ہیونڈائی-نشاط اِس سال کی چوتھی سہ ماہی سے پاکستان میں گاڑیاں لانچ کرنے کے لیے تیار

0 58

میاں منشا نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ہیونڈائی-نشاط کا جوائنٹ وینچر سال 2019ء کے اختتام یا 2020ء کے آغاز پر اپنی گاڑیاں جاری کرے گا۔ ابھی تک پلانٹ زیرِ تعمیر ہے اور اگلے چند ماہ میں مکمل ہو جائے گا۔

جنوبی کوریائی آٹوموٹو ادارہ ہیونڈائی پاکستان میں ایک مرتبہ پھر ہیونڈائی-نشاط موٹر پرائیوٹ لمیٹڈ («HNMPL») کے نام سے داخل ہوا ہے۔ منصوبہ نشاط گروپ آف کمپنیز اور جاپان کے معروف ٹریڈنگ اور انوسٹمنٹ ہاؤسز میں سے ایک میسرز سوجٹز کارپوریشن کے درمیان ایک جوائنٹ وینچر تشکیل دینا ہے۔

HNMPL ایک گرین فیلڈ سرمایہ کاری ہے، جو ہیونڈائی برانڈ کی گاڑیوں کے لیے ایک کار اسمبلی پلانٹ بنا رہا ہے جن میں M3 انڈسٹریل سٹی، فیصل آباد میں کاریں اور لائٹ کمرشل گاڑیاں شامل ہیں۔ واضح رہے کہ منشاء نے یہ بھی کہا کہ ابتدائی مرحلے میں 7,000 گاڑیوں کی پیداوار کی جائے گی، البتہ اگلے پانچ سالوں میں پیداواری گنجائش کو 30,000 یونٹس تک بڑھایا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ ادارے نے ٹیسٹنگ کے لیے ملک میں ہیونڈائی کی چند ہائبرڈ گاڑیاں درآمد کی ہیں اور وہ اگلے دو ماہ میں ملک میں فروخت کے لیے دستیاب ہوں گی۔ یہاں یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ چند ہفتے پہلے ہیونڈائی آیونِک اور ٹکسن کو ٹیسٹ مراحل طے کرتے دیکھا گیا تھا۔ ہیونڈائی آیونک امریکا، کینیڈا، جنوبی کوریا اور ہمارے پڑوسی بھارت سمیت دنیا کے کئی ممالک میں دستیاب ہے۔ یہ گاڑی تین مختلف آپشنز میں آتی ہے: ہائبرڈ، پلگ-اِن ہائبرڈ اور الیکٹرک۔

معروف کاروباری شخصیت نے یہ بھی اشارہ دای کہ کمپنی پاکستان میں ہائیڈرجن سے چلنے والی گاڑیاں متعارف کروا سکتی ہے۔

ہیونڈائی-نشاط کے علاوہ کِیا لکی موٹرز پاکستان لمیٹڈ (KLM) نے اعلان کیا کہ اس کی گاڑیوں کی پیداوار کا آغاز ستمبر 2019ء سے ہوگا۔

مقامی مارکیٹ میں آنے والے نئے اداروں کو آپ کس نظر سے دیکھتے ہیں؟ ہمیں تبصروں میں ضرور آگاہ کیجیے۔

Google App Store App Store

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.