہ گاڑی 1985 میں لانچ کی گئی تھی اور گزشتہ 37 سالوں میں یہ ملک میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والی گاڑی بن گئی۔ اس دوران گاڑی نے کمزور سے مضبوط اور نامعلوم سے لے کر مشہور تک کا سفر کامیابی سے طے کیا۔

بنیادی وجہ

گاڑی بند کرنے کی بنیادی وجہ گاڑی کی سیلز میں کمی ہے۔ صورتحال اس قدر بگڑ گئی کہ ہیونڈائی نے آسن (Asan) پلانٹ میں سوناٹا پروڈکشن لائن بند کر دی ہے۔ مزید برآں، کم فروخت کی وجہ سے ہیونڈائی نے مڈ سائیکل فیس لفٹ کو چھوڑنے اور 2023 میں مکمل ماڈل کی تبدیلی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تاہم، ایسا لگتا ہے کہ DN8 کم از کم پیٹرول میں ڈی سیگمنٹ کی آخری جنریشن ہے۔ اس کے علاوہ اطلاعات ہیں کہ ہیونڈائی اس کار کو الیکٹرک ویرینٹ میں لانچ کر سکتی ہے۔

لیکن دیگر رپورٹس یہ بتا رہی ہیں کہ ہیونڈائی اس سال کے آخر تک کار کی ایک نئی شکل متعارف کرائے گی، جو اگلے دو سالوں تک سیڈان کو رواں دواں رکھے گی۔ مختصراً، سوناٹا کی کوئی نئی جنریشن نہیں آئے گی لیکن مستقبل قریب میں اس کی نئی شکل ضرور سامنے آسکتی ہے۔

ہیونڈائی نشاط کا بیان

ہم نے اس معاملے پر مزید وضاحت کے لیے ہیونڈائی نشاط کے ایک آفیشل سے رابطہ کیا۔ جس کے جواب میں آفیشل نے کہا کہ وہ اس بارے کوئی تفصیلات فراہم نہیں کر سکتے۔ اہلکار نے مزید کہا کہ ہم عالمی خبروں کی بنیاد پر پاکستان میں سوناٹا کے مستقبل کے بارے میں معلومات نہیں دے سکتے۔

اس کار کو پاکستان میں جولائی 2021 میں لانچ کیا گیا تھا، اور یہ مقامی مارکیٹ میں کامیاب ثابت ہوئی ہے۔ گاڑی کی سیلز میں کافی بہتری دیکھی گئی ہے۔ سوناٹا کی سیلز نے ایلانٹرا کو بھی عبور کر لیا ہے۔ گزشتہ ماہ ہیونڈائی نشاط نے سیڈان کے 293 یونٹ فروخت کیے تھے۔

پاکستان میں سوناٹا کے مستقبل کے بارے میں آپ کا کیا خیال ہے؟ کمنٹس سیکشن میں اپنے خیالات کا اظہار کریں۔

 

 

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.